مندرجات کا رخ کریں

ملا عبد القادر بدایونی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
ملا عبد القادر بدایونی
(فارسی میں: ملّا عبدالقادر بن ملوک شاه بدائونی ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
معلومات شخصیت
پیدائش 21 اگست 1540ء [1]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بدایوں   ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 5 نومبر 1615ء (75 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آگرہ   ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش دفتر مفتی اعظم   ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت مغلیہ سلطنت   ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکن دفتر مفتی اعظم ،  اسلامک کیمونٹی آف انڈیا   ویکی ڈیٹا پر (P463) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مناصب
مفتی اعظم ہند (1  )   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
1500ء کی دہائی  – 1615 
عملی زندگی
پیشہ ماہرِ لسانیات ،  مصنف ،  مورخ [2]،  مترجم ،  مصاحب ،  مفتی اعظم   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان فارسی ،  عربی ،  چغتائی   ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کارہائے نمایاں منتخب التواریخ   ویکی ڈیٹا پر (P800) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ملا عبد القادر بدایونی مغلیہ سلطنت میں‌ فارسی مؤرخ اور مترجم کی حیثیت سے تاریخ میں معروف ہیں

نسب[ترمیم]

ان کا نام عبد القادر ان کے والد ملوک شاہ بدایونی تھے

پیدائش[ترمیم]

21 اگست 1540ء

تعلیم و تربیت[ترمیم]

انھوں نے ابتدائی تربیت کے ساتھ ساتھ قرآن پڑھا اور عربی کی تعلیم اپنے نانا سے حاصل کی۔ اس دور میں رسمی تعلیم کے طریقے کے مطابق قصیدہ بردہ شریف اور فقہ کے چند اسباق بھی پڑھے۔ بعد ازاں استاد مبارک ناگوری سے مختلف علوم کی تعلیم لی

علمی حیثیت[ترمیم]

ملّا عبد القادر اپنے علم و فن کی بنیاد پر جلال الدّین اکبر کے دربار میں‌ جگہ پانے میں‌ کام یاب رہے اور علمی کام کیا۔ تصنیف و تالیف کے ساتھ انھوں نے کئی کتب کا فارسی ہندی ترجمہ کیا۔ وہ فارسی اور عربی پر مکمل عبور رکھتے تھے۔ ملّا عبد القادر بدایونی نجوم، ریاضی جیسے علوم کے علاوہ راگ راگنیوں سے بھی واقف تھے۔

ادبی پہچان[ترمیم]

ملاعبد القادر بدایونی بلند پایہ ادیب، انشا پرداز اور شاعر تھے جب کہ فنِ تاریخ گوئی میں انھوں‌ نے بڑا نام پایا۔ وہ کئی علوم کے ماہر تھے۔

تصنیف[ترمیم]

جلال الدّین اکبر کے دربار میں‌ ملّا عبد القادر بدایونی کو تصنیف و تالیف اور ترجمہ کی ذمہ داری سونپی گئی تھی جنھیں علومِ معقول و منقول دونوں‌ میں کامل دستگاہ تھی۔ منتخبُ التّواریخ ان کی مشہور کتاب ہے۔

وفات[ترمیم]

5 نومبر 1615ء) ۔[3]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Abd-al-Qadir-Badauni — بنام: Abd al-Qadir Bada'uni — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  2. http://www.hindunet.org/hvk/articles/0703/187.html
  3. "Bada'uni, 'Abd al-Qadir."
 یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔

<link rel="mw:PageProp/Category" href="./زمرہ:1540ء_کی_پیدائشیں" />