ولفی ریبمبس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ولفی ریبمبس
معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش 2 اپریل 1942  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات 9 مارچ 2010 (68 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وجہ وفات پھیپھڑوں کا سرطان  ویکی ڈیٹا پر (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات طبعی موت  ویکی ڈیٹا پر (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت (26 جنوری 1950–)
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند (–14 اگست 1947)
Flag of India.svg ڈومنین بھارت (15 اگست 1947–26 جنوری 1950)  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ گلو کار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ولفریڈ جیرالڈ ریبمبس (انگریزی: Wilfy Rebimbus) (ولادت: 2 اپریل 1942ء - 9 مارچ 2010ء) ایک منگلورائی گلوکار اور گیت کار تھے جو وِلِفی رِبِمس کے نام سے زیادہ مشہور ہیں۔ ولفی ریبمس اپنی کوکنی اور تولو زبانوں کے نغمہ ساز کے لیے مشہور تھے۔ وہ مقبول طور پر کوکن کوگل کے نام سے مشہور ہیں جس کے معنی کوکن کی کوئل ہے۔[2]

ابتدائی زندگی اور خاندان[ترمیم]

ولفی منگلور کے کیتھولک گھرانے سے تعلق رکھتے تھے۔ ولفی 2 اپریل 1942ء کو منگلور میں لینڈ لائن ریبمبس اور میگڈ لائن مینڈونکا کے گھر میں پیدا ہوئے۔

ابتدائی سال اور ہنر[ترمیم]

ولفی طالب علمی کے زمانے سے ہی ایک باصلاحیت گلوکار تھے، جیسا کہ گانے کے مختلف مقابلوں میں جیتنے والے متعدد انعامات انہوں نے ظاہر کیا ہے۔

دیگر سرگرمیاں[ترمیم]

گانے کے علاوہ، وِلِفی اپنے اسکول کے اوقات میں ایک اچھے کھلاڑی اور کبڈی کے کھلاڑی بھی تھے۔[3]

کوکن کوگل لقب[ترمیم]

26 ستمبر 1971ء کو انہیں اس وقت کے منگلور کے بشپ، مرحوم بیسل ڈی سوزا نے کوکن کوگل کا خطاب دیا تھا۔[4]

ایوارڈز اور تعریف[ترمیم]

منگلور میں واقع کوکنی ثقافتی تنظیم منڈ سوبھن نے 2009ء میں اعلان کیا تھا کہ وہ "کوکنی موسیقی لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ" ریبمبس کو "کوکنی موسیقی میں ان کی بے مثال شراکت کے لیے عطا کرے گا۔"[5]

کرناٹک کے سابق وزیر اعلی اور سابق یونین وزیر ویرپا موئیلی نے ریمبس کو اس طرح بیان کیا ہے: "اس کا ہنر بے مثال ہے۔ ان کی میراث بے مثال ہے۔ ریبیمس بلاشبہ ایک عہد ساز ہے۔"[6]

ان کے نام پر گانے کا ایک مقابلہ منعقد کیا گیا ہے، جس میں سال 2013ء بھی شامل ہے۔[7]

خاندانی زندگی[ترمیم]

ولفی اور مینا کے دو بچے ہیں، ان میں سے بڑی وینا ریمبس اور چھوٹی وشواس ریمبس ہیں۔ وہ موسیقی بھی گاتے ہیں اور کمپوز بھی کرتے ہیں اور 2011ء میں تم مکا حوا ٹکا کے نام سے ایک البم جاری کرکے اپنے والد کی میراث کو جاری رکھا۔

بیماری اور وفات[ترمیم]

ولفی کے پھیپھڑوں کے کینسر میں مبتلا ہونے کی تشخیص ہوئی تھی اور ستمبر 2009ء میں ان کی ایک سرجری ہوئی تھی۔[8] ان کا انتقال 9 مارچ 2010ء کو پھیپھڑوں کے کینسر سے ہونے والی پیچیدگیوں سے ہوا۔[9]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. http://mangalorean.com/news.php?newstype=broadcast&broadcastid=172215
  2. http://www.daijiworld.com/news/newsDisplay.aspx?newsID=73665
  3. "Konkani Musician, Lyricist and Singer Wilfy Rebimbus passes away". Mangalore Today. 9 March 2010. اخذ شدہ بتاریخ 29 اگست 2010. 
  4. "Late Singer Wilfy Rebimbus honoured with Papal honour | Mega Media News English". اخذ شدہ بتاریخ 17 جنوری 2021. 
  5. Apr 11، TNN /؛ 2009؛ Ist، 22:33. "Lifetime award for Wilfy Rebimbus | Mangaluru News - Times of India". The Times of India (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 17 جنوری 2021. 
  6. "'Wilfy Rebimbus was an epochmaker'". Deccan Herald (بزبان انگریزی). 2010-03-22. اخذ شدہ بتاریخ 17 جنوری 2021. 
  7. admin. "Mangalore: Wilfy Rebimbus Singing Contest on Nov 3 & 17 | Bangalore First" (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 17 جنوری 2021. 
  8. "Konkani singer Wilfy Rebimbus no more". Deccan Herald. India. 9 March 2010. اخذ شدہ بتاریخ 29 اگست 2010. 
  9. Nandalike، Walter (9 March 2010). "Wilfy Rebimbus : The Legend has Left us All...". Daijiworld Media. 03 مارچ 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 29 اگست 2010.