منموہن سنگھ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(من موہن سنگھ سے رجوع مکرر)
Jump to navigation Jump to search
منموہن سنگھ
(پنجابی میں: ਮਨਮੋਹਨ ਸਿੰਘ)،(ہندی میں: मनमोहन सिंह)،(گجراتی میں: મનમોહન સિંહخاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
Prime Minister Manmohan Singh in WEF ,2009.jpg 

مناصب
وزیر اعظم بھارت (13 )   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
مدتِ منصب
22 مئی 2004  – 26 مئی 2014 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png اٹل بہاری واجپائی 
نریندر مودی  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 26 ستمبر 1932 (86 سال)[1][2]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
گاہ، پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of India.svg بھارت
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
جماعت انڈین نیشنل کانگریس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ کیمبرج
نفیلڈ کالج، اوکسفرڈ (1960–)
پنجاب یونیورسٹی (–1954)
سینٹ جانز (1956–1957)
پنجاب یونیورسٹی (–1952)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
تخصص تعلیم معاشیات،معاشیات  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
تعلیمی اسناد پی ایچ ڈی، وماسٹر آف آرٹس،فاضل الفنیات  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ماہر معاشیات،سیاست دان،بینکر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
ملازمت دہلی یونیورسٹی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں نوکری (P108) ویکی ڈیٹا پر
اعزازات
بانگا بیبھوشن (2002)
IND Padma Vibhushan BAR.png پدم وبھوشن 
IND Padma Bhushan BAR.png پدم بھوشن   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وصول کردہ اعزازات (P166) ویکی ڈیٹا پر

ہندوستانی سیاست دان۔ سابق وزیر اعظم ہیں۔ منموہن سنگھ کی پیدائش چھبیس ستمبر، 1932ء کو پاکستانی پنجاب کے گاہ میں ہوئی تھی۔ انہوں نے پنجاب یونیورسٹی کے بعد برطانیہ کی ممتاز آکسفورڈ اور کیمبرج یونیورسٹیوں سے علم معاشیات کی تعلیم حاصل کی۔ وہ بھارتیہ ریژرو بینک کے گورنر رہ چکے ہیں۔ انہوں نے آئی- ایم -ایف اور اے ڈی بی کے لیے بھی کام کیا۔ وہ 1991ء میں آسام سے راجیہ سبھا کے رکن بنے اور نرسمہا راؤ حکومت میں وزیرخزانہ بنے۔ 1999ء میں من موہن سنگھ نے لوک سبھا انتخاب لڑے لیکن ہار گئے۔ 2004ء میں کانگریس پارٹی کے اتحاد کو جب حکومت بنانے کا موقع ملا تو پارٹی سربراہ سونیا گاندھی نے وزیر اعظم کا منصب قبول کرنے سے انکار کر دیا۔ ان کی رائے سے من موہن سنگھ وزیر اعظم بنے۔ 2009ء میں ہونے والے انتخابات میں کانگریس اور اس کی اتحادیوں کو انتخابات میں فتح ہوئی۔ اس طرح من موہن سنگھ دوسری مرتبہ وزیر اعظم منتخب ہوئے۔ انہیں ملک میں معاشی بہتری کا روح رواں مانا جاتا ہے۔ ان کا شمار کانگریس صدر سونیا گاندھی کے معتمدوں میں ہوتا ہے۔

ذاتی زندگی[ترمیم]

منموہن سنگھ کی پیدائش برطانوی ہندوستان (موجودہ پاکستان) کے پنجاب صوبے میں 26 ستمبر، 1932ء کو ہوئی۔ ان کی والدہ کا نام امرت کور اور والد کا نام گرمكھ سنگھ ہے۔ ملک کی تقسیم کے بعد ان کا خاندان بھارت آگیا۔ یہاں پنجاب یونیورسٹی سے انہوں نے گریجویشن اور پوسٹ گریجویٹ سطح کی تعلیم مکمل کی۔ کیمبرج یونیورسٹی سے انہوں نے پی۔ ایچ۔ ڈی کی اور آکسفورڈ یونیورسٹی سے ڈی فل کیا۔ ڈاکٹرمنموہن سنگھ نے معاشیات کے استاد کے طور پر کافی شہرت حاصل کی۔ وہ جامعہ پنجاب اور بعد میں دہلی اسکول آف اكنامكس میں پروفیسر رہے۔ اسی درمیان وہ اقوام متحدہ تجارت اور ترقی کانفرنس سیکرٹریٹ میں مشیر رہے اور 1987ءاور 1990ء میں جنیوا میں ساؤتھ کمیشن میں سیکرٹری بھی رہے۔ 1971ء میں ڈاکٹر سنگھ بھارت کے کامرس اینڈ انڈسٹری منسٹری میں اقتصادی مشیر کے طور پر مقرر کیے گئے۔ 1972ء میں انہیں وزارت خزانہ میں اہم اقتصادی مشیر بنایا گیا۔ اس کے بعد کئی سالوں تک وہ منصوبہ بندی کمیشن کے نائب صدر، ریزرو بینک کے گورنر، وزیر اعظم کے اقتصادی مشیر اور یونیورسٹی گرانٹس کمیشن کے صدر بھی رہے ہیں۔ بھارت کے اقتصادی تاریخ میں حالیہ برسوں میں سب سے اہم موڑ اس وقت آیا جب ڈاکٹر سنگھ 1991ء سے 1996ء تک ہندوستان کے وزیر خزانہ رہے۔ ڈاکٹر سنگھ کے خاندان میں ان کی بیوی محترمہ گرچرن کور اور تین بیٹیاں ہیں۔

سیاسی زندگی[ترمیم]

  1. اجازت نامہ: سی سی زیرو
  2. دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Manmohan-Singh — بنام: Manmohan Singh — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica