میر قاسم علی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
میر قاسم علی
(بنگالی میں: মীর কাসেম আলী خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
معلومات شخصیت
پیدائش 31 دسمبر 1952ء
مانک گنج ضلع  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 3 ستمبر 2016ء
غازی پور ضلع  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
وجۂ وفات پھانسی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وجۂ وفات (P509) ویکی ڈیٹا پر
طرز وفات سزائے موت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں طرزِ موت (P1196) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Bangladesh.svg بنگلہ دیش
Flag of Pakistan.svg پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مذہب اسلام
جماعت جماعت اسلامی بنگلہ دیش
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان
مادری زبان بنگلہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مادری زبان (P103) ویکی ڈیٹا پر
الزام
جرم اغوا[1]
قتل[1]
تعذیب[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں جرم (P1399) ویکی ڈیٹا پر

میر قاسم علی (31 دسمبر، 1952ء – 3 ستمبر، 2016ء) جماعت اسلامی بنگلہ دیش سے وابستہ سیاست دان، اسلامی بینک بنگلا دیش لمیٹڈ کے سابق ڈائریکٹر اور ڈیگنٹا میڈیا کارپوریشن کے چیئرمین تھے۔ ڈیگنٹا میڈیا کارپوریشن ڈیگنٹا ٹی وی کا مالک ادارہ ہے۔ میر قاسم علی نے ابن سینا وقف کی بنیاد رکھی، نیز رابطہ عالم اسلامی کے قیام میں بھی ان کا کلیدی کردار تھا۔[2] انھیں بنگلہ دیش کی اسلام پسند سیاسی جماعت جماعت اسلامی کا امیر ترین سیاست دان سمجھا جاتا تھا۔ سنہ 1971ء میں بنگلہ دیش کی جنگ آزادی کے دوران میں قتل، آتش زنی اور دیگر الزامات کی بنا پر 2 نومبر، 2014ء کو انہیں موت کی سزا سنائی گئی۔[3] جس پر 3 ستمبر، 2016ء کو عمل درآمد ہوا،[4] اور ضلع غازی پور کے قاسم پور مرکزی جیل میں انہیں پھانسی دی گئی۔ انھوں نے بنگلہ دیشی صدر سے معافی کی درخواست کرنے سے صاف انکار کر دیا تھا۔

سوانح[ترمیم]

میر قاسم علی، میر طیب علی اور رابعہ بیگم کے ہاں 31 دسمبر 1952ء، کو پیدا ہوئے۔ انہوں نے 1967ء میں اسلامی چاترا سینگھم میں شمولیت اختیار کی اس وقت وہ چٹاگانگ کالجیٹ اسکول میں زیر تعلیم تھے۔[5]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ http://www.thedailystar.net/death-for-quasem-48513
  2. Staff Correspondent۔ "War crimes verdict on Mir Quasem Ali Sunday"۔ bdnews24.com۔ bdnews24.com۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 جولائی 2015۔
  3. "Jamaat leader given death sentence"۔ الجزیرہ۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  4. Bangladesh executes last prominent Jamaat leader | Bangladesh News | Al Jazeera
  5. Star Online Report۔ "War trial: Mir Quasem verdict Sunday"۔ thedailystar.net۔ The Daily Star۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 جولا‎ئی 2015۔