زرولی خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(مفتی زرولی خان سے رجوع مکرر)
Jump to navigation Jump to search


زرولی خان
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1953  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جہانگیرا  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات 7 دسمبر 2020 (66–67 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد انور شاہ  ویکی ڈیٹا پر (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مناصب
صدر نشین   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
1978  – 7 دسمبر 2020 
در احسن العلوم کراچی 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png  
انور شاہ  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ العلوم الاسلامیہ بنوری ٹاؤن  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
استاذ عبداللہ کاکا خیل،  محمد يوسف بنوری،  مفتی ولی حسن ٹونکیؒ  ویکی ڈیٹا پر (P1066) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ مفتی،  مصنف،  خطیب  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحات  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

مولانا مفتی زرولی خان دیوبندی مکتب فکر سے وابستہ پاکستانی عالم تھے۔ وہ 1953ء میں ضلع صوابی کے قصبہ جہانگیرا میں پیدا ہوئے۔ وہ احسن العلوم کراچی کے بانی اور مہتمم ہیں[1][2][3][4][5]۔ 7 دسمبر 2020 کو ان کا انتقال ہوا۔

تعلیم[ترمیم]

جامعتہ علوم الاسلامیہ علامہ بنوری ٹاؤن سے سند فراغت حاصل کی، مولانا یوسف بنوری، مولانا عبد اللہ کاکاخیل جیسے اکابرین آپ کے اساتذہ میں شامل ہیں۔

درس و تدریس[ترمیم]

1978ء میں گلشن اقبال کراچی میں احسن العلوم کے نام سے مدرسہ قائم کیا، آپ سے درس تفسیر پڑھنے کے لیے پورے ملک کے علما طلبہ ہر سال جامعہ احسن العلوم میں آتے ہیں،

تصانیف[ترمیم]

آپ کئی کتب کے مصنف اور بہترین خطیب تھے، شیخ التفسیر مفتی زرولی خان نے متعدد کتابیں، تصنیف کی اہم کتب یہ ہیں،

  • احسن الرسائل(مختلف موضوعات پر لکھے گئے 10علمی و تحقیقی رسائل کا مجموعہ)
  • احسن الخطبات (جمعہ کے خطبات کا مجموعہ 3 جلدیں
  • احسن البرھان (سوانح حیات 2 جلدیں)
  • معارف و محاسن۔ (ماہنامہ الاحسن میں لکھے گئے اداریوں کا مجموعہ)

وفات[ترمیم]

زرولی خان 7 نومبر 2020ء کو کراچی میں کورنگی روڈ پر واقع انڈس اسپتال میں انتقال کرگئے۔ ان کی نماز جنازہ 8 نومبر 2020ء بروز منگل کو صبح گیارہ بجے جامعہ احسن العلوم سے متصل گرائونڈ سردار علی صابری روڈ گلشن اقبال بلاک دو میں ادا کی گئی، جب کہ تدفین احسن آباد میں ان کے ذیلی مدرسہ میں کی گئی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "الجامعہ العربیہ احسن العلوم". ahsanululoom.org. 30 اپریل 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 11 مئی 2020. 
  2. Azmat Ali Rehmani, Karachi. "ممتاز عالم دین و حضرت مولانا مفتی زرولی خان کا روزنامہ اسلام کو خصوصی انٹرویو". hamariweb.com. اخذ شدہ بتاریخ 18 مئی 2020. 
  3. "سراج الحق کی مفتی زرولی خان اور مفتی منیب الرحمن سے ملاقات". dailypakistan.com.pk. 20 اکتوبر 2015. اخذ شدہ بتاریخ 23 مئی 2020. 
  4. "علماء و طلباء کے قتل پر مولانا فضل الرحمن نے سوائے بیان بازی کے کچھ نہیں کیا، مفتی زرولی خان". islamtimes.org. 4 فروری 2013. اخذ شدہ بتاریخ 23 مئی 2020. 
  5. "علما کے قتل پر مذہبی قائدین نے کچھ نہیں کیا، مفتی زرولی". express.pk. 3 فروری 2013. اخذ شدہ بتاریخ 23 مئی 2020.