منور علی خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
منور علی خان
معلومات شخصیت
پیدائش 15 اگست 1930  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لاہور  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 13 اکتوبر 1989 (59 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کولکاتا  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت (26 جنوری 1950–)
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند (–14 اگست 1947)
Flag of India.svg ڈومنین بھارت (15 اگست 1947–26 جنوری 1950)  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد بڑے غلام علی خان  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ گلو کار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

منور علی خان (انگریزی: Munawar Ali Khan) (ولادت: 15 اگست 1930ء - وفات: 13 اکتوبر 1989ء) قصور پٹیالا گھرانا کے ایک ہندوستانی کلاسیکی اور کلاسیکی گلوکار تھے۔ منور علی خان بڑے غلام علی خان کے چھوٹے بیٹے تھے۔[1]

ابتدائی زندگی اور کیریئر[ترمیم]

منور علی 1930ء میں برطانوی ہند کے لاہور میں پیدا ہوئے تھے۔[2][3] انہیں ان کے والد بڑے غلام علی خان اور ان کے چچا برکت علی خان نے پڑھایا اور موسیقی سکھائی تھا۔ انہوں نے اپنے والد بڑے غلام علی خان کے ساتھ اپنے تمام محافل میں شرکت کی اور 1961ء کے اوائل میں ان کے والد کو فالج کا حملہ ہونے کے بعد وہ اپنے والد کی ٹیم کا لازمی حصہ بن گئے۔[4][3]

منور علی خان کی آواز تھی اور ان کا انداز ان کے والد کے مزاج کے انداز سے مختلف تھا۔ 1968ء میں اپنے والد کی وفات کے بعد، انہوں نے سولو محافل موسیقی دینا شروع کردی۔[3]

منور علی خان آل انڈیا ریڈیو میں ایک اعلی درجے کے فنکار تھے۔ وہ دہلی میں ہندوستانی کالا سنٹر میں بطور میوزک ٹیچر بھی شامل ہوئے۔ انہوں نے ہندوستان اور بیرون ملک موسیقی کے بڑے فیسٹیول میں شرکت کی۔ انہوں نے جرمنی، سوئٹزرلینڈ، برطانیہ، فرانس، آسٹریلیا میں بڑے پیمانے پر سفر کیا اور 1986 ء میں افغانستان اور 1984ء میں پاکستان میں ہندوستان کی نمائندگی کی۔

وفات[ترمیم]

منور علی خان 13 اکتوبر 1989ء کو کولکاتہ میں 59 سال کی عمر میں انتقال کر گئے۔[3][2]

ڈسکوگرافی[ترمیم]

  • دربار خاص[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب Ganesh، Deepa (16 November 2005). "Beat Street (Munawar Ali Khan)". The Hindu (newspaper). اخذ شدہ بتاریخ 19 اکتوبر 2020. 
  2. ^ ا ب Sangeet sabha pays homage to Ustad Munawar Ali Khan The Indian Express (newspaper), Published 18 March 2018, Retrieved 19 October 2020
  3. ^ ا ب پ ت Knowing the Ustad ( Munawar Ali Khan). دی ٹریبیون, Published 16 March 2018, Retrieved 19 October 2020
  4. Bade Ghulam Ali Khan, the only one who could be Tansen's voice for Mughal-e-Azam Cinestaan.com website, Published 24 April 2018, Retrieved 19 October 2020