ملٹری انک (کتاب)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

ملڑی انک (Military Inc) عائشہ صدیقی کی انگریزی کتاب ہے جس میں پاکستان فوج سے ملحقہ افراد پر وسیع کاروباری سلطنت چلانے کا الزام لگایا گیا ہے۔[1] اس کتاب میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ فوجی افسران اپنا اثر و رسوخ اور طاقت استعمال کرکے مندرجہ ذیل کاروبار کر رہے ہیں اور ان سے ذاتی مالی فائدے حاصل کر رہے ہیں۔

  • شادی ہال چلانا - پی این ایس مہران کراچی کے پڑوس میں پاک فضایہ کا ایک شادی ہال ہے۔
  • پٹرول پمپ چلانا
  • ناشتے کے سیریل بنانا - یہ کاروبار فوجی فاؤنڈیشن کے تحت کیا جا رہا ہے۔

پاکستانی فوج کے اعلیٰ حکام کی جانب سے ان الزامات کی کبھی واضع تردید نہیں کی گئی۔

عائشہ صدیقی روزنامہ ڈان میں لکھنے والی سیاسی مبصر ہیں۔ پرویز مشرف کے دور میں شائع ہونے والی کتاب کو بعض حلقوں میں پزیرائی اور دوسرے حلقوں میں تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔

بیرونی روابط[ترمیم]

  1. ڈیلکن والش۔ "Book shines light on Pakistan military's '£10bn empire'"۔ دی گارجین۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جون 2011۔