ویر بلالا سوم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ویر بلالا سوم
سلطنت ہوئے سل کے آخری عظیم فرماں روا
معیاد عہدہ ت 1292 – تقریباً 1342 عیسوی
پیشرو Narasimha III
جانشین Harihara I (سلطنت وجے نگر کا بانی)
شاہی خاندان ہوئے سل
وفات 1343
شاہان ہوئے سل (1026–1343)
Nripa Kama II (1026–1047)
Vinayaditya (1047–1098)
Ereyanga (1098–1102)
Veera Ballala I (1102–1108)
Vishnuvardhana (1108–1152)
Narasimha I (1152–1173)
Veera Ballala II (1173–1220)
Vira Narasimha II (1220–1235)
Vira Someshwara (1235–1263)
Narasimha III (1263–1292)
ویر بلالا سوم (1292–1343)
Harihara Raya
(Vijayanagara Empire)
(1342–1355)


ویر بلّالا سوم (حکمرانی: 1292ء – 1342ء) سلطنت ہوئے سل کے آخری عظیم فرماں روا تھے۔[1] ان کے دور حکمرانی میں سلطنت ہوئے سل کی شمالی اور جنوبی شاخیں (جن میں جدید کرناٹک اور شمالی تمل ناڈو کا اکثر حصہ شامل تھا) ضم ہوئیں اور ایک ہی مرکز ہیلے بڈو سے ان کا کاروبار سنبھالا جانے لگا۔ نیز بلالا نے دیوگیری کے یادو، مدورئی کے پاندئے نیز جنوبی ہندوستان کی دیگر چھوٹی مملکتوں سے ان کی کئی جنگیں ہوئیں۔ لیکن علاء الدین خلجی کی حملہ آور فوجوں اور ان کے بعد محمد بن تغلق کے لشکر سے ویر بلالا کے تصادم نے جنوبی ہندوستان کی تاریخ کا رخ پلٹ دیا۔ بلالا کی جرات اور حوصلہ مندی سے متاثر ہو کر سوریہ ناتھ کامتھ، چوپڑا، رویندرن اور سبرمنین جیسے مورخین نے انہیں "عظیم حکمران" کا خطاب دیا ہے۔[2][3] سنہ 1343ء میں ان کی وفات کے بعد شمالی ہندوستان میں ایک نئی ہندو سلطنت وجے نگر کو عروج نصیب ہوا۔ مورخ سین کے الفاظ میں "جو لوگ جدید میسور کے معمار ہونے کے مدعی ہیں ان میں ہوئے سل سب سے عظیم تھے"۔[4]

پانڈئے اور یادو سے جنگیں[ترمیم]

سنہ 1303ء میں ویر بلالا سوم نے دکشن کنڑ کے سرکش الوپاؤں کو اپنا تابع فرمان بنایا۔ نیز بلالا نے یادو کی طاقت کو کمزور کرنے کی بھی خوب کوششیں کیں۔ سنہ 1305ء میں ویر بلالا نے ہوللکیرے کے مقام پر یادو کی چڑھ آنے والی فوجوں کا کامیابی سے مقابلہ کیا اور انہیں واپس لکونڈی کی جانب کھدیڑ دیا۔ نیز انہوں نے ہنگل کے کدمبوں اور شیموگا کے سانتروں سے بھی دو دو ہاتھ کیے۔

سلطنت دہلی کی لشکر کشی[ترمیم]

سنہ 1318ء تک مملکت یادو مکمل طور پر ختم ہو چکی تھی اور ان کا پایہ تخت دیوگیری سلطان دہلی کے زیر تسلط تھا۔ اس وقت تخت دلی پر محمد بن تغلق جلوہ افروز تھے۔ ویر بلالا سوم نے تخت دلی کو خراج ادا کرنے سے منع کر دیا نیز انہوں نے سابق میں دہلی سلطنت سے ماتحتی کا جو معاہدہ ہوا تھا اسے توڑ دیا۔ سنہ 1327ء میں تغلق نے جنوبی ہندوستان کی جانب اپنا لشکر روانہ کیا اور ہیلے بڈو ایک مرتبہ پھر تاراج ہوا۔ ویر بلالا کو تروون ملئی میں پناہ لینی پڑی جہاں سے انہوں نے اپنی مقاومت جاری رکھی۔

حواشی[ترمیم]

  1. Sailendra Sen۔ A Textbook of Medieval Indian History۔ Primus Books۔ صفحات 58–60۔ آئی ایس بی این 978-9-38060-734-4۔
  2. Kamath (1980), p.129
  3. Chopra, Ravindran and Subrahmanian (2003), p.156
  4. Sen (1999), p.500

حوالہ جات[ترمیم]

ماقبل 
Narasimha III
Hoysala
1291–1343
مابعد 
Harihara I