وزیر آباد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
وزیر آباد
—  شہر  —
وزیر آباد is located in پاکستان
وزیر آباد
Location in Pakistan
متناسقات: 32°45′N 74°10′E / 32.750°N 74.167°E / 32.750; 74.167
ملک Flag of Pakistan.svg پاکستان
صوبہ پنجاب
ضلع گوجرانوالہ
تحصیل وزیر آباد
Union councils 5
Municipal status 1867
حکومت
 - Nazim
 - Naib nazim
منطقۂ وقت PST (یو ٹی سی+5)
 - موسمِ گرما (د‌ب‌و) PDT (یو ٹی سی+6)

وزیر آباد، ضلع گوجرانوالہ، صوبہ پنجاب کا ایک شہر ہے۔ وزیرآباد دریا چناب کے کنارے لاہور سے 100 کلومیٹر دور واقع ہے۔ اس کے قریبی دیہات میں علی پور(پاکستان)، احمد نگر(پاکستان)، رسول نگر شامل ہیں۔اس کے علاوہ قدیم تاریخی حثیت کا حامل گاوں مردیکے بهی واقع هے اور احمد نگر بهی اپنے اندر ایک اعظیم تاریخ لیئے هوئے هے ((قاضی رحیم الدین بن عبداللہ بن عبدالرزاق بن عبدالرحیم قریشی اسعدی))متوطن سلطان پورمتصل نگرہارجلال آباد(افغانستان)دور جہانگیر میں سلطان پور کے جرگہ کے سردار مقررهوئےانکی خدادادفہم و فراست کی وجہ سےاطراف کے اہل علاقہ میں انکی ایک مظبوط شخصیت وقوع پذیر هوئی اور علاقہ کے بااثرلوگوں کی بداعمالیوں میں ایک اعظیم رکاوٹ بنی اس شخصیت کی وجہ سے بااثر لوگوں نےقاضی صاحب کو دربار جہانگیر سے نکلوانے کی تدابیرکرنی شروع کیں یہ سب احوال دیکه کرجلال آبادکے صوبیدار (شیخ کریم بخش) نے قاضی صحب کو قاضی القضاءکے عہدہ کیلئے آمادہ کیااور کچه ہی عرصہ بعدانکو غزنی(پشاور)منتقل کر دیا گیااور پهر وہاں سےکچه عصہ بعدانکی پاکدامنی اور صداقت کو دیکهتے ہوئے انکی تبدیلی (((وزیرآباد)))کر دی گئی اور یہاں پرانکو برصغیرکی مرکزی تجارتی گزر گاہ موضع مردیکے وزیر آباد کےمحاصل کااضافی عہدہ بهی دئےدیا گیایوں یہ قاضی وقت اور محاصل (یعنی ٹیکس وصول کنندہ کرنے والا)دو عہدوں پر کام کرتے رهےاور اپنی بقیہ زندگی انہوں نے یہاں پر ہی گزاری انکی وفات کے بعد انکے بڑئے بیٹے قاضی عبدالغنی قریشی کو قاضی وقت مقرر کیا گیا قاضی عبدالغنی قریشی کے بعد ان کے بڑے بیٹے قاضی محمد مسلم قریشی کو وزیر آباد کا قاضی القضاء مقررکر دیا گیااور پهر احمد شاہ ابدالی کے دور میں قاضی محمد مسلم اور انکے چهوٹے بهائی محمد اسلم جو کہ لاولد تهے نے مرہٹوں کے ہاتهوں جام شہادت نوش کیا انکی تمام املاک کو تاخت و تاراج کر دیا گیا ان پرآشوب حالات میں قاضی محمد مسلم شہید کےدونوں بیٹوں شیخ احمد قریشی(- )اور ملا محمد قریشی نے موضع بهروکے میں سکونت اختیار کی (ملا محمد قریشیی علیہ الرحمہ )کی اولاد میں سے مولوی شمس الدین ،مولوی شہسوار الدین ،مولوی شہنوازالدین ، نے علم و کمال حاصل کیا (شیخ احمد قریشی علیہ الرحمہ) کی اولاد وزیرآباد اور اس کے دیگر مضافات موضع رندهیر ، (رائے پور) ، ساہوالہ ، اور جامکے ،میں رہائش پذیر ہوئی انکی اولاد میں ساہوالہ کے حکیم مولوی غلام حسین نے علم و کمال حاصل کیا انکی اولاد میں رائے پور میں (مولوی شاہ سوار علیہ الرحمہ) انکا مرقد موضع رائےپور میں واقعہ ہے ، حکیم سلطان احمد قریشی علیہ الرحمہ اور رئیس الطباء شفاء الملک حکیم محمد نواز قریشی علیہ الرحمہ ، نے علم و کمال حاصل کیا * حکیم اعجاز احمد قریشی ، حکیم عبدالستار قریشی * موجود ہیں قاضی شیخ رحیم الدین قریشی اسعدی کے دو بیٹے تهے بڑئے بیٹے قاضی شیخ عبدالغنی قریشی اور چهوٹے بیٹے شیخ عبدالنبی قریشی تهے شیخ عبدالنبی قریشی کامزار اقدس ضلع گوجرانوالہ کے گاوں واقعہ کوٹلی مقبرہ میں مرجعہ خلائق ہے اس مزار میں شیخ عبدالنبی قریشی اورانکے بیٹے کی قبر مبارک ہے اس مزار کی عمارت مغلیہ دور کی اعظیم عمارتوں میں سے ایک اعظیم یادگار عمارت ہے

  یہ حصرات حکیم خادم علی سیالکوٹی کے اقرباء میں سے تهے اور حکیم عبدالستار قریشی چوراهی رائے پوری  اور حکیم اعجاز احمد قریشی رائے پوری     کے جد اعظم ہیں

آبادی[ترمیم]

شہر کی آبادی 95000 افراد پر مشتمل ہے۔ قریبی دیہات 264 ہیں جہاں تقریبا 60000 افراد رہائش پزیر ہیں۔

ریلوے[ترمیم]

وزیرآباد ایک اہم ریلوے جنکشن ہے جو کراچی پشاور لائن سے فیصل آباد اور سیالکوٹ کی طرف راستہ فراھم کرتا ہے۔

مقامی صنعت[ترمیم]

وزیرآباد میں کافی صنعتیں درامدی اشیاء بنانے کے لحاظ سے مشہور ہیں۔ مقامی صنعت کٹلری اور سرجیکل آلات بنانے میں مشہور ہے۔ اس کے علاوہ قریبی دیہات چاول اور گنے کی پیداوار میں بھی مشہور ہیں۔ و==مشہور شخصیات== مولانا ظفر علی خان وزیر آباد کی اہم شخصیت ہیں۔ آپ برطانوی راج کے دوران ایک اہم اخبار زمیندار کے ایڈیٹر تھے۔ آپ نے برطانوی راج سے آزادی کے لئے تحریک میں حصہ لیا۔ وزيرآباد پتنگ سا زی مین بھی بہت مشہور ہے

قابل ذکر شخصیات[ترمیم]

(قاضی عبدالغنی قریشی) قاضی وقت (قاضی محمد مسلم قریشی شہید) قاضی وقت

Incomplete-document-purple.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کرکے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔