نصرت جہاں

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
نصرت جہاں جین
(بنگالی میں: নুসরাত জাহান خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
نصرت جہاں جین
نصرت جہاں جین

معلومات شخصیت
پیدائش 8 جنوری 1990 (عمر نقص اظہار: «ج» کا غیر معروف تلفظ۔ سال)
کولکاتا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
قومیت بھارتی
دیگر نام نینا، روحی
جماعت آل انڈیا ترنمول کانگریس
عملی زندگی
مادر علمی کلکتہ یونیورسٹی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ماڈل، اداکار، سیاست دان
اعزازات
فیئر ون مس کولکاتا
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحات  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی (P345) ویکی ڈیٹا پر

نصرت جہاں جین (انگریزی: Nusrat Jahan) (ولادت: 8 جنوری 1990ء) بھارت کی اداکارہ اور ماڈل ہیں جو بنگالی سنیما میں کافی مشہور ہیں۔[2][3][4] 2019ء میں انہوں نے آل انڈیا ترنمول کانگریس میں شمولیت اختیار کی اور 2019ء کے انتخابات میں بطور امیدوار حصہ لیا۔ اپنے فلمی سفر کا آغاز انہوں نے راج چکرورتی کی فلم شوترو سے کیا۔ اس کے بعد کھوکا 420 میں نظر آئیں۔ ان کی دیگر اہم فلموں میں کھلاؤی، انکوش ہازرہ، سوندھے نمر آگے شامل ہیں۔ یہ فلمیں انہوں نے راہل بوس کے ساتھ کیں۔ جیت کے ساتھ انہوں نے پاور فلم میں کام کیا۔ 2010ء میں انہیں فیئر ون مس کولکاتا کا اعزاز ملا۔

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

ان کی دلاوت کولکاتا، مغربی بنگال کے ایک بنگالی خاندان میں ہوئی۔ انہوں نے بھوانی پور کالج نے 12 ویں کی تعلیم مکمل کی ہے۔[5]

فلمی کیریئر[ترمیم]

2010ء میں مقابلہ حسن جیتنے کے بعد نصرت نے ماڈلنگ کی دنیا میں قدم رکھا۔ ٹالی ووڈ میں فلم شوترو سے اپنے فلمی سفر کی ابتدا کی۔ ایک سال کے بعد کھوکا 420 میں کام کیا۔ اسی سال کھلاڑی منظر عام پر آئی۔ اس کے بعد دو آئیٹم سانگ میں نظر آئیں۔ 2015ء میں انکوش ہازرہ کے ساتھ ایک مزاحیہ فلم جمائی 420 میں کام کیا جس میں ہازرہ کے علاوہ پائل سرکار، میمی چکرورتی اور ہرن جیسے اداکار موجود تھے۔ پھر راہل بوس کے ساتھ سوندھے نمر آگے میں کام کیا۔ اس کے علاوہ انہوں میں کئی فلموں میں کام کیا جن میں امی جے کے تومر، اوما، بول دگا مالکی،اور نقاب جیسی فلمیں شامل ہیں۔ نقاب میں ان کے ساتھ ثاقب خان نے اداکاری کی۔ انہوں جیت گانگولی کے ایک نغمہ (جوئے جوئے درگا ماں) میں رقص کیا، اس نغمہ میں سارو گنگولی، سوبھا شری گنگولی، میمی چکرورتی، نصرت جہاں اور بونی سین گپتا اسکرین پر دکھائی دیے تھے۔

سیاست[ترمیم]

12 مارچ کو مگربی بنگال کی وزیر اعلیٰ اور آل انڈیا ترنمول کانگریس کی صدر نشین ممتا بنرجی نے اعلان کیا کہ بھارت کے عام انتخابات، 2019ء میں نصرت جہاں بشیر ہاٹ لوک سبھا حلقہ سے انتکاب لڑیں گی۔[6]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی: https://tools.wmflabs.org/wikidata-externalid-url/?p=345&url_prefix=https://www.imdb.com/&id=nm4495543 — اخذ شدہ بتاریخ: 13 جولا‎ئی 2016
  2. Ruman Ganguly (27 اپریل 2011)۔ "It's too good to be true: Nusrat Jahan – Times of India"۔ Articles.timesofindia.indiatimes.com۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2012۔
  3. "Interview: Tollywood Actress Nusrat Jahan Talks About Bengali Movie "Shatru" Co-Starring Jeet and her Background and Experience – Washington Bangla Radio USA"۔ Washingtonbanglaradio.com۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2012۔
  4. "Featured | Local Beauty Ms. Nusrat Jahan crowned Fair One Miss Kolkata 2010"۔ Mahiram.com۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2012۔
  5. "Nusrat Jahan Actress Profile Family Education Life-Career of Nusrat Jahan"۔ kolkatabengalinfo.com۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 جون 2015۔
  6. Ruman Ganguly (12 مارچ 2019)۔ "I'm thrilled to start my political career: Nusrat Jahan"۔ دی ٹائمز آف انڈیا۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 مارچ 2019۔