ناگ حمادی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ضد ابہام صفحات کے لیے معاونت زیر نظر مضمون مصر کے ایک شہر کے بارے میں ہے۔ یہاں سے قریب دریافت ہونے والے غناسطی متون کی معلومات کے لیے ناگ حمادی لائبریری دیکھیے۔
ناگ حمادی
لوا خطا ماڈیول:Location_map میں 485 سطر پر: Unable to find the specified location map definition: "Module:Location map/data/Egypt" does not exist۔مصر میں محل وقوع
متناسقات: 26°03′N 32°15′E / 26.050°N 32.250°E / 26.050; 32.250
ملک Flag of Egypt.svg مصر
محافظہ قنا
آبادی (2007)
 • کل 42,820
منطقۂ وقت ای ایس ٹی (UTC+2)
ناگ حمادی کا شکر کارخانہ

ناگ حمادی (عربی: نجع حمادي) بالائی مصر کا ایک شہر جو محافظہ قنا میں دریائے نیل کے مغربی کنارے پر آباد ہے۔ اس شہر سے تقریباً 80 کلومیٹر دور اقصر واقع ہے۔ سنہ 2007ء کی مردم شماری کے مطابق اس شہر کی آبادی تقریباً 43 ہزار نفوس پر مشتمل ہے۔ یہاں کی خاص پیداوار شکر اور ایلومینیم ہیں۔

بانی[ترمیم]

اس شہر کا بانی محمود پاشا حمادی ہے جو سوہاج، مصر کے حمادی خاندان کا فرد تھا۔ اسی کے نام پر اس شہر کا نام ناگ حمادی رکھا گیا۔ محمود پاشا سوہاج کا بہت بڑا زمیندار تھا اور 1882ء کے برطانوی تسلط کی سخت مخالفت کی وجہ سے خاصا مشہور ہوا۔

ناگ حمادی لائبریری[ترمیم]

سنہ 1945ء میں ناگ حمادی سے تقریباً 5 کلومیٹر دود مغربی سمت میں قدیم مخطوطات کا ایک کتب خانہ دریافت ہوا جو دوسری صدی عیسوی کے غناسطی متون پر مشتمل ہے۔ یہ کتب خانہ جبل طارف پر واقع ہے۔[1]

قتل عام[ترمیم]

نیز جنوری 2010ء میں یہاں قتل عام بھی ہوا جس میں آٹھ قبطی مسیحیوں کو تین آدمیوں نے قتل کیا۔[2] کل انیس قبطی مسیحیوں پر حملہ کیا گیا تھا۔[2][3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. James M. Robinson۔ The Nag Hammadi Library۔ San Francisco: Harper San Francisco۔"nag-hammadi.com"۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  2. ^ ا ب "Egypt's anxious Copts 'await next catastrophe'" (25 جنوری 2010ء) بی بی سی نیوز
  3. "Egypt church attack kills Copts"۔ بی بی سی نیوز۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔

متناسقات: 26°03′N 32°15′E / 26.050°N 32.250°E / 26.050; 32.250