مکیش (گلوکار)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مکیش
(ہندی میں: मुकेश خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
مکیش (گلوکار)

معلومات شخصیت
پیدائش 22 جولائی 1923(1923-07-22)
نئی دہلی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 27 اگست 1976(1976-80-27) (عمر  53 سال)
ڈیٹرائٹ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
وجۂ وفات دورۂ قلب  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وجۂ وفات (P509) ویکی ڈیٹا پر
طرز وفات طبعی موت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں طرزِ موت (P1196) ویکی ڈیٹا پر
قومیت بھارتی
دیگر نام شہنشاہ جذبات، ہزاروں لوگوں کی دل کی آواز
زوجہ سرلا تری ویدی رائے چند (شادی. 1946)
اولاد 5
رشتے دار نتن مکیش (بیٹا)
نیل نتن موکیش (پوتا)
عملی زندگی
مادر علمی ہندو کالج، دہلی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ پس پردہ گلوکار
دور فعالیت 1940ء–1976ء
اعزازات
دستخط
مکیش (گلوکار)
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی (P345) ویکی ڈیٹا پر

مُکیش چند ماتُھر (ہندی: मुकेश चंद माथुर؛ پیدائش 22 جولائی 1923ء) ہندی فلموں کا ایک معروف بھارتی پس پردہ گلوکار تھا۔ 300 فلموں میں بارہ سو کے قریب گیت گائے، ان یادگار ہندی فلموں میں جس دیش میں گنگا بہتی ہے، سنگم، ملن، تیسری قسم، پہچان، شور، روٹی کپڑا اور مکان اور کبھی کبھی مشہور ہے۔ ان کے مقبول گیتوں میں ’ساون کا مہینہ پون کرے سور‘، ’میری تمناؤں کی تقدیر تم سنوار دو‘، ’بول میری تقدیر میں کیا ہے میرے ہمسفر اب تو بتا‘، ’بول رادھا بول سنگم ہوگا کہ نہیں ‘، ’زبان پہ درد بھری داستاں چلی آئی ‘، ’جانے کہاں گئے وہ دن ‘، ’میرا جوتا ہے جاپانی ‘، ’کیا خوب لگتی ہو بڑی سندر دکھتی ہو‘، ’کسی راہ میں کسی موڑ پر ‘، ’اک دن بک جائے گا ماٹی کے مول، جینا اسی کا نام ہے ‘، ’دوست دوست نہ رہا پیار پیار نہ رہا ‘، ’جس گلی میں تیرا گھر نہ ہو ساجنا ‘، ’ایک پیار کا نغمہ ہے ‘، ’یہ میرا دیوانہ پن ہے ‘، ’کہیں دور جب دن ڈھل جائے ‘، ’محبوب میرے محبوب میرے ‘، ’پھول تمہیں بھیجا ہے خط میں پھول نہیں میرا دل ہے ‘، ’بھی بھی میرے دل میں خیال آتا ہے ‘، ’جینا یہاں مرنا یہاں ‘، ’میں پل دو پل کا شاعر ہوں ‘، ’آوارہ ہوں ‘، ’چندن سا بدن‘، ’رمیہ وستاویہ‘، ’سہانہ سفر اور موسم حسیں ‘، ’سجن ری جھوٹ مت بولو‘، ’دنیا بنانے والے ‘، ’ہر دل جو پیار کرے گا‘، ’رک جا او جانے والے رک جا‘، ’دیونوں سے مت پوچھو‘، ’جنہیں ہم بھولنا چاہیں ‘، ’بڑے ارمانوں سے رکھا ہے بلم‘، وغیرہ شامل ہیں۔[1]

ابتدائی زندگی[ترمیم]

مکیش کا جنم دہلی کے ایک ہندو کائستھ خاندان میں ہوا۔[2][3] اس کا باپ زور آور چند ماتھر ایک انجینئر تھا، اس کی ماں کا نام چندرانی ماتھر تھا۔ اپنے خاندان میں دس بچوں میں چھٹا تھا۔ مکیش کی بہن سندر پیاری کو موسیقی سکھانے کے لیے گھر آنے والے استاد نے مکش میں ایک ہنر پایا، مکیش ساتھ والے کمرے میں بہن اور استاد کی تمام باتیں سنتا اور اس کو سیکھتا رہتا تھا۔ مکیش نے دسویں جماعت کے بعد اسکول چھوڑ دیا اور عوام کے کاموں کے ڈپارٹمنٹ کے لیے کام کیا۔ دہلی میں اپنی ملازمت کے دوران میں اس نے اپنی آواز ریکارڈ کی اور آہستہ آہستہ اپنے گانے کی صلاحیتوں اور موسیقی کے آلات کو بہتر کیا۔

وفات[ترمیم]

مکیش 27 اگست 1976ء کو ڈیٹرائٹ، مشی گن، امریکا میں دل کا دورہ پڑنے سے وفات پا گیا، وہ وہاں ایک کانسرٹ میں پرفام کرنے کے لیے گیا تھا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. انٹرنیٹ مووی ڈیٹابیس (IMDb) پر مُکیش
  2. Urdu/Hindi: An Artificial Divide: African Heritage, Mesopotamian Roots ... - Abdul Jamil Khan - Google Books
  3. "Exclusive : Neil Nitin Mukesh & Nitin Mukesh In Conversation With Karan Thapar"۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔