ملکہ عالیہ (ڈراما سیریل)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
فائل:Malika-e-Aliya.jpg
Title screen
نوعیتFamily, Thriller
تحریرNadia Akhtar
ہدایاتSyed Asim Ali
نمایاں اداکارماریہ واسطی
افتتاحی تھیمMalika-e-Aliya
نشرپاکستان
زباناردو
تعدادِ دور2
اقساط83
تیاری
عملی پیشکشSam (Media World UAE)
فلم سازA&B Entertainment
دورانیہ60 minutes
نشریات
چینلجیو ٹی وی
8 اپریل 2014ء (2014ء-04-08) – 5 مئی 2015 (2015-05-05)
بیرونی روابط
ویب سائٹ
پروڈکشن ویب سائٹ

ملکہ عالیہ 2014 کا ایک پاکستانی ڈرامہ سیریل ہے جس کی ہدایت کاری سید عاصم علی نے کی ہے اور نادیہ اختر نے لکھا ہے۔ یہ A&B انٹرٹینمنٹ کی پروڈکشن ہے۔ [1] یہ ڈرامہ پہلی بار 8 اپریل 2014 کو جیو انٹرٹینمنٹ پر نشر کیا گیا تھا لیکن چینل پر پابندی کی وجہ سے اسکی صرف 10 اقساط ہی دکھائی جا سکیں۔ 8 ستمبر 2014 سے، چینل سے پابندی ہٹائے جانے کے اگلے دن، اسے نئی اقساط کے ساتھ جاری رکھا گیا۔ ملکہ عالیہ ملکہ کی کہانی ہے اور اس کے سسرال کی دولت کا واحد مالک بننے کے لیے اس کے شیطانی منصوبے ہیں، اور وہ عمل جو وہ بیگ کے گھر کے ہر فرد کو اس بات پر راضی کرنے کے لیے کرتی ہے کہ وہ صرف ان کی خدمت کرنا چاہتی ہے۔ وہی گھر اور اس کا سکون جو ان کی والدہ اور بیگ صاحب کی مرحوم اہلیہ نے انہیں فراہم کیا تھا۔

کہانی[ترمیم]

ملیکہ ( ماریہ واسطی ) عام خواتین کے برعکس منفرد خواہشات رکھنے والی لڑکی ہے۔ بیگ صاحب ، (سہیل اصغر) جو اپنے تین بیٹوں کے ساتھ ملیکہ کے سسر کا کردار ادا کر رہے ہیں، ایک سادہ مگر پیار کرنے والی اور ذمہ دار بہو چاہتے ہیں، کیونکہ بیگ کی بیوی کا کافی عرصہ قبل انتقال ہو گیا تھا اور گھر والوں کو ماں جیسی شخصیت کی بہت ضرورت تھی۔ ملکہ ایسا کام کرتی ہے جیسے وہ وہی عورت ہے جس کی وہ تلاش کر رہے ہیں۔ بیگ صاحب عالیہ کو اپنے بڑے بیٹے فرقان (سہیل سمیر) کی بیوی کے طور پر منتخب کرتے ہیں کیونکہ ان کا خیال تھا کہ وہ ایک متوسط طبقے کے پس منظر سے ہے اور گھر کو سنبھالنے کے لیے درکار تمام باتوں اور خوبیوں سے لیس ہے۔ نعمان، مسٹر بیگ کا دوسرا بیٹا، ایک لڑکی سے محبت کرتا تھا لیکن بیگ نے فیصلہ کیا کہ ملیکہ اپنی اگلی بہو کا انتخاب کرے گی۔ نعمان نے ملیکہ کو اپنی محبت کے بارے میں بتایا اور اسے لڑکی کے گھر لے گیا۔ لڑکی نے ملیکہ کو اپنے بارے میں بتایا اور ملائکہ نے سوچا کہ لڑکی اس سے بھی زیادہ پڑھی لکھی اور ذہین ہے۔ تو ملیکہ کی اہمیت کم ہو جائے گی، ملیکہ نے ایک بہانہ بنایا اور ایک غریب گھرانے سے خدیجہ (یسرہ رضوی) کا انتخاب کیا۔ اس نے اسے گھر کے سارے کام کروانے پر مجبور کیا۔ خدیجہ گھر کا کام یہ سوچ کر کرتی ہیں کہ ملیکہ نے اس پر ایک احسان کیا کہ اس نے اس کی شادی ایک اچھے شخص سے کر دی۔ نعمان خدیجہ کو بالکل پسند نہیں کرتا تھا لیکن اس نے اسے قبول کرنے کی کوشش کی۔

بیگ صاحب نے گھر کا نام ملکہ کے نام پر رکھنے کا فیصلہ کیا، وہ سن کر خوشی سے جھوم اٹھی ۔ بعد میں ملیکہ کو پتہ چلا کہ وہ حاملہ ہے اور اسے یقین تھا کہ وہ ایک بچے کو جنم دے گی۔ لیکن اسے یقین نہیں آیا جب اس کی ماں نے اسے بتایا کہ یہ لڑکی ہے۔ اس نے بچی کا نام ردا ( اریشہ رازی ) رکھا۔ بعد میں خدیجہ بھی حاملہ ہوگئیں۔ ملائکہ کو خدشہ تھا کہ اگر بچہ لڑکا ہو گا تو خدیجہ کے بچے کے پاس خاندان کی ساری جائیداد ہو گی، اس لیے ملیکہ نے اپنی ماں سے کہا کہ خدیجہ کے بچے کے مرنے کے لیے کوئی دوا دیں۔ تو اس نے اسے ملا کر چائے میں ملا دیا۔ ایک چائے بیگ کے لیے تھی اور ایک خدیجہ کے لیے ، تو غلطی سے بیگ صاحب نے چائے پی لی۔ [2]

اداکار[ترمیم]

سیریز کا جائزہ[ترمیم]

موسم اقساط کی تعداد اصل میں نشر کیا گیا ( پاکستان )
پہلی قسط آخری قسط
1 57 8 اپریل 2014ء (2014ء-04-08) 6 جنوری 2015 (2015-01-06)
2 26 5 فروری 2015ء (2015ء-02-05) 5 مئی 2015 (2015-05-05)

رہائی[ترمیم]

ملک چینل پہلے نشر ہوا۔ آخری بار نشر ہوا۔
پاکستان کا پرچم</img> پاکستان جیو ٹی وی 8 اپریل 2014 5 مئی 2015
بھارت کا پرچم</img> انڈیا زندگی 11 مئی 2016 18 جولائی 2016 ۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Welcome Malika-e-Aliya". A&B Entertainment. Sania Akram. 18 دسمبر 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 18 دسمبر 2014. 
  2. "What's on! April 2014". Reviewit.pk. Kanwal Murtaza. 12 April 2014. اخذ شدہ بتاریخ 17 دسمبر 2014. 

بیرونی روابط[ترمیم]

زمرہ:A&B تفریح