منمیت کور

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
منمیت کور
منمیت کور
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1990 (عمر 31–32 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قومیت پاکستان
عملی زندگی
پیشہ صحافی، سماجی کارکن
کارہائے نمایاں پاکستان کی پہلی سکھ صحافی

منمیت کور ایک پاکستانی صحافی اور سماجی کارکن ہیں۔ وہ پاکستان کی پہلی سکھ صحافی ہیں اور 30 سال سے کم عمر کے 100 بااثر سکھ شخصیات کے لیے نامزد ہونے والی پہلی خاتون ہیں۔[1][2][3][4]

ذاتی زندگی[ترمیم]

منمیت کور کا تعلق پشاور، پختونخوا سے ہے۔ [5] منیمت کے چار بہن بھائی ہیں۔ ان کے والد ایک ریٹائرڈ بزنس مین تھے۔ منمیت نے جناح کالج برائے خواتین، پشاور سے سوشل سائنس میں پوسٹ گریجویٹ ڈگری حاصل کی۔ منیمت شادی شدہ ہیں اور ایک بچے کی ماں ہیں۔[6][7][8]

پیشہ ورانہ زندگی[ترمیم]

ابتدا میں منیمت ایک ماڈل بننا چاہتی تھیں اور وہ پاکستان کا پہلا سکھ ماڈل بننے کی آرزو مند تھیں۔ منیمت کا کہنا ہے کہ وہ پاکستان میں سکھ برادری کے لیے بہت سے معاشرتی اور ثقافتی امور کا احاطہ کرنا چاہتی تھیں اسی وجہ سے انہوں نے کیریئر کے طور پر صحافت کاانتخاب کیا۔ وہ اپنے ماموں راجیش ٹونی سنگھ سے صحافت کو آگے بڑھانے کے لیے متاثر ہوئی تھیں۔ جب منیمت نے صحافت میں اپنے کیریئر کا آغاز کیا تھا، تب ان کے اہل خانہ ان کی حمایت نہیں کرتے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ خواتین کے لیے گھروں سے باہر کام کرنا مناسب نہیں ہے۔ تاہم، سکھ برادری کی کہانیوں کو چھپانے پر منیمت کی توجہ نے بالآخر اپنے لوگوں کو خوش کیا اور جلد ہی انھیں اپنی برادری کی حمایت حاصل ہو گئی۔ صحافی کے پیشہ سے قبل منیمت نے تین سال تک کمپیوٹر اکیڈمی میں ایڈمنسٹریٹر کی حیثیت سے کام کیا۔ 2018 میں، وہ نجی طور پر چلائے جانے والے نیوز چینل " HUM TV " میں شامل ہوگئیں، جہاں وہ پاکستان میں سکھ کی پہلی خاتون صحافی بن گئیں۔ وہ ایک سرگرم کارکن بھی ہیں اور انہوں نے پاکستان میں سکھ اقلیتی برادری کی کہانیاں چھپانے اور خواتین کے حقوق کی وکالت کرنے میں بھی کام کیا ہے۔[9]

ایوارڈ[ترمیم]

2020 میں، منمیت سنگھ، 25 سال کی عمر میں، برطانیہ میں قائم بین الاقوامی سکھ مذہبی تنظیم، "سکھ گروپ" نے 30 سال سے کم 100 بااثر سکھ شخصیات کی فہرست میں ان کا نام لیا تھا۔ [10] [11][12][13]

وہ ان دو سکھوں میں شامل تھیں جنھیں پاکستان سے نامور ایوارڈز کے لیے نامزد کیا گیا تھا۔ [14] یہ ایوارڈ سکھوں کی طرف سے کاروبار، کھیل، خیرات، میڈیا، تفریح، تعلیم، بے لوث رضاکارانہ خدمات، زندگی بھر کے کارہائے نمایاں اور خصوصی پہچان ایوارڈ کے شعبوں میں دیا گیا ہے، جو کسی اور مذہب سے تعلق رکھنے والے شخص کو کثیر الثقافتی کو فروغ دینے کے لیے دیا جاتا ہے۔ [15] بہت سی مشہور شخصیات جیسے ایمی ورک، گرو رندھاوا، سدھو موس والا، سونم باجوہ اور جاس مانک بھی 2020 کی فہرست میں شامل ہیں۔[16][17] منیمت کو یہ ایوارڈ 2021ء میں برطانیہ میں ایک تقریب میں ملے گا۔[18] ایک نیوز رپورٹر سے بات کرتے ہوئے منیمت نے کہا ، "جو لوگ سخت محنت کرتے ہیں وہ محنت کا بدلہ انعامات کی صورت پائیں گے اور میرے اہل خانہ کے لیے یہ اعزاز کی بات ہے کہ وہ برطانیہ کا دورہ کریں اور پاکستان کی نمائندگی کریں۔"[19][20]

اقلیتوں اور خواتین کو درپیش مسائل کو اجاگر کرنے پر انہیں متعدد مقامی ایوارڈز سے بھی نوازا گیا ہے۔[21]

منیمت نے کہا کہ سکھ گروپ ایک عالمی تنظیم ہے جو سکھ مذہب سے تعلق رکھنے والے افراد کو دنیا کے مختلف حصوں سے نوازتی ہے جو مختلف طریقوں سے لوگوں کی خدمت کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے پاکستان میں بین المذاہب ہم آہنگی اور اقلیتوں کے حقوق کے فروغ کے لیے کام کیا ہے۔ منیمت نے کہا کہ ایوارڈ کے لیے ان کی نامزدگی دوسری خواتین کو اپنے اپنے شعبوں میں سخت محنت کرنے اور انسانیت کی خدمت کرنے کی ترغیب دے گی۔[22]

  1. Kiran، Jessica (2020-05-19). "Manmeet Kaur Pakistani journalist Wiki, Bio, Profile, Unknown Facts and Family Details revealed". TheNewsCrunch (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  2. "Meet Manmeet Kaur, The First Sikh News Reporter Working In Pakistan". Sikh Siyasat News (بزبان انگریزی). 2018-05-24. اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  3. Khybri، Garvita (2018-05-29). "5 Things About Pak's First Woman Sikh Reporter You Didn't Know". TheQuint (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  4. "Pakistan's First Sikh Woman Journalist Among Top 100 Influential Sikhs Under 30". News18 (بزبان انگریزی). 2020-05-17. اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  5. Updater، News (2020-05-17). "Pakistan's first feminine Sikh journalist nominated for UK award". Pakistan Latest News Updates (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  6. "Pakistan's 1st woman Sikh journalist Manmeet Kaur nominated for UK award". Global Punjab (بزبان انگریزی). 2020-05-17. اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  7. Daur، Naya (2020-05-16). "Pakistan's First Sikh Female Reporter Wins UK Award". Naya Daur (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  8. TNN، Correspondent (2020-05-05). "First female Sikh journalist from Peshawar nominated for UK award | TNN". TNN | Tribal News Network (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  9. Service، Tribune News. "Pakistan's first Sikh woman journalist among top 100 influential Sikhs under 30". Tribuneindia News Service (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  10. "Pakistan's first female Sikh journalist nominated for UK award". South Asia Monitor (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  11. "Pakistan's First Female Sikh Journalist Nominated for UK Award". News Break (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. [مردہ ربط]
  12. "Manmeet Kaur, Pakistan's First Sikh Woman Journalist Receives UK Award". femina.in (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  13. "Pakistan's 1st female Sikh journalist Manmeet Kaur nominated for UK award". Free Press Journal (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  14. "Pakistan's First Female Sikh Journalist nominated for UK Award". www.paktribune.com. اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  15. "First female Sikh journalist nominated from Pakistan for UK award". Voice of Sindh (بزبان انگریزی). 2020-05-16. 27 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  16. "Pakistan's first female Sikh journalist nominated for prestigious UK award". Hindustan Times (بزبان انگریزی). 2020-05-18. اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  17. "The Chartered Institute of Journalists – Journalist Manmeet Kaur has been named as one of the 100 most influential Sikh's under 30 years old and will be awarded next year in the UK." (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  18. "who is Manmeet Kaur Archives". New India Life (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  19. "Pakistan's first female Sikh journalist nominated for UK award". The Express Tribune (بزبان انگریزی). 2020-05-16. اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  20. "Pakistan's first Sikh woman journalist Manmeet Kaur to receive award in Britain". News Track (بزبان انگریزی). 2020-05-17. اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  21. "Pakistan: CFWIJ congratulates Manmeet Kaur, first sikh woman journalist nominated to the prestigious award". The Coalition For Women In Journalism (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020. 
  22. "First female Sikh journalist from Peshawar nominated for UK award". Daily Times (بزبان انگریزی). 2020-05-11. اخذ شدہ بتاریخ 19 نومبر 2020.