نگہبان حقوق انسانی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
نگہبان حقوق انسانی
Human Rights Watch
Hrw logo.svg
قسمغیر منافع بخش غیر سرکاری تنظیم
قیام1978
صدر دفترایمپائر اسٹیٹ بلڈنگ
نیویارک شہر, ریاستہائے متحدہ امریکا
کلیدی لوگکینتھ روتھ (ایگزیکٹو ڈائریکٹر)جیمز ایف ہوگ جونیئر، (چیئرمین)
خدمت دائرہ کاردنیا بھر میں
مرکوزانسانی حقوق فعالیت
سابقہ نامہیلسنکی واچ
ویب سائٹhrw.org

نگہبان حقوق انسانی (Human Rights Watch) ایک بین الاقوامی غیر سرکاری تنظیم ہے جو انسانی حقوق کی وکالت اور تحقیق کرتی ہے۔ اس کا صدر دفتر نیویارک شہر میں اور اس کے دفاتر برلن، بیروت، برسلز، شکاگو، جنیوا، جوہانسبرگ، لندن، لاس اینجلس، ماسکو، پیرس، سان فرانسسکو، ٹوکیو، ٹورنٹو اور واشنگٹن میں ہیں۔[1]

2011ء جون کے مطابق تنظیم کے سالانہ اخراجات 50.6 ملین ڈالر تھے۔[2]

تاریخ[ترمیم]

نگہبان حقوق انسانی 1978ء ہیلسنکی واچ کے نام سے نجی امریکی غیر سرکاری تنظیم کے طور پر قائم ہوئی، جس کا بنیادی مقصد سابقہ سوویت یونین کی انسانی حقوق ہیلسنکی معاہدے کے تحت نگرانی کرنا تھا۔[3]

کوائف[ترمیم]

انسانی حقوق کا آفاقی منشور کے مطابق نگہبان حقوق انسانی ان چیزوں کی مخالفت کرتی ہے جو وہ سمجھتی ہے کہ یہ بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے، جس میں سزائے موت اور جنسی بنیاد پر امتیازی سلوک بھی شامل ہیں۔

سرمایہ کاری اور خدمات[ترمیم]

نگہبان حقوق انسانی نے جون 2011 کو ختم ہونے والے مالی سال میں مندرجہ ذیل پروگرام اور امدادی خدمات کے اخراجات کی تفصیلات شائع کیں۔

پروگرام خدمات 2011 اخراجات (امریکی ڈالر)[2]
افریقا $5,859,910
بر اعظم امریکا $1,331,448
ایشیا $4,629,535
یورپ اور وسط ایشیا $4,123,959
مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقہ $3,104,643
ریاستہائے متحدہ امریکا $1,105,571
بچوں کے حقوق $1,551,463
صحت اور انسانی حقوق $1,962,015
بین الاقوامی انصاف $1,325,749
حقوق نسواں $2,083,890
دیگر پروگرام $11,384,854
امدادی خدمات
انتظامیہ اور عام $3,130,051
فنڈ ریزنگ $9,045,910

مسائل اور مہمات[ترمیم]

  • سزائے موت کا دنیا بھر خاتمہ
  • ہتھیاروں کی اسمگلنگ
  • طفل مزدوری
  • ماورائے عدالت قتل اور اغوا
  • ہم جنس پرستوں کے حقوق
  • نسل کشی، جنگی جرائم اور انسانیت کے خلاف جرائم
  • بارودی سرنگوں
  • پولیس مظالم
  • انسانی حقوق کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی
  • مطالبے پر اسقاط حمل کا قانون
  • ایڈز کے مریضوں کے حقوق
  • جنگ میں عام شہریوں کی حفاظت؛ کلسٹر بموں کی استعمال کی مخالفت
  • تشدد
  • خواتین اور لڑکیوں کی اسمگلنگ
  • حقوق نسواں

تنقید[ترمیم]

نگہبان حقوق انسانی کو قومی حکومتوں، دیگر غیر سرکاری تنظیموں، اس کے بانی اور سابق چیئرمین رابرٹ ایل برنسٹین (Robert L. Bernstein) اور ذرائع ابلاغ کی طرف سے تنقید کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔

ناقدین [4] کی طرف سے الزام لگایا جاتا ہے کہ یہ امریکی حکومت کی پالیسیوں سے متاثر ہے [5] خاص طور پر لاطینی امریکا کی رپورٹنگ کے سلسلے میں [6][7][8][9][10]

عالمی رپورٹ 2012[ترمیم]

واشنگٹن پوسٹ کے مطابق عراق کے وزیر اعظم نوری المالکی نے رپورٹ کو یک طرفہ اور نظم و ضبط میں بہت سی خامیوں کا شکار کہا ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Frequently Asked Questions". Human Rights Watch. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 23 جولا‎ئی 2009. 
  2. ^ ا ب "Financial Statements, Year Ended June 30, 2011" (PDF). Human Rights Watch. اخذ شدہ بتاریخ 26 جون 2012. 
  3. "Our History". Human Rights Watch. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 23 جولا‎ئی 2009. 
  4. Russia investigates alleged Chechnya atrocities (The Guardian, Feb. 25, 2000)
    'No Jenin massacre' says rights group (BBC, May 3, 2002)
    Libyan human rights in the spotlight (BBC, January 20, 2003)
  5. Naiman، Robert (2009-08-21). "Latin America Scholars Urge Human Rights Watch to Speak Up on Honduras Coup". ہف پوسٹ. 2009-08-23 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 اگست 2009. 
  6. Steve Miller and Joseph Curl (2004). "Aristide accuses U.S. of forcing his ouster". Washington Times. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 دسمبر 2005. 
  7. "Aristide related articles". Democracy Now. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 جولا‎ئی 2006. 
  8. Emersberger، Joe (2006-03-29). "Haiti and Human Rights Watch". Z Communications. 2009-08-11 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 11 اگست 2009. 
  9. Council on Hemispheric Affairs, 12 January 2009, Scholars Respond to HRW’s Kenneth Roth’s Riposte on Venezuelan Human Rights
  10. Grandin، Greg; Adrienne Pine (2009-08-22). "Over 90 Experts Call on Human Rights Watch to Speak Out on Honduras Abuses". Common Dreams. 2009-08-22 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 اگست 2009.  Cite uses deprecated parameter |coauthors= (معاونت)

ایلیمینٹری اسکول[ترمیم]