معبد بران

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
معبد بران
عرش بلقيس
Bar'an temple 1986-3.jpg
معبد کھدائی سے قبل - (18 اگست 1986ء)
مقام مآرب، محافظہ مآرب، یمن
متناسقات 15°24′12″N 45°20′35″E / 15.403227°N 45.343112°E / 15.403227; 45.343112متناسقات: 15°24′12″N 45°20′35″E / 15.403227°N 45.343112°E / 15.403227; 45.343112
تاریخ
ادوار قدیم یمن
Satellite of المقہ

معبد بران یا عرشِ بلقیس (عربی: عرش بلقیس، فارسی: تخت بلقیس) مآرب، یمن میں واقع سبائیوں کا ایک قدیمی عبادت خانہ ہے جو ملکہ بلقیس کے تخت کے عنوان سے عرش بلقیس بھی کہلاتا ہے۔ یہ عبادت خانہ قدیم یمن کے باقی ماندہ آثارِ قدیمہ میں سے ایک ہے جو دریافت کے بعد اپنی اصل شکل میں برقرار ہے۔[1] یہ معبد صنعاء سے 170 کلومیٹر مشرق میں واقع ہے۔

تاریخ[ترمیم]

یہ معبد مآرب میں معبد آوام کے مغرب میں واقع ہے جو قدیم یمن میں چاند کے دیوتا المقہ کا معبد تھا۔ یہ معبد غالباً ملکہ سبا کے دورِ حکومت میں تعمیر کیا گیا تھا۔ یمن کے محققین اِسے عرش بلقیس کے نام سے بھی پکارتے ہیں۔

دریافت[ترمیم]

1951ء/ 1952ء میں انگریز ماہر ارضیات وینڈیل فلپس نے جزوی کھدائی کروائی تو بڑے پیمانے پر اِس معبد کے آثار دریافت ہوئے لیکن مکمل طور پر کھدائی کا بڑا سلسلہ اگست 1986ء میں شروع ہوا۔1977ء تک اِس عبادت خانہ کا کثیر حصہ مجموعی طور پر ریت کے نیچے دھنسا ہوا تھا۔ اِس معبد کے اب چھ سنگی ستون اور ایک مقدس کنواں باقی رہ گیا ہے۔ کنواں معبد کے صحن میں موجود ہے۔ اِن چھ ستونوں کی بلندی 6 میٹر ہے۔[2] یہ چھ ستون ایک مربع نما بلند چبوترے پر تعمیر کیے گئے ہیں۔ مورخین کے مطابق ملکہ بلقیس کا تخت اِنہی چھ ستونوں کے پاس متعین کیا گیا تھا۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]