پرینکا گاندھی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
پرینکا گاندھی
Priyanka Gandhi in 2017.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش 12 جنوری 1972 (46 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
دہلی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
رہائش دہلی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رہائش (P551) ویکی ڈیٹا پر
قومیت بھارتی
جماعت انڈین نیشنل کانگریس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
شوہر رابرٹ واڈرا
والدین راجیو گاندھی (والد)
سونیا گاندھی (والدہ)
والد راجیو گاندھی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والد (P22) ویکی ڈیٹا پر
والدہ سونیا گاندھی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والدہ (P25) ویکی ڈیٹا پر
بہن/بھائی
عملی زندگی
مادر علمی دہلی یونیورسٹی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ سیاست دان
دستخط
Signature of Priyanka Vadra.svg 

پرینکا گاندھی واڈرا 12 جنوری، 1972ء کو نئی دہلی میں پیدا ہوئی۔ بھارت کے پانچویں وزیر اعظم راجیو گاندھی اور انڈین نیشنل کانگریس پارٹی کی سابق صدر سونیا گاندھی کی بیٹی اور موجود صدر راہل گاندھی کی بہن ہیں۔ بھارت کے نامی گرامی تاجر رابرٹ واڈرا کی شریکِ حیات ہیں۔ ان دونوں سے ایک بیٹا ہے جس کا نام ریحان گاندھی واڈرا ہے۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

پرینکا واڈرا بھارت کے سابق وزیر اعظم راجیو گاندھی کی بیٹی اور انڈین نیشنل کانگریس کے موجودہ صدر راہل گاندھی کی بہن اور یونائٹڈ پروگریس الائنس کی چیئر وومن سونیا گاندھی کی دوسری اولاد ہے۔ اس کی دادی اندرا گاندھی اور پردادا جواہر لال نہرو بھی بھارت کے وزیراعظم رہے ہیں۔ اس کے دادا فیروز گاندھی بھارتی پارلیمان کے رکن تھے اور اس کے پردادا کے والد، موتی لال نہرو بھارت کی آزادی جنگ کے ایک اہم لیڈر تھے۔

اس نے اپنی تعلیم ماڈرن اسکول،،[1] جیسس اینڈ میری، نئی دہلی سے حاصل کی اور وہ دہلی یونیورسٹی سے نفسیات موضوع کی گریجویٹ ہے۔ وہ ایک شوقیہ ریڈیو آپریٹر ہے، جس کے پاس VU2PGY کال سائن ہے۔

سیاسی زندگی[ترمیم]

پرینکا گاندھی کے کردار کو سیاست میں تناقض کے طور پر دیکھا جاتا ہے، حالانکہ اتر پردیش میں کانگرس پارٹی کے لیے انتخابات میں لگاتار پرچار کرنے کے دوران اس نے سیاست میں بڑی دلچسپی لینی کی گل کہی۔

1999ء کی انتخابات کی مہم کے دوران، بی۔بی۔سی کے لیے ایک انٹرویو میں اس نے کہا: میرے دماغ میں یہ باپ بالکل واضع ہے کہ سیاست طاقتور نہیں ہے، لیکن عوام زیادہ اہم ہے اور میں اس کی خدمت سیاست سے باہر رہ کر بھی کر سکتی ہوں۔[2] پھر بھی اس کو رسمی سیاست میں سمجھنے کا سوال پریشان کن لگتا ہے: میں یہ بات ہزاروں بار دوہرا چکی ہوں۔۔۔"۔

حوالہ جات[ترمیم]