نواب وقار الملک

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

نواب وقار الملک (24 مارچ 1841 میرٹھ تا 27 جنوری 1917ء) جنکا اصل نام مشتاق حسین زبیری تھا مسلم لیگ کے ابتدائی اراکین میں سے تھے جنھوں نے اس جماعت کی بنیاد رکھی تھی نیز وہ ایک معروف ریاضی دان سر ضیاء الدین احمد زبیری جو علی گڑھ تحریک کے سرخیل تھے کے ماموں بھی تھے۔نیز وہ ایک مسلم مصلح، مترجم،معلم اور حیدر آباد کے سرکاری اہلکار تھے نیز انھیں سرسید کے قریبی ساتھیوں میں شمار کیا جاتا تھا۔

ابتدای زندگی[ترمیم]

انھوں نے انجنیئرنگ کالج رورکی سے تعلیم حاصل کی۔وہریاست حیدرآباد میں مشیر قانون رہے پھر انھیں نظام کے حکم پر محکمہ مالیات میں تعینات کیاگیا۔اسکے بعد وہ نواب بشیر دولہ کے معتمد ،مشیر کے عیٓہدے ہر رہے اس کے بعد وہ وہ حیدر آباد کے ڈپٹی وزیر اعظم بنے۔

مسلم مصلح[ترمیم]

9 دسمبر 1890 میں انھیں نواب کا لقب دیا گیا۔ 1892 میں انھوں نے علیگڑھ میں شمولیت حاصل کی وہ سر سید کے قریبی چاہنے والوں میں سے تھے۔انھوں نے ایک انگریزی کتاب کا ترجمہ کیا وہ سائنٹفک سوسائٹی کے متحرک رکن تھے اور اس کے چندہ میں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔1907 میں وہ ایم اے او کالج کے اعزازی سیکیٹری بنائے گئے۔ایک بار سرسید ان کے متعلق کہتے ہیں کہ " مجھے اس شخص کی ایمانداری پر اسقدر یقین ہے کہ جس قدر مجھے اپنی موت پر"۔