موہن بھاگوت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
موہن بھاگوت
Dr. mohan rao Bhagwat1.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش 11 ستمبر 1950 (70 سال)  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
چندرپور  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

موہن بھاگوت ہندو قوم پرست تنظیم راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سر سنگھ چالک (صدر) ہیں۔ وہ اس عہدہ پر کے ایس سدرشن کے بعد مارچ 2009ء سے براجمان ہیں۔

خیالات[ترمیم]

موہن بھاگوت اپنے صدر بننے کے بعد کئی متنازع بیانات کی وجہ سے سرخیوں میں رہے۔ ستمبر 2018ء میں موہن نے ایک موقع پر ہزاروں سالوں سے ہندوؤں کے پریشان رہنے پر افسوس ظاہر کرتے ہوئے ہندووں سے متحد ہونے کی اپیل کی اور کہا کہ اگر کوئی شیر اکیلا ہوتا ہے تو جنگلی کتے بھی اس پرحملہ کرکے اپنا شکار بنا سکتے ہیں۔ بھاگوت کے اس بیان پر ملک کی کئی سیاسی قائدین نے سخت رد عمل ظاہر کیا تھا۔ آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اور رکن پارلیمان اسد الدین اویسی نے کہا کہ آرایس ایس دوسروں کی عزت کم کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’آرایس ایس دیگر لوگوں کو کتا اور خود کو شیر بتاتے ہوئے ان کی عزت کو کم کر رہا ہے۔ آرایس ایس کی اس زبان کو لوگ خارج کر دیں گے‘‘۔[1] اسی طرح موہن نے کئی اور بیانات جاری کیے۔ پنجابی گلوکارہ ہارڈ کور نے تو انہیں دہشت گرد قرار دیا ہے۔[2]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]