چشمہ بیراج

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

بکھڑا شریف (چشمہ بیراج) (Chashma Barrage) پاکستان کے صوبے پنجاب کے ضلع میانوالی میں دریائے سندھ پر واقع ایک بیراج ہے۔

چشمہ بیراج آبپاشی اور سیلاب سے بچاو کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔ چشمہ بیراج 1966 میں شروع ھوا اور 1971 میں مکمل ہوا.چشمہ بیراج سے دو نہریں نکالی گیئ ہیں۔چشمہ جہلم لنک کینال مشرقی سایئڈ سے اور رائیٹ بینک کینال مغربی سائیڈ سے۔رائیٹ بینک کینال کی سائیڈ پر ھائیڈرو پاور بھی بنایا گیا ہے جو 180 میگاواٹ تک بجلی پیدا کر سکتا ہے جبکہ ایک اور نہر رائیٹ پر زیر تجویز ہے جس پر ایک اور ھائیڈرو پاور بھی زیر غور ہے۔ یہ جس جگہ بنایا گیا، وہاں ایک گاؤں بکھڑا شریف آباد تھا جو تلوکر کا پہلا گاؤں مانا جاتا ہے اس کے جنوب میں دوسرا بکھڑا میاں غلام محمد تھا اور شمال میں دولانوالہ تھا۔اس کے شمال میں مہانڑانوالہ ۔۔حسین خیلانوالہ اور اس کے شمال میں سیلو ۔۔بانڑ کے گاؤں آباد تھے۔اس وقت چشمہ بیراج کی دونوں طرف تلوکر قبیلہ کی آبادیاں ہیں۔اس کے مشرق میں کچہ کالو ۔۔شیرے خیلانوالہ ۔۔۔یارو خیلانوالہ ۔۔سکو خیلانوالہ ہیں جبکہ مغرب میں خطہ ء اطلس ۔۔۔شاہباز خیلانوالہ ۔۔۔جلال خیلانوالہ ۔۔فوجے خیلانوالہ و بلوچی خیلانوالہ ہیں۔آج کل یہ یونین کونسل کچہ گجرات کے ساتھ ہے جبکہ پہلے یہ یونین کونسل کھولہ کا ہی حصہ تھا۔یہ ساری آبادی قدیم بکھڑا سے بچ جانے والے رقبہ پر مشتمل ہے اور موضع بکھڑا کہلاتی ہے ۔۔ چشمہ بیراج و جھیل کی وجہ سے کچہ میں بسنے والے تلوکر قبیلہ کے لوگ تو اپنے تھل کے گھروں میں منتقل ہو گیئے جو ڈنگ کھولہ وغیرہ پر مشتمل تھے جبکہ باقی کے متاثرین مختلف جگھوں پر نقل مکانی کر گیئے جن میں کندیاں ۔۔علووالی ۔۔دوآبہ کے ساتھ میانوالی و عیسی' خیل و آس پاس کے علاقے شامل ہیں۔تقریباً 28 موضع جات اس چشمہ بیراج کی وجہ سے متاثر ھوئے۔ان متاثرین میں تلوکرقبیلہ کا سب سے زیادہ شیئر ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]