نتن مینن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
نتن مینن
ذاتی معلومات
مکمل نامنتن نریندر مینن
پیدائش2 نومبر 1983ء (عمر 38 سال)
اندور، مدھیہ پردیش (کیرلا سے جڑے ہوئے)
بلے بازیدائیں ہاتھ کا بلے باز
حیثیتوکٹ کیپر، امپائر
تعلقاتنریندر مینن (باپ)
امپائرنگ معلومات
ٹیسٹ امپائر7 (2019–2021)
ایک روزہ امپائر27 (2017–2021)
ٹی 20 امپائر23 (2017–2021 اس وقت آئی سی سی ٹی/20 عالمی کپ میں امپائرنگ کر رہے ہیں۔)
ماخذ: ESPN Cricinfo، 30 اکتوبر 2021

نتن نریندر مینن (پیدائش:2 نومبر 1983ء) ایک ہندوستانی کرکٹر اور امپائر ہیں۔[1] وہ لسٹ اے کرکٹ میں مدھیہ پردیش کی نمائندگی کرنے والے دائیں ہاتھ کے بلے باز تھے۔ اب وہ ایک امپائر ہیں اور آسٹریلیا میں 2015-16 رنجی ٹرافی[2] اور شیفیلڈ شیلڈ کے میچوں میں کھڑے ہوئے ہیں۔[3] جون 2020ء میں، انہیں نائجل لونگ کی جگہ آئی سی سی امپائرز کے ایلیٹ پینل میں ترقی دی گئی۔[4] ان کے والد نریندر مینن بھی امپائر تھے۔

پیدائش[ترمیم]

نتن مینن 2 نومبر 1983ء کو ہندوستان کی ریاست مدھیہ پردیش کے علاقے اندور میں پیدا ہوئے۔ اس ابو کا نام نریندر مینن ہے۔ اس کے والد بھی ہندوستانی کرکٹر اور امپائر تھے۔

امپائر[ترمیم]

وہ 26 جنوری 2017ء کو ہندوستان اور انگلینڈ کے درمیان اپنے پہلے ٹوئنٹی20 بین الاقوامی (T20I) میچ میں کھڑے ہوئے۔[5] وہ 15 مارچ 2017ء کو افغانستان اور آئرلینڈ کے درمیان اپنے پہلے ایک روزہ بین الاقوامی میچ (ODI) میں کھڑا ہوا۔[6]

اکتوبر 2018ء میں، انہیں 2018ء کے آئی سی سی خواتین عالمی ٹوئنٹی 20 کے لیے بارہ آن فیلڈ امپائروں میں سے ایک کے طور پر نامزد کیا گیا۔[7] وہ ایان گولڈ کے ساتھ 2019ء کے انڈین پریمیئر لیگ فائنل کے لیے آن فیلڈ امپائر تھے۔

مینن نومبر 2019ء میں بھارت میں افغانستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان ہونے والے واحد ٹیسٹ میچ کے لیے آن فیلڈ امپائروں میں سے ایک تھے۔[8] وہ اس سطح پر امپائرنگ کرنے والے 62ویں ہندوستانی بن گئے۔[9] فروری 2020ء میں، آئی سی سی نے انہیں آسٹریلیا میں ہونے والے 2020ء آئی سی سی خواتین کے ٹی20 عالمی کپ کے دوران میچوں میں امپائرز میں سے ایک کے طور پر نامزد کیا۔[10] مینن کو 2021ء میں انگلینڈ کے دورہ بھارت کے دوران امپائرنگ کے لیے کرکٹ برادری نے سراہا تھا۔[11]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Youngest umpire on Emirates ICC Elite Panel of Umpires, Nitin Menon targets consistency". International Cricket Council. اخذ شدہ بتاریخ 29 جون 2020. 
  2. "Ranji Trophy, Group B: Baroda v Punjab at Vadodara, Nov 15-18, 2015". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 15 نومبر 2015. 
  3. "Sheffield Shield, 21st Match: South Australia v Victoria at Adelaide, Feb 14-17, 2016". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 14 فروری 2016. 
  4. "Nitin Menon included in Elite panel of umpires for 2020-21". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 29 جون 2020. 
  5. "England tour of India, 1st T20I: India v England at Kanpur, Jan 26, 2017". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2017. 
  6. "Afghanistan tour of India, 1st ODI: Afghanistan v Ireland at Greater Noida, Mar 15, 2017". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2017. 
  7. "11th team for next month's ICC Women's World T20 revealed". International Cricket Council. اخذ شدہ بتاریخ 25 اکتوبر 2018. 
  8. "Umpire Nitin Menon set for Test debut in November". India Today. اخذ شدہ بتاریخ 02 ستمبر 2019. 
  9. "Nitin Menon set to become 62nd Indian Test umpire". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 02 ستمبر 2019. 
  10. "ICC announces Match Officials for all league matches". International Cricket Council. اخذ شدہ بتاریخ 12 فروری 2020. 
  11. "Hope Nitin Menon gets the best umpire award for 2021: Dinesh Karthik, Aakash Chopra in awe of Indian umpire". India Today (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 07 اپریل 2021.