ولیم اول، جرمن شہنشاہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ولیم اول
Wilhelm I
Kaiser-wilhelm-I.jpg
شاہ پروشیا
معیاد عہدہ 2 جنوری 1861 – 9 مارچ 1888
پیشرو فریڈرک ولیم چہارم
جانشین فریڈرک سوم
وزرائے اعظم
شمالی جرمن اتحاد کے بنڈیس پریسیڈیم کے حاملین [1]
قلمدان سنبھالا 1 جولائی 1867 – 31 دسمبر 1870
چانسلر بسمارک
جرمن شہنشاہ
فرماں روائی 1 جنوری 1871 – 9 مارچ 1888
تاجپوشی 18 جنوری 1871, ویغسائی محل
جانشین فریڈرک سوم
چانسلر بسمارک
شریک حیات سیکس وائمر کی آگسٹا
نسل فریڈرک سوم، جرمن شہنشاہ
پروشیا کی ملکہ لوئیزی (بیڈن کی مہا ملکہ)
خاندان ہوہنزولرن
والد فریڈرک ولیم سوم شاہ پروشیا
والدہ ملکہ لوئیزی
پیدائش 22 مارچ 1797
برلن, مملکت پروشیا
وفات 9 مارچ 1888(1888-30-90) (عمر  90 سال)
برلن, جرمن سلطنت
تدفین شارلوٹنبرگ محل، برلن، جرمنی
مذہب لوتھریت
دستخط

ولیم اول [2]پروشیا کا بادشاہ اور پہلا جرمن شہنشاہ تھا۔ اس کا تعلق جرمن شاہی خاندان ہوہنزولرن سے تھا۔ ولیم اول ملکہ لوئیزی اور پروشیا کے بادشاہ فریڈرک ولیم کے تیسرے بیٹے تھے۔

ولیم فریڈرک لوئیس ان کا پورا نام تھا۔ 1814 میں انھوں نے نیپولین سے جنگیں لڑییں۔ واٹرلوو کی جنگ میں وہ گبہارڈ لبریشڈ بلوخر کے ساتھ تھے۔ 2 جنوری 1861 کو وہ پرشیا کے بادشاہ بنے۔ بادشاہ بننے کے بعد انھوں نے بسمارک کو جرمن چانسلر لاگا دیا۔ 1871 کے فرانسیسی جرمن جنگ میں ان کو جرمن شہنشاہ بنایا گیا۔ وہ اپنے مرنے تک 9 مارچ 1888 تک جرمن شہنشاہ رہے۔

ولیم کو ویغسائی محل میں جرمن شہنشاہ بنایا جارہا ہے
Wappen Deutsches Reich - Reichsadler 1889.png


ہوہنزولرن خاندانی نشان

نسب[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Ernst Rudolf Huber: Deutsche Verfassungsgeschichte seit 1789. Vol. III: Bismarck und das Reich. 3. Auflage, W. Kohlhammer, Stuttgart 1988, p. 657.
  2. Fulbrook, Mary (2004). A Concise History of Germany, 2nd edition, 2004, Cambridge University Press, p. 128. ISBN 978-0-521-54071-1.

بیرونی روابط[ترمیم]