ملکہ جہاں (جہانگیر)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ملکہ جہاں (جہانگیر)
معلومات شخصیت
شریک حیات نورالدین جہانگیر  ویکی ڈیٹا پر (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ملکہ جہاں ( فارسی: ملکہ جھان‎ ; جس کا مطلب ہے "دنیا کی ملکہ") جیسلمیر کی ایک شہزادی تھی، اور مغل بادشاہ جہانگیر کی بیوی تھی۔ [1]ملکہ جہاں، جس کا راجپوت نام نامعلوم ہے، [2] ایک جیسلمیر کی شہزادی پیدا ہوئی تھی، جو جیسلمیر کے حکمران راول بھیم سنگھ کی بیٹی تھی، [3][4] اور شہنشاہ اکبر کی ہم عصر تھی، اور اس کی شاہی خدمت میں تھی۔ [5] وہ ایک مرتبے اور اثر و رسوخ کا آدمی تھا۔ [6] وہ راول ہراج کی پوتی تھی۔ اس کے تین ماموں کلیان مل، بھکر اور سلطان تھے۔ [6] اس کی خالہ کی شادی شہنشاہ اکبر سے 1570 ءمیں ہوئی تھی، [7] اور وہ ماہی بیگم نامی بیٹی کی ماں تھیں۔ [8]

راول بھیم 1578ء میں اپنے والد ہرراج کا جانشین بنا [6] 1616ء میں بھیم کی موت کے بعد، اس نے ایک بیٹا چھوڑا جس کا نام نتھو سنگھ تھا، [9] دو ماہ کا تھا، [10] جسے بھاٹیوں نے قتل کر دیا تھا۔ [6] اس کے چھوٹے بھائی کلیان مل نے راول کے طور پر اس کی جگہ لی۔ [10]

خاندان[ترمیم]

ملکہ جہاں، جس کا راجپوت نام نامعلوم ہے، [11] ایک جیسلمیر کی شہزادی پیدا ہوئی تھی، جو جیسلمیر کے حکمران راول بھیم سنگھ کی بیٹی تھی، [12][13] اور شہنشاہ اکبر کی ہم عصر تھی، اور اس کی شاہی خدمت میں تھی۔ [14] وہ ایک مرتبے اور اثر و رسوخ کا آدمی تھا۔ [6] وہ راول ہراج کی پوتی تھی۔ اس کے تین ماموں کلیان مل، بھکر اور سلطان تھے۔ [6] اس کی خالہ کی شادی شہنشاہ اکبر سے 1570 ءمیں ہوئی تھی، [15] اور وہ ماہی بیگم نامی بیٹی کی ماں تھیں۔ [16]

راول بھیم 1578ء میں اپنے والد ہرراج کا جانشین بنا [6] 1616ء میں بھیم کی موت کے بعد، اس نے ایک بیٹا چھوڑا جس کا نام نتھو سنگھ تھا، [17] دو ماہ کا تھا، [10] جسے بھاٹیوں نے قتل کر دیا تھا۔ [6] اس کے چھوٹے بھائی کلیان مل نے راول کے طور پر اس کی جگہ لی۔ [10]

شادی[ترمیم]

جہانگیر اس سے شادی کرتے وقت شہزادہ تھا، اور اسے 'ملکہ جہاں' کا لقب دیا، [18] جس کا لفظی مطلب ہے ("دنیا کی ملکہ")۔ جہانگیر نے اپنی یادداشتوں میں لکھا ہے کہ یہ اتحاد اس لیے کیا گیا تھا کہ اس کا خاندان ہمیشہ مغلوں کا وفادار رہا تھا۔ [10]

مقبول ثقافت میں[ترمیم]

ملکہ جہاں فیروز ایچ میڈون کے تاریخی ناول دا تھرڈ پرنس: آ ناول (2015ء) میں ایک کردار ہے۔ [19]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Lal، Kishori Saran (جنوری 1, 1988). The Mughal Harem. Aditya Prakashan. صفحہ 28. ISBN 978-8-185-17903-2. 
  2. Shujauddin، Muhammad؛ Shujauddin، Razia (1967). The Life and Times of Noor Jahan. Caravan Book House. صفحہ 96. 
  3. The Moslem World – Volumes 1-2. Nile Mission Press. 1985. صفحہ 72. 
  4. Soma Mukherjee (2001). Royal Mughal Ladies and Their Contributions. Gyan Books. صفحہ 23. ISBN 978-8-121-20760-7. 
  5. Naravane، M. S. (1999). The Rajputs of Rajputana: A Glimpse of Medieval Rajasthan. APH Publishing. صفحہ 113. ISBN 978-8-176-48118-2. 
  6. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج چ Somānī، Rāmavallabha (1990). History of Jaisalmer. Panchsheel Prakashan. صفحات 59–60. ISBN 978-8-170-56070-8. 
  7. Ruby Lal (2005). Domesticity and power in the early Mughal world. Cambridge University Press. صفحہ 168. ISBN 978-0-521-85022-3. 
  8. Beveridge، Henry (1907). اکبر نامہ of Abu'l-Fazl ibn Mubarak – Volume III. Asiatic Society, Calcuta. صفحہ 283. 
  9. Rajasthan, (India)، K. K Sehgal (1962). Rajasthan District Gazetteers, Volume 18. Directorate, District Gazetteers. صفحہ 37. 
  10. ^ ا ب پ ت ٹ Jahangir، Emperor؛ Thackston، Wheeler McIntosh (1999). The Jahangirnama : memoirs of Jahangir, Emperor of India. Washington, D. C.: Freer Gallery of Art, Arthur M. Sackler Gallery, Smithsonian Institution; New York: Oxford University Press. صفحات 376. 
  11. Shujauddin، Muhammad؛ Shujauddin، Razia (1967). The Life and Times of Noor Jahan. Caravan Book House. صفحہ 96. 
  12. The Moslem World – Volumes 1-2. Nile Mission Press. 1985. صفحہ 72. 
  13. Soma Mukherjee (2001). Royal Mughal Ladies and Their Contributions. Gyan Books. صفحہ 23. ISBN 978-8-121-20760-7. 
  14. Naravane، M. S. (1999). The Rajputs of Rajputana: A Glimpse of Medieval Rajasthan. APH Publishing. صفحہ 113. ISBN 978-8-176-48118-2. 
  15. Ruby Lal (2005). Domesticity and power in the early Mughal world. Cambridge University Press. صفحہ 168. ISBN 978-0-521-85022-3. 
  16. Beveridge، Henry (1907). اکبر نامہ of Abu'l-Fazl ibn Mubarak – Volume III. Asiatic Society, Calcuta. صفحہ 283. 
  17. Rajasthan, (India)، K. K Sehgal (1962). Rajasthan District Gazetteers, Volume 18. Directorate, District Gazetteers. صفحہ 37. 
  18. Singh، Rajvi Amar (1992). Medieval History of Rajasthan: Western Rajasthan. Rajvi Amar Singh. صفحہ 1456. 
  19. Madon، Phiroz H. (اپریل 8, 2015). The Third Prince: A Novel. Jaico Publishing House. ISBN 978-8-184-95140-0.