ٹائیگر زندہ ہے

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ٹائیگر زندہ ہے
(انگریزی میں: Tiger Zinda Hai خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں عنوان (P1476) ویکی ڈیٹا پر
اداکار سلمان خان
کیٹرینا کیف
گریش کرناڈ
پریش راول  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں اداکار (P161) ویکی ڈیٹا پر
فلم ساز ادتیے چوپڑا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں فلم ساز (P162) ویکی ڈیٹا پر
صنف ہنگامہ خیز فلم  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں طرز (P136) ویکی ڈیٹا پر
دورانیہ 145 منٹ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں دورانیہ (P2047) ویکی ڈیٹا پر
زبان ہندی،  اردو  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں اصل زبان (P364) ویکی ڈیٹا پر
ملک Flag of India.svg بھارت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں اصل ملک (P495) ویکی ڈیٹا پر
اسٹوڈیو
تقسیم کنندہ یش راج فلمز  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تقسیم کنندہ (P750) ویکی ڈیٹا پر
تاریخ نمائش 22 دسمبر 2017
21 دسمبر 2017 (جرمنی)[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ اشاعت (P577) ویکی ڈیٹا پر
مزید معلومات۔۔۔
باضابطہ ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں باضابطہ ویب سائٹ (P856) ویکی ڈیٹا پر
allmovie.com v668246  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آل مودی فلم آئی ڈی (P1562) ویکی ڈیٹا پر
IMDb logo.svg
tt5956100  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی (P345) ویکی ڈیٹا پر

ٹائیگر زندہ ہے 22 دسمبر، 2017ء کو بھارتی فلم ہدایت کار علی عباس ظفر کی ہدایت کی گئی ایک بالی ووڈ فلم ہے۔ یہ 2012 فلم ایک تھا ٹائیگر کا دوسرا حصہ ہے اور ٹائیگر کی دوسری فلم سیریز ہے۔ اس فلم میں، سلمان خان اور کیٹرینا کیف نے کلیدی کردار نبھائے ہیں۔

مہاراشٹر میں مقامی زبان کی فلم سے تصادم[ترمیم]

ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق مہاراشٹر نو نرمان سینا نے فلم کے نمائش کنندہ کو خط کے ذریعے دھمکی تھی کہ اگر سینما گھروں میں پرائم ٹائم ریلیز کا وقت مراٹھی فلم ’دیوا‘ کو بھی نہیں ملا تو وہ فلم ’ٹائیگر زندہ ہے‘ کے خلاف مظاہرے کریں گے، خیال رہے کہ یہ دونوں فلمیں ایک ہی دن یعنی 22 دسمبر کو ریلیز ہوئی ہیں۔[2]

پاکستان میں فلم پر پابندی[ترمیم]

اس فلم میں پاکستان سے متعلق منفی مناظر موجود ہیں، جس کی وجہ سے اسے اس بھارتی فلم کو پاکستانی سینسر بورڈ نے کلیئر نہیں کیا۔[3]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]