نمونے کا نظریہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
ضد ابہام صفحات کے لیے معاونت زیر نظر مضمون ریاضیاتی مطالعے کے بارے میں ہے۔ ریاضی اور سائنس کے دیگر حصوں میں غیررسمی سوچ کے لیے ریاضیاتی نمونہ دیکھیے۔

ریاضی میں نمونے کا نظریہ ریاضی کے زمرے کے مختلف خاکوں کا مطالعہ ہے (مثلاً گروپوں، میدانوں، گرافوں، سیٹ نظریہ کے مجموعات کا ریاضیاتی منطق کی رو سے مطالعہ)۔ مطالعہ کے اجزا نظریات کے نمونے ہیں جو رسمی زبان میں ہیں۔ رسمی زبان کے فقروں کو نظریہ کہا جاتا ہے؛ نظریے کا نمونہ ایک خاکہ ہے (مثلًا ایک تعبیر جو نظریے کے فقروں پر کھری اترتی ہو۔

نمونے کا نظریہ یہ تسلیم کرتا ہے اور نزدیک سے دوگونہ پن سے جڑا ہے: یہ علم المعانی کے عناصر (معنے اور حقیقت) کو جانچتا ہے۔ اس کے لیے علم المعانی کے عناصر (فارمولے اور شواہد) کا مربوط زبان سے جوڑ کر دیکھا جاتا ہے۔ چانگ اور کیئسلیر (1990ء)[1] کے حوالے سے:

نمونے کا نظریہ = منطق + عالمی الجبرا

مزید دیکھیے[ترمیم]


حوالہ جات[ترمیم]

  1. Chang and Keisler, p. 1.