پاکستان ہیلی کاپٹر حادثہ 2015ء

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
پاکستان ہیلی کاپٹر حادثہ 2015ء
2015 Naltar Mil Mi-17 crash
پاکستانی فوج کا مل می-17 حادثہ والا ہیلی کاپٹر ایسا ہی تھا
حادثہ کا خلاصہ
تاریخ حادثہ 8 مئی 2015
قسم زیر تفتیش
بمقام نلتر، گلگت بلتستان، پاکستان
مسافروں کی تعداد 17
عملہ 3
اموات 8
طرز جہاز مل می-17
مشتغل پاکستان آرمی ایوی ایشن کور
مقام پرواز پی اے ایف بیس نور خان، راولپنڈی
منزل گلگت

8 مئی 2015ء کو دن کے وقت پاکستانی فوج کا مل می-17 ہیلی کاپٹر شمالی پاکستان کے علاقہ گلگت بلتستان کی وادی نلتر میں حادثہ کا شکار ہوا۔[1] جس میں دو پائلٹ، انڈونیشیا اور ملیشیا کے سفیروں کی بیویاں اور فلپائن اور ناروے کے پاکستان میں تعینات سفیر ہلاک ہوئے،[2][3][4][5] پرواز میں 11 غیر ملکی اور 6 پاکستانی سوار تھے، جن میں سے 8 ہلاک اور دیگر زخمی ہیں۔[6] زخمیوں میں ہالینڈ اور پولینڈ کے سفیر بھی شامل ہیں۔ حادثہ کا سبب کیا تھا، اس کی تحقیقات جاری ہیں، ابتدائی طور پر بعض ذرائع ابلاغ (جیسے بی بی سی اردو)[7] کے مطابق ہیلی کاپٹر آرمی پبلک اسکول میں اترتے ہوئے عمارت سے ٹکرایا۔ جس سے یہ سانحہ رونما ہوا۔

تفصیلات[ترمیم]

یہ تمام افراد پاکستان فضائیہ کے سکی انگ ریزورٹ کی افتتاحی تقریب کے لیے حکومت پاکستان کی دعوت پر جا رہے تھے۔ ہیلی کاپٹر آرمی پبلک اسکول اینڈ کالج سسٹم کے ایک اسکول کی عمارت سے ٹکرایا، ابھی تک زمین پر موجود کسی فرد کے جانی نقصان کی اطلاع نہیں ہے۔ پاکستان میں فلپائن کے سفیر ڈومنگو ڈی۔ لکنارو جونیئر اور ناروے کے سفیر لیف لارسن ہلاک ہوئے ہیں دیگر میں انڈونیشا اور ملیشیا کے سفیر حضرات کی بیگمات [1][8] اور پاکستان فوج کے دو میجر پائلٹوں سمیت عملہ کے کل 3 ارکان ہلاک شدگان میں شامل ہیں۔[8] ہلاکتوں کی تصدیق پاکستان فوج کے ذیلی ادارے شعبہٴ تعلقات عامہ کے ناطم عاصم سلیم باجوہ نے ٹوئٹر پر ٹوئٹ کے ذریعے نشر کی۔[8] تحریک طالبان پاکستان نے اس واقعہ کو اپنی کاوائی قرار دیا ہے،[1] مگر اس پر پاکستانی ماہرین نے عدم اتفاق[8] اور سخت حیرت کا اظہار کیا ہے۔[9]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ 1.0 1.1 1.2 "LIVE: Norway, Philippines ambassadors among 6 killed in Gilgit helicopter crash"۔ دی ایکسپریس ٹریبیون۔ 8 May 2015۔ اخذ کردہ بتاریخ 8 May 2015۔ 
  2. http://www.reuters.com/article/2015/05/08/us-pakistan-crash-idUSKBN0NT0O920150508
  3. Asad Hashim (May 8, 2015)۔ "Pakistan helicopter carrying foreign diplomats crashes"۔ AlJAZEERA۔ اخذ کردہ بتاریخ May 8, 2015۔ 
  4. Jon Boone (May 8, 2015)۔ "Pakistan helicopter crash kills foreign ambassadors"۔ theguardian.com۔ Guardian۔ اخذ کردہ بتاریخ May 8, 2015۔ 
  5. "Pakistan helicopter crash kills foreign envoys"۔ bbc.com۔ BBC۔ May 8, 2015۔ اخذ کردہ بتاریخ May 8, 2015۔ 
  6. "At least 6 people die helicopter crash in Pakistan"۔ DAWN۔ 8 مئی 2015۔ اخذ کردہ بتاریخ 8 مئی 2015۔ 
  7. http://www.bbc.com/urdu/pakistan/2015/05/150508_gilgit_heli_crash_zs بی سی سی اردو، 8 مئی 1015ء
  8. ^ 8.0 8.1 8.2 8.3 "Norway, Philippines ambassadors among 6 killed in Gilgit helicopter crash"۔ ڈان۔ 8 May 2015۔ اخذ کردہ بتاریخ 8 May 2015۔ 
  9. http://www.bbc.com/urdu/pakistan/2015/05/150508_gilgit_heli_crash_zs قومی اسمبلی میں دفاع کے متعلق قائمہ کمیٹی کے سربراہ شیخ روحیل اصغر کی بی بی سی اردو سے گفتگو