وجاہت اللہ واسطی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
وجاہت اللہ واسطی ٹیسٹ کیپ نمبر156
ذاتی معلومات
مکمل نامسید وجاہت اللہ واسطی
پیدائش11 نومبر 1974ء (عمر 49 سال)
پشاور, پاکستان
بلے بازیدائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیدائیں ہاتھ کا آف بریک گیند باز
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 156)16 فروری 1999  بمقابلہ  بھارت
آخری ٹیسٹ5 مئی 2000  بمقابلہ  ویسٹ انڈیز
پہلا ایک روزہ (کیپ 125)16 مارچ 1999  بمقابلہ  بنگلہ دیش
آخری ایک روزہ16 اپریل 2000  بمقابلہ  ویسٹ انڈیز
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ
میچ 6 15
رنز بنائے 329 349
بیٹنگ اوسط 36.55 23.26
100s/50s 2/0 0/1
ٹاپ اسکور 133 84
گیندیں کرائیں 18 55
وکٹ 3
بولنگ اوسط 23.00
اننگز میں 5 وکٹ 0
میچ میں 10 وکٹ 0
بہترین بولنگ 3/36
کیچ/سٹمپ 7/- 5/-
ماخذ: ESPNcricinfo، 4 فروری 2006

سید وجاہت اللہ واسطی (پیدائش: 11 نومبر 1974ء پشاور) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کھلاڑی تھے جنھوں نے 1999ء سے 2000ء تک 6 ٹیسٹ میچ اور 15 ایک روزہ کرکٹ کھیلے۔وجاہت اللہ واسطی (اردو: وجاہت اللہ واسطی؛ پیدائش 11 نومبر 1974ء پشاور میں) ایک پاکستانی کرکٹ کھلاڑی ہے۔ وہ قومی سلیکشن کمیٹی پاکستان کرکٹ بورڈ کے رکن ہیں۔ وہ دائیں ہاتھ کے بلے باز اور دائیں ہاتھ سے آف بریک باؤلر ہیں۔ واسطی نے فروری 1999ء سے مئی 2000ء کے درمیان چھ ٹیسٹ میچ کھیلے لیکن جلد ہی اپنی کارکردگی پر کافی تنقید کے بعد خود کو ٹیم سے باہر کر دیا۔ اپنے دوسرے ٹیسٹ میں انھوں نے سری لنکا کے خلاف لاہور میں 133 اور 121 ناٹ آؤٹ رنز بنائے۔ ان کی بہترین ون ڈے کارکردگی 1999ء کے کرکٹ ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ کے خلاف شاندار، اسٹروک سے بھرپور 84 رنز تھی، جسے پاکستان نے نو وکٹوں سے جیتا تھا۔ اس اسکور کو بنانے کے لیے واسطی نے 123 گیندیں لیں، راستے میں 10 چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ واسطی نے مئی 2000ء سے بین الاقوامی کرکٹ نہیں کھیلی ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]