میری بہن مایا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
نوعیترومانٹک
ڈرامہ
اسرار
تحریرحسینہ معین
ہدایاتاظفر علی
نمایاں اداکار
متننیلم منیر
تھیم موسیقیمہوش حیات
افتتاحی تھیم"Tell Me Why" مہوش حیات
موسیقاروقار علی
نشرپاکستان
زبانUrdu
اقساط19
تیاری
فلم سازخرم رضا
دورانیہ35 منٹ
نشریات
چینلجیو انٹرٹینمنٹ
17 ستمبر 2011ء (2011ء-09-17) – 11 جنوری 2012 (2012-01-11)

میری بہن مایا ایک 2011 کا پاکستانی ٹی وی رومانٹک ڈرامہ سیریل تھا جو جیو ٹی وی کے ذریعے نشر کیا گیا تھا۔ [1] یہ پہلی بار 17 ستمبر 2011 کو نشر ہوا تھا۔ اس سیریل کو اظفر علی نے ڈائریکٹ کیا تھا اور پروجیکٹ ہیڈ اقبال انصاری تھے۔ اسے حسینہ معین نے لکھا تھا اور کاسٹ میں نیلم منیر ، اینی جعفری ، دانش تیمور اور جاوید شیخ شامل تھے۔ [2] یہ شو بھارت میں زندگی پر نشر کیا گیا تھا، جو 12 جنوری 2015 کو مایا کے نام سے نشر ہوا تھا۔

کہانی[ترمیم]

مایا ( جعفری ) اور زرمینہ ( منیر ) بہنیں ہیں جو ایک دوسرے سے بہت پیار کرتی ہیں۔ ان کے والد شازیب خان ( شیخ ) ان سے بہت پیار کرتے ہیں۔ اگرچہ ان کی سوتیلی ماں عطیہ ( بندیا ) ان دونوں کو خاص طور پر مایا کو ناپسند کرتی ہے۔ وہ مایا کے لیے مسائل پیدا کرنے کی کوشش کرتی ہے کیونکہ وہ شازیب خان کی حقیقی بیٹی نہیں ہے۔ دریں اثنا، زرمینہ فیضر ( تیمور ) سے محبت کرتی ہے اور اس سے شادی کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ حالات اس وقت خراب ہو جاتے ہیں جب عطیہ اپنے بیٹے راشد (ضرار خان) کے ساتھ سازش کر کے اسے اغوا کر لیتی ہے۔ اس دوران مایا کو راشد کی حقیقت کا پتہ چل جاتا ہے کہ وہ لڑکیوں کا سپلائی کرنے والا ہے اور انہیں کوٹھے پر فروخت کرتا ہے اور جب اسے یہ معلوم ہوتا ہے تو وہ راشد پر حملہ کر کے بھاگ جاتی ہے۔ وہ اپنے دوست زیب (آمنہ کریم) کے گھر پناہ لیتی ہے۔ زیب بھی راشد کے جال کا شکار تھی۔ وہ مسائل کا مقابلہ کرنے میں مایا کی مدد کرنے کی کوشش کرتی ہے۔ دریں اثنا، فیضر کے والدین نے زرمینہ سے منگنی توڑ دی کیونکہ فیضر کے والد عطیہ کو ایک اعلیٰ درجے کی طوائف کے طور پر جانتے ہیں۔ غصے میں، فیضر اپنے والد سے جھگڑے کے بعد گھر سے نکل جاتا ہے۔ شازیب کے حکم پر پولیس نے راشد کو گرفتار کر کے پوچھ گچھ کی۔ عطیہ، جو راشد کو ضمانت دیتا ہے، شازیب کو طلاق دیتا ہے اور اسے تباہ کرنے کی دھمکی دیتا ہے۔ مایا کو جلد ہی ہوٹل مینیجر کی نوکری مل جاتی ہے۔ یہ جاننے کے بعد کہ مایا شازیب کی ناجائز اولاد ہے وہ اس سے نفرت کرتی ہے اور بھاگ جاتی ہے۔ شازیب فالج کا شکار ہو کر ہسپتال میں داخل ہے۔ صحت یاب ہونے کے فوراً بعد، اسے پتہ چلتا ہے کہ مایا کو دوبارہ راشد نے اغوا کر لیا ہے جو مایا کو تیزاب سے اس کا چہرہ خراب کرنے کی دھمکی دیتا ہے۔ عطیہ چاہتی ہے کہ راشد سے تمام مقدمات واپس لے لیے جائیں۔ شازیب کے کیس لینے کے بعد راشد مایا کو چھوڑ دیتا ہے۔ مایا کو مارنے کی کوشش کے بعد راشد پولیس کے ہاتھوں مارا گیا۔ مایا بحفاظت گھر لوٹتی ہے، اپنی بہن کے ساتھ صلح کر لیتی ہے اور فیضر کے والد اسے جانے سے روکتے ہیں۔ فیض نے زرمینہ سے شادی کرلی اور مایا کھلے دل سے فیض کو چھیڑتی ہے۔

کردار[ترمیم]

مرکزی کردار[ترمیم]

دیگر کریڈٹ شدہ کاسٹ[ترمیم]

رد عمل[ترمیم]

یہ ڈرامہ مشہور ڈراما نگار حسینہ معین نے لکھا تھا، اس لیے لوگوں کو اس سے کافی توقعات وابستہ تھیں۔ اس ڈرامے کو ناقدین اور ناظرین کی جانب سے بہت پذیرائی ملی۔ دونوں بہنوں کے درمیان مثبت رشتے کی عکاسی کرنے والی اس کہانی کو بے حد پسند کیا گیا۔ اینی جعفری نے مایا کے طور پر اپنے چیلنجنگ کردار کے لیے بہت تعریفیں حاصل کیں اور ہر ایک نے ان کی تعریف کی۔ ڈرامے کی شوٹنگ مری کے خوبصورت مقامات پر کی گئی۔ ڈرامے کو بھی اچھی ٹی آر پی ملی، آخری ایپی سوڈ کو 4.2 کی اوسط ٹی آر پی ملی، جو جیو ٹی وی کے لیے اس مہینے کی سب سے زیادہ ہے۔ یہ ڈرامہ جیو ٹی وی کے 2012 کے ٹاپ 10 ڈرامہ سیریلز میں بھی شامل تھا۔ لیکن بندیا اور نیلم منیر کے میک اپ کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔

نغمہ[ترمیم]

Tell Me Why
نغمہ آواز: مہوش حیات
صنفمرکزی نغمہ
طوالت4:32
زباناردو
پروڈیوسرSP 1

میری بہن مایا کا ٹائٹل گانا ٹیل می وائے ہے جسے مہوش حیات نے گایا ہے، جس کی موسیقی وقار علی نے دی ہے اور بول محمد ناصر نے دی ہے۔ اس ڈرامہ سیریل کا گانا اپنے مختلف بول اور دلکش میوزک کی وجہ سے بے حد مقبول ہوا۔ شو کے دوران گانے کی لائنیں کثرت سے استعمال ہوتی ہیں۔

ٹریک
نمبر۔عنوانطوالت
1."ٹل می وائے"

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Drama serial's information and story". tv.com.pk. اخذ شدہ بتاریخ 12 جنوری 2013. 
  2. "All episodes of serial and cast". Pakfiles.com. اخذ شدہ بتاریخ 12 جنوری 2013. 

بیرونی روابط[ترمیم]