نصیرالدین ماؤزی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
نصیرالدین ماؤزی نگر
معلومات شخصیت
مقام پیدائش ضلع لکھیم پور خیری، برطانوی ہند
وجہ وفات پھانسی  ویکی ڈیٹا پر (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات سزائے موت  ویکی ڈیٹا پر (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ انقلابی  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تحریک تحریک خلافت

نصیرالدین ماؤزی نگر تحریک خلافت کے کارکن تھے۔ وہ تحریک خلافت کے ان تین کارکنوں میں سے ایک تھے جنھیں نوآبادیاتی حکام نے 26 اگست 1920 کو خیری کے ڈپٹی کمشنر سر رابرٹ ولیم ڈگلس ولوفبی کے قتل کے الزام میں پھانسی پر لٹکا دیا تھا۔[1]

ایسٹ انڈیا کمپنی نے 1924 میں سر رابرٹ ولیم ڈگلس ولوبی کی یاد میں ولوفبی میموریل ہال تعمیر کیا تھا۔[2][3] 26 اپریل 1936 کو ولوبی میموریل لائبریری کا قیام عمل میں آیا۔ ولوفبی میموریل ہال کو حال ہی میں نصیرالدین میموریل ہال کا نام دے دیا گیا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Uttar Pradesh district gazetteers, Vol. 33. Govt. of Uttar Pradesh, 1979. p. 34
  2. "Haileybury Roll of Honour: India 1920s". Haileybury School website. 12 نومبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2013. 
  3. "Archived copy". 12 نومبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 جولا‎ئی 2013.