پدما کثیر مقصدی پل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
پدما کثیر مقصدی پل
পদ্মা বহুমুখী সেতু
Padma Bridge, November2021(2).jpg
سرکاری نامپدما کثیر مقصدی پل
دیگر نامپدما پُل
برائےسڑک، ریلوے
مالکبنگلہ دیش برج اتھارٹی
ویب سائٹwww.padmabridge.gov.bd
نقشہ نویسAECOM
طرزٹرس پل۔
کل لمبائی6,150 m (20,180 ft)
چوڑائی18.18 متر
اونچائی120 متر
وزن حد10,000 tonnes[1]
تعمیر کردہChina Major Bridge Engineering Co. Ltd.
آغاز تعمیر26 نومبر 2014ء (2014ء-11-26)
تعمیر ختم23 جون 2022 (2022-06-23)[2]
تعمیر کی لاگتسانچہ:BDTConvert (2018 estimates)[3]
افتتاح26 جون 2022ء (2022ء-06-26)
افتتاح25 جون 2022ء (2022ء-06-25)
چنگیYes
متناسقات23°26′39″N 90°15′40″E / 23.4443°N 90.2610°E / 23.4443; 90.2610متناسقات: 23°26′39″N 90°15′40″E / 23.4443°N 90.2610°E / 23.4443; 90.2610
تعمیراتی سائٹ ستمبر 2021


پدما کثیر مقصدی پل دریائے پدما کے پار ایک کثیر مقصدی روڈ ریل پل ہے ، جو بنگلہ دیش میں گنگا کا مرکزی مقام ہے.[4][5]یہ شریعت پور اور منشی گنج ضلع سے ملاتا ہے، ملک کے جنوب مغرب کو شمالی اور مشرقی علاقوں سے جوڑتا ہے.اس پل کا افتتاح 25 جون 2022 پر ہوا ہے.[2]

پدما پل بنگلہ دیش کی تاریخ کا سب سے مشکل تعمیراتی منصوبہ سمجھا جاتا ہے۔ ڈوئل لیول سٹیل ٹرس برج اوپر والی سطح پر چار لین ہائی وے اور نچلی سطح پر سنگل ٹریک ریلوے لے جاتا ہے۔[6] یہ بنگلہ دیش کا سب سے لمبا پل ہے، اور دورانیہ اور کل لمبائی دونوں کے لحاظ سے گنگا پر سب سے لمبا پل ہے۔[7] اِس پل کے ڈھیر کی سب سے زیادہ گہرائی 122 میٹر ہے جو کہ دیگر تمام پلوں میں سب سے زیادہ ہے[8]

پدما کثیر مقصدی پل سے بنگلہ دیش کی مجموعی گھریلو پیداوار کم از کم 1.2 فیصد بڑھنے کی توقع ہے۔[9]

مزید دیکھیں[ترمیم]

حوالہ ذات[ترمیم]

  1. ^ ا ب "Grand preparations made for Padma Bridge inauguration". The Daily Star. 24 June 2022. اخذ شدہ بتاریخ 24 جون 2022. 
  2. "How Padma Bridge cost surged to Tk30,000cr". The Business Standard (بزبان انگریزی). 12 December 2020. اخذ شدہ بتاریخ 27 مئی 2022. 
  3. "By self-funding the Padma dridge,Dhaka has got the West off its back". The Economic Times. اخذ شدہ بتاریخ 10 دسمبر 2020. 
  4. "Main Bridge Details (Technical)". Padma Multipurpose Bridge Project. اخذ شدہ بتاریخ 10 دسمبر 2020. 
  5. Sultana Munima (14 October 2014). "Korean co gets Pawdda bridge supervision work". The Financial Express. Dhaka. اخذ شدہ بتاریخ 11 نومبر 2014. 
  6. ৩ বিশ্ব রেকর্ড করল পদ্মা সেতু. Jugantor (بزبان بنگالی). اخذ شدہ بتاریخ 22 دسمبر 2020.