معز الدین کیقباد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
معز الدین کیقباد
Sultan-Maazuddin-Kaiqubaad.tif 

معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش سنہ 1269  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
وفات 1 فروری 1290 (20–21 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
دہلی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
والد نصیر الدین بغرا خان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والد (P22) ویکی ڈیٹا پر
خاندان خاندان غلاماں  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں خاندان (P53) ویکی ڈیٹا پر
مناصب
سلطان سلطنت دہلی   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
دفتر میں
14 جنوری 1287  – 1 فروری 1290 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png غیاث الدین بلبن 
شمس الدین کیومرث  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
عملی زندگی
پیشہ سلطان سلطنت دہلی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

معز الدین کیقباد (کے قباد پڑ) (1286ء تا 1290ء) سلطنت دہلی کا دسواں سلطان تھا جو خاندان غلاماں سے تعلق رکھتا تھا۔ وہ غیاث الدین بلبن (1266ء تا 1286ء) کا پوتا تھا۔

بلبن کے دور حکومت میں جانشینی کا مسئلہ درپیش ہوا۔ اس کی پہلی پسند اس کا بیٹا محمد تھا لیکن وہ جلد انتقال کر گیا۔ بلبن کا دوسرے بیٹے بغرا خان نے تخت حاصل کرنے سے انکار کر دیا کیونکہ وہ پہلے ہی بنگال کا گورنر تھا۔ بالآخر بلبن نے اپنے پوتے کیخسرو (کے خسرو پڑھا جائے گا) کو اپنا جانشیں مقرر کیا۔ لیکن جب بلبن کا انتقال ہوا تو درباریوں نے معز الدین کیقباد کو تخت پر بٹھا دیا۔ 4 سال بعد وہ بیمار پڑ گیا اور بالآخر 1290ء میں خلجی سرداروں کے ہاتھوں مارا گیا۔ اس کا تین سالہ بیٹا کیومرث اس کی جگہ بر سر اقتدار آیا لیکن جلد ہی تخت سے اتار دیا گیا اور اس طرح خاندان غلاماں کے دور کا اختتام اور خلجیوں کے دور کا آغاز ہوا۔