نکولائی زبولوتسکی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
نکولائی زبولوتسکی

Nikolay Alexeyevich Zabolotsky

نکولائی زبولوتسکی.jpg
پیدائش نکولائی الیکسویچ زبولوتسکی7 مئی 1903 (1903-05-07)کازان، روسی سلطنت
وفات 14 اکتوبر 1958 (1958-10-14)سینٹ پیٹرزبرگ، سویت یونین
قلمی نام نکولائی زبولوتسکی
پیشہ شاعر
زبان روسی
قومیت  روس
مادر علمی ماسکو اسٹیٹ یونیورسٹی
صنف شاعری
نمایاں کام کاشتکاری کی ظفرمندی
خانے

نکولائی الیکسوچ زبولوتسکی روسی: Никола́й Алексе́евич Заболо́цкий, نقل حرفی Nikolay Alexeyevich Zabolotsky (پیدائش: 7 مئی 1903ء - وفات: 14 اکتوبر 1958ء) ممتاز روسی شاعر، بچوں مصنف اور مترجم ہیں۔

حالات زندگی و تخلیقی دور[ترمیم]

نکولائی زبولوتسکی کی پیدائش 7 مئی 1903ء روسی سلطنت کے علاقے کازان کے جوار میں دیہی معاشیات کے ماہر اور گاؤں کی معلمہ کے خاندان میں ہوئی۔ پندرہ سال کی عمر میں وہ اپنے والدین کے ساتھ شمالی شہر "اورژوم" (موجودہ کیروف اوبلاست) آگئے[1]۔

اوائل عمر ہی سے ادبی میلان کی بنا پر 1920ء مین زبولوتسکی تعلیم حاصل کرنے کے لئے ماسکو آئے اور پھر پترو گراد (موجودہ سینٹ پیٹرزبرگ) چلے گئے جہاں انھوں نے 1925ء میں ادبی معلم کی اعلیٰ تعلیم مکمل کی[1]۔

تعلیم سے فارغ ہونے کے بعد سرخ فوج میں طلب کیے جانے پر خدمت کی اور فوجی خدمت سے سبکدوش ہو کر انہوں نے خود کو پوری طرح ادبی تخلیق کے لئے وقف کردیا۔ خلا کی تسخیر کے خیال سے متاثر ہوکر انہوں نے چوتھی دہائی کے شروع میں عظیم سائنسدان "کنستنتین ایدواردووچ تسیالکوفسکی" سے خط و کتابی کی۔ اسی زمانے میں ان کی نظموں کے مختصر سے مجموعے "خانے" کو نامواری حاصل ہوئی جو نو مشق شاعر کی تلاش و جستجو کی نمائندگی کرتا ہے۔ کچھ ہی دنوں میں زبولوتسکی روسی اور عالمی شعری ادب عالیہ کے پیرو اور نظم کے اہم استاد ہوگئے۔ انہوں نے طویل نظمیں "کاشتکاری کی ظفرمندی"، "لادیئنیکوف" اور بہت سی سلسلہ وار منظومات تخلیق کیں[2]۔

نکولائی زبولوتسکی 1938ء میں گرفتار ہوئے اور ساڑھے چھ سال جیل میں اور دو سال جلا وطنی میں گذارے۔ اپنے ان تجربات کو "میری جیل کی کہانی" (جو 1988ء تک شائع نہیں ہوئی) میں رقم کیا ہے[3]۔

ان کی موت سے کچھ ہی دنوں پہلے ان کے کیے ہوئے جارجیائی کلاسیکی شاعری کے ترجموں کی دو جلدیں شائع ہوئیں۔ ان کے طباع جارجیائی شاعر "شوتاروستاویلی" کی شہرۂ آفاق رزمیہ نظم "باگھ امبر دھاری سورما" کے ترجمے کو مترجمانی استادی کا کمال تسلیم کیا جاتا ہے[2]۔

تخلیقات[ترمیم]

مجموعہ شاعری[ترمیم]

  • خانے

نظمیں[ترمیم]

  • کاشتکاری کی ظفرمندی
  • لادیئنیکوف
  • وصیت
  • کم رو بچی
  • راہگیر
  • بوڑھی ایکٹریس

تراجم[ترمیم]

  • باگھ امبر دھاری سورما

وفات[ترمیم]

روس کے جدت پسند شاعرنکولائی زبولوتسکی 55 سال کی عمر میں 14 اکتوبر 1958ء کو ماسکو، سوویت یونین میں حرکتِ قلب بند ہونے کے باعث وفات کر گئے[3]۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ 1.0 1.1 موج ہوائے عصر، ظ انصاری، تقی حیدر، مطبع "رادوگا" اشاعت گھر، ماسکو، سوویت یونین، 1985 ،ص103
  2. ^ 2.0 2.1 موج ہوائے عصر، ظ انصاری، تقی حیدر، مطبع "رادوگا" اشاعت گھر، ماسکو، سوویت یونین، 1985 ،ص104
  3. ^ 3.0 3.1 http://russiapedia.rt.com/prominent-russians/literature/nikolay-zabolotsky/