مہارانی چمنابائی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
چِمنابائی
مہارانی چِمنابائی اور بڑودا کی اندرا دیوی 'نوواری'، ایک روایتی مہاراشٹری ساڑی، پہنے ہوئے۔

مہارانی چِمنابائی  (1872ء – 23 اگست 1958ء)، اس کو چمنابائی دوم سے بھی جانا جاتا ہے، وہ سیاجیراؤ گائکود کی دوسری بیوی اور بڑودا کی مہارانی تھی۔

وہ ایک ترقی پسند عورت تھی، اس نے لڑکیوں کے لیے تعلیم کا کام کیا، پردہ نظام اتے بال ویاہ ختم کر دی اور وہ 1927ء وچ آل انڈیا ومینس کانفرنس (اے۔ آئی۔ ڈبلیو۔ سی۔) کی پہلی صدر بنی۔[1][2]

اس کا جنم بطور شریمنت گجرابائی دیوی ہوا، وہ شریمنت سردار باجیراؤ امرتراؤ گھاٹگے کی بیٹی تھی۔ اس کی بیٹی اندرا دیوی مہاراجا جتیندر نارائن، ریاست کوچ بہار کے مہاراجا، کی بیوی بن گئی تھی۔

کام[ترمیم]

  • Chimnabai II (Maharani of Baroda.)؛ Siddha Mohana Mitra (2005). Position Of Women In Indian Life. Cosmo Publications. ISBN 978-81-307-0094-6. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 06 مارچ 2018. 

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Past Presidents". AIWC: All India Women's Conference. 19 مارچ 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 19 مارچ 2014. 
  2. Geraldine Forbes؛ Geraldine Hancock Forbes (28 اپریل 1999). Women in Modern India. Cambridge University Press. صفحات 79–. ISBN 978-0-521-65377-0. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 06 مارچ 2018. 

مزید پڑھیے[ترمیم]