مونیک وٹگ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مونیک وٹگ
(فرانسیسی میں: Monique Wittig ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Monique Wittig (ph. Colette Geoffrey).jpg

معلومات شخصیت
پیدائش 13 جولا‎ئی 1935[1][2][3][4][5]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
فرانس
وفات جنوری 3، 2003(2003-10-30) (عمر  67 سال)
ٹوسان، ایریزونا، ریاستہائے متحدہ
وجہ وفات دورۂ قلب[6]  ویکی ڈیٹا پر (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن قبرستان بیر لاشیز  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات طبعی موت  ویکی ڈیٹا پر (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قومیت فرانسیسی
شریک حیات سینڈی زیگ  ویکی ڈیٹا پر (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی
گلی وٹگ  ویکی ڈیٹا پر (P3373) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
موضوعات نسوانی ہم جنس پرستی; نسائیت
ادبی تحریک فرانسیسی نسائیت
پیشہ مصنفہ; نسائیت نظریہ ساز; فعالیت پسندی
مادری زبان فرانسیسی  ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان فرانسیسی[7]،  انگریزی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل مضمون،  صنفی مطالعات،  نسائیت،  فرانسیسی ادب  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
نوکریاں یونیورسٹی آف ایریزونا  ویکی ڈیٹا پر (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تحریک انتہا پسندانہ نسائیت  ویکی ڈیٹا پر (P135) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ www.moniquewittig.com/index.html
P literature.svg باب ادب

مونیک وٹگ (فرانسیسی: [vitig]; 13 جولائی 1935ء – 3 جنوری 2003ء) ایک فرانسیسی مصنفہ، فلسفی اور نسائیت نظریہ ساز[8] اس نے معاشرے کی طرف سے زبردستی بنائے گئے صنفی کرداروں پر لکھا اور اسی نے "دگر جنسیت شادی" (heterosexual contract) کے الفاظ استعمال کیے تھے۔ اس نے اپنا پہلا ناول، اوپوپونیکس (L'Opoponax)، 1964ء میں۔ اس کا دوسرا ناول، لیس گوریلیرس (Les Guérillères) 1969ء میں، جو نسوانی ہم جنس پرست نسائیت میں ایک سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔[9]

تعلیم[ترمیم]

1980ء میں وٹگ نے ای ایچ ای ایس ایس سے پی ایچ ڈی کی، 1990ء مین وہ جامعہ ایریزونا میں فرانسیسی اور مطالعۂ نسوان پڑھانے لگیں۔ 1971ہ میں انھوں نے پیرس میں پہلا لیزبئن گروپ بنایا جس کا نام گوئنی راجرز تھا۔ وا ایک انتہائی نسائیت پسند تنظیم فیمینسٹ ریولوشنری کے ساتھ متحرک رہیں۔ اس نے بہت سے ڈرامے اور افسانے بھی لکھے۔[10]

اس کا پہلا ناول اپوپونیکس 1964ہ میں میں شائع ہوا اور دوسرا ناول لیس گوریلریس، جو نسوانی ہ مجنسی پرستی میں اہم ناول شمار ہوتا ہے، 1969ء میں شائع ہوا۔ ودگ نے 1975ء میں لیکارپ لیزبئن شائع کی، جس کا انگریزی ترجمہ دی لیزبئن باڈی کے نام سے شائع ہوا۔ ان کی ایک اہم تصنیف Brouillon pour un Dictionnaire des Amantes ہے جو انھوں نے سینڈی زیگ (بیٹی) کے ساتھ مل کر لکھی، یہ 1976ء میں شائع ہوئی۔اور اس کا انگریزی ترجمہPeople: Material for a Dictionaryکے نام سے چھپا۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb11929323x — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  2. ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w6tz0rx4 — بنام: Monique Wittig — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. Internet Speculative Fiction Database author ID: http://www.isfdb.org/cgi-bin/ea.cgi?3082 — بنام: Monique Wittig — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  4. Brockhaus Enzyklopädie online ID: https://brockhaus.de/ecs/enzy/article/wittig-monique — بنام: Monique Wittig
  5. https://cs.isabart.org/person/141913 — اخذ شدہ بتاریخ: 1 اپریل 2021
  6. http://www.nytimes.com/2003/01/12/nyregion/monique-wittig-67-feminist-writer-dies.html — اخذ شدہ بتاریخ: 14 نومبر 2015
  7. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb11929323x — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  8. مونیک وٹگ، 67 سال، نسائی مصنفہ، وفات، از ڈگلس مارٹن، 12 جنوری 2003ء، نیو یارک ٹائم
  9. بینوک، روبرٹ (1998). روتھلج Dictionary of Twentieth-Century Political Thinkers. لندن: روتھلج. صفحات 332–333. ISBN 978-0-203-20946-2. اخذ شدہ بتاریخ 25 مئی 2012. 
  10. "Word by Word Monique Wittig completed The Literary Workshop (Le chantier littéraire) in Gualala, California, in 1986, as her dissertation for the Diplome de l'Ecole des Hautes Etudes en Sciences Sociales in Paris. Gérard Genette was the director, and Louis Marin and Christian Metz were readers. Wittig wrote The Literary Workshop at a time of immense productivity.۔۔"; Monique Wittig, Catherine Temerson, Sande Zeig. "The Literary Workshop: An Excerpt"، in "GLQ: A Journal of Lesbian and Gay Studies – Volume 13, Number 4, 2007, pp. 543–551

بیرونی روابط[ترمیم]