نائجیریا میں طالبات اغوا کا سانحہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
2014 نائجیریا میں طالبات اغوا کا سانحہ
Part of the
Parents of Chibok kidnapping victims.png
اغوا شدہ طالبات کے والدین
تاریخ 15 اپریل 2014 (2014-04-15)
مقام نائجیریا کی ریاست بورنو کے شہر چیبوک میں
متناسقات 10°51′57″N 12°50′49″E / 10.865833°N 12.846944°E / 10.865833; 12.846944متناسقات: 10°51′57″N 12°50′49″E / 10.865833°N 12.846944°E / 10.865833; 12.846944
ماحصل 250 سے زاہد مسلمان طالبات انتہا پسند مسلمان تنظیم کے پاس ہیں۔
لاپتہ 223

اپریل 2014 میں شمالی نائجیریا کے ایک سکول سے تین سو طالبات کو اغوا کر لیا گيا، یہ کام ایک شدت پسند تنظیم بوکو حرام نے کیا، بوکو حرام کا مطلب ہے مغربی تعلیم حرام ہے ہے۔ اسی وجہ سے ان طالبات کو اغوا کیا گیا ہے۔ جو تا حال ان کے قبضے میں ہیں۔ بوکو حرام ان لڑکیوں کی رہائی کے بدلے اپنی قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ کر رہی ہے۔ ان لڑکیوں کی بازیابی کے لیے حکومت پر دباؤ بڑھ رہا ہے۔[1]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]