وینکٹارمن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
وینکٹارمن
(تمل میں: ராமசுவாமி வெங்கட்ராமன் خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
R Venkataraman.jpg 

مناصب
وزیر امور داخلہ   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
دفتر میں
22 جون 1982  – 2 ستمبر 1982 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ذیل سنگھ 
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
نائب صدر بھارت   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
دفتر میں
31 اگست 1984  – 24 جولا‎ئی 1987 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png محمد ہدایت اللہ 
شنکر دیال شرما  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
Flag of the President of India (1950–1971).svg صدر بھارت (8 )   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
دفتر میں
25 جولا‎ئی 1987  – 25 جولا‎ئی 1992 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ذیل سنگھ 
شنکر دیال شرما  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 4 دسمبر 1910[1][2]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
تنجاؤر ضلع  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 27 جنوری 2009 (99 سال)[3][1][2]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
نئی دہلی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of India.svg بھارت
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
جماعت انڈین نیشنل کانگریس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
مادر علمی لویولا کالج
جامعہ مدراس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ وکیل،  سیاست دان،  آپ بیتی نگار،  منصف  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
دستخط
Ramaswamy Venkataraman's Autograph.jpg 

بھارت کے ایک سابق صدر۔ انیس سو ستاسی میں بھارت کے صدر مقرر ہونے سے پہلے وہ وزیر دفاع، وزیر خزانہ اور نائب صدر رہے۔ وہ بھارت کا آئین بنانے والوں میں سے تھے۔ راماسوامی وینکٹارمن بھارت کی پہلی پارلیمنٹ کے رکن بنے تھے۔ ان کا تعلق ریاست تمل ناڈو سے تھا۔ مسٹر وینکٹارمن کا دورِ صدارت خاصا ہنگامہ خیز رہا۔ اسی دور میں سری لنکا کا بحران پیدا ہوا، بوفورز سکینڈل سامنے آیا اور وزیر اعظم راجیو گاندھی کو قتل کیا گیا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Ramaswamy-Venkataraman — بنام: Ramaswamy Venkataraman — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  2. ^ ا ب فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/cgi-bin/fg.cgi?page=gr&GRid=33374086 — بنام: Ramaswamy Venkataraman — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. http://www.indianexpress.com/news/former-president-r-venkataraman-passes-away/415704/