مینکا گاندھی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
مینکا گاندھی
(ہندی میں: मेनका गांधी ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
 

مناصب
رکن نویں لوک سبھا   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکنیت مدت
2 دسمبر 1989  – 13 مارچ 1991 
منتخب در بھارت عام انتخابات، 1991ء 
پارلیمانی مدت نویں لوک سبھا 
وزیر ثقافت[5]   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
1 ستمبر 2001  – 18 نومبر 2001 
معلومات شخصیت
پیدائش 26 اگست 1956ء (68 سال)[6]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
نئی دہلی  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت بھارت[2]  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی[2]  ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شریک حیات سنجے گاندھی[7]  ویکی ڈیٹا پر (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد ورن گاندھی  ویکی ڈیٹا پر (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی لارنس اسکول، سنوار
لیڈی سری رام کالج برائے نسواں
جواہر لعل نہرو یونیورسٹی
دہلی یونیورسٹی  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان[2]،  صحافی  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[8]،  ہندی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ[9]  ویکی ڈیٹا پر (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

مینکا گاندھی (پیدائش 26 اگست 1956، دہلی، بھارت) بھارتیہ جنتا پارٹی میں خواتین اور بچوں کی ترقی کے لیے بھارتی کیبنٹ وزیر ہے اور جانوروں کی حقوق کے متعلق سرگرم ہے اور کام کرتی ہے۔ پہلے یہ صحافی رہ چکی ہے۔ یہ بھارت کی وزیر اعظم اندرا گاندھی کے چھوٹے بیٹے سنجے گاندھی کی بیوہ ہے۔ اس نے کئی کتابیں لکھی ہیں اور اس کی کئی تحریریں اخباروں میں آتی رہے ہیں۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

مینکا گاندھی کا جنم دہلی میں ہوا تھا۔ اس نے تعلیم لارینس اسکول اور لیڈی شری رام کالج برائے خواتین، نئی دہلی سے حاصل کی۔[10][11] اس نے اندرا گاندھی کے چھوٹے بیٹے سنجے گاندھی سے بیاہ کیا۔[12] سنجے اور مینکا اندرا گاندھی کے ساتھ رہتے تھے اور سنجے بھارتی سیاست میں کانگرس میں شامل ہو گیا۔ سنجے گاندھی کے انتقال کے بعد ی 1982ء میں سیاست میں آ گئی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. http://164.100.47.194/Loksabha/Members/AlphabeticalList.aspx — اخذ شدہ بتاریخ: 23 جولا‎ئی 2018
  2. ^ ا ب پ ت https://eci.gov.in/files/category/97-general-election-2014/
  3. https://eci.gov.in/files/category/97-general-election-2014/
  4. Members : Lok Sabha — اخذ شدہ بتاریخ: 13 ستمبر 2021
  5. Members : Lok Sabha
  6. بنام: Maneka Gandhi — سی ایس ایف ڈی پرسن آئی ڈی: https://www.csfd.cz/tvurce/70352
  7. https://m.tribuneindia.com/2002/20020210/spectrum/book5.htm
  8. Identifiants et Référentiels — اخذ شدہ بتاریخ: 3 مئی 2020
  9. https://www.instagram.com/manekagandhibjp/?hl=en
  10. St. Josephs News Press۔ 29 جولائی 1974 http://news.google.com/newspapers?id=YJ5eAAAAIBAJ&sjid=V1MNAAAAIBAJ&pg=5763,5470655۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 جولائی 2012  مفقود أو فارغ |title= (معاونت)
  11. The author has posted comments on this article (2014-06-08)۔ "Lawyers dominate Narendra Modi's cabinet – The Times of India"۔ Timesofindia.indiatimes.com۔ 09 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 18 اگست 2014 
  12. Kushwant Singh (10 فروری 2002)۔ "Mrs. G, Maneka and the Anand s"۔ The Tribune۔ 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2012