ٹنڈی ڈورجی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ٹنڈی ڈورجی
وزیر خارجہ بھوٹان
آغاز منصب
7 نومبر 2018ء
وزیر اعظم لوتے شیرنگ
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ڈامچو ڈورجی
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
رکن قومی اسمبلی بھوٹان
آغاز منصب
31 اکتوبر 2018ء
Fleche-defaut-droite-gris-32.png چیمی ڈورجی
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1968 (عمر 50–51 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Bhutan.svg بھوٹان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
جماعت دروک نیامروپ شوگپا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ ڈھاکہ
جامعہ سڈنی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ طبیب،  سیاست دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
مادری زبان زونگکھا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مادری زبان (P103) ویکی ڈیٹا پر

ٹنڈی ڈورجی (زونگکھا: རྟ་མགྲིན་རྡོ་རྗེ་؛ پیدائش ت 1968)[1] ایک بھوٹانی سیاست دان ہیں جو نومبر 2018ء سے بھوٹان کے وزیر خارجہ کے منصب پر فائز ہیں۔[2][3] اکتوبر 2018ء سے بھوٹان کی قومی اسمبلی کے رکن بھی ہیں۔

سیاسی سفر[ترمیم]

سیاست میں داخل ہونے سے پہلے وہ ایک ماہر امراض اطفال تھے۔[4][5]

ٹندی ڈورجی دروک نیامروپ شوگپا کے بانی رکن اور سابقہ صدر ہیں۔[1] انھوں نے 2008ء اور 2013ء کے انتخابات میں بھی حصہ لیا تھا۔[6] 2018 کے انتخابات میں وہ لنگموکھا ٹوڈوانگ کے حلقے سے قومی اسمبلی کے رکن بنے۔[2] 3 نومبر 2018ء کو بھوٹانی وزیر اعظم لوتے شیرنگ نے اپنی کابینہ کا اعلان کیا تو انھیں وزارت خارجہ کے لیے نامزد کیا۔[2] 7 نومبر 2018ء کو انھوں نے وزیر اعظم لوتے شیرنگ کی کابینہ میں وزیر خارجہ کا حلف اٹھایا۔[7]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت ٹ ث "Bhutan 2018 Elections"۔ www.peldendrukpa.com۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  2. ^ ا ب پ "Bhutan's Newly Elected Prime Minister Lotay Tshering Unveiled The 10 Cabinet Ministers On 3 November 2018"۔ www.bhutantimes.com۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  3. "HM confers Dakyen to Cabinet ministers, Speaker, and OL – KuenselOnline"۔ www.kuenselonline.com۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  4. "Doctors into politics condemn BMHC's notification – Business Bhutan"۔ www.businessbhutan.bt۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  5. "DNT reveals 46 candidates – BBS"۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  6. "Eight Candidates join DNT – The Bhutanese"۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  7. "PM Lotay Tshering's Cabinet inaugurated in Bhutan – United News of India"۔ www.uniindia.com۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔