چندرا بابو نائڈو

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
چندرا بابو نائڈو
(تیلگو میں: నారా చంద్రబాబు నాయుడు خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
N. Chandrababu Naidu.jpg 

تیرہویں وزیر اعلیٰ آندھرا پردیش
مدت منصب
8 جون 2014 – 23 مئی 2019
گورنر
Fleche-defaut-droite-gris-32.png نلاری کرن کمار ریڈی
وائی ایس جگن موہن ریڈی Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
مدت منصب
1 ستمبر 1995 – 13 مئی 2004
گورنر
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ین۔ٹی۔راماراؤ
وائی یس راجشیکھر ریڈی Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 20 اپریل 1950 (69 سال)[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
رہائش حیدرآباد، دکن، تلنگانہ
شہریت Flag of India.svg بھارت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مذہب ہندو مت
جماعت تیلگو دیشم[2]
انڈین نیشنل کانگریس[3]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
اولاد نارا لوکیش
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ سری وینکٹیشورا[4]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
تعلیمی اسناد ماسٹر آف آرٹس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیمی اسناد (P512) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ سیاست دان[5]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
مادری زبان تیلگو  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مادری زبان (P103) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان تیلگو،  انگریزی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں باضابطہ ویب سائٹ (P856) ویکی ڈیٹا پر

نارا چندرا بابو نائڈو : (پیدائش : 20 اپریل، 1950ء) ہندوستانی سیاست دان، آندھر پردیش کے سابق وزیراعلیٰ اور تیلگو دیشم پارٹی کے صدر ہیں۔ وہ 20 اپریل 1950ءکو چتور ضلع میں پیدا ہوئے۔ تعلیم کے دوران میں ہی وہ سیاست میں کود پڑے۔ سنہ 1978ء میں وہ چندراگیری اسمبلی حلقے سے کانگریس کے ٹکٹ پر انتخابات میں کامیاب ہوئے اور وزیر بنائے گئے۔ سنہ 1983ء میں انتخاب ہارنے کے بعد انہوں نے کانگریس پارٹی چھوڑ دی اور اپنے سسُر ین ٹی راماراؤ کی تیلگو دیشم پارٹی میں شامل ہو گئے۔ سنہ 1995ء میں اپنے سسُر کی پارٹی کے منتخب امیدواروں کو علاحدہ کرنے میں کامیاب رہے اور کافی توڑ جوڑ کے بعد وزیراعلیٰ بن گئے۔ سنہ 1999ء میں وہ بی جے پی اتحاد کے ساتھ صوبائی انتخابات میں اترے اور جیت حاصل کر کے وزیراعلیٰ کی کرسی بچا لی۔ لیکن 2004ء کے انتخابات میں ان کی پارٹی کو شکست ہوئی۔ اس وقت ان پر آئی ٹی کے چکر میں گاؤں کو بھلانے کے الزام لگے۔ وہ آئی ٹی سے شغف رکھنے والے رہنما کے طور پر جانے جاتے ہیں۔

2014ء کے عام اسمبلی انتخابات میں پھر سے تیلگو دیشم پارٹی ان کی قیادت میں بی جے پی جمگھٹ سے کامیاب ہوئی۔ حالانکہ بی جے پی کی مدد یا جمگھٹ کی ضرورت نہیں تھی، پھر بھی چندر بابو نائڈو دور اندیشی سے کام لے کر انتخابات جیتنے میں کامیاب رہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Nara-Chandrababu-Naidu — بنام: Nara Chandrababu Naidu — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  2. https://www.britannica.com/topic/Telugu-Desam-Party — اخذ شدہ بتاریخ: 29 مارچ 2019
  3. https://www.britannica.com/topic/Indian-National-Congress — اخذ شدہ بتاریخ: 29 مارچ 2019
  4. https://en.wikipedia.org/wiki/N._Chandrababu_Naidu — اخذ شدہ بتاریخ: 19 جولا‎ئی 2018
  5. https://www.mapsofindia.com/who-is-who/government-politics/n-chandrababu-naidu.html — اخذ شدہ بتاریخ: 29 مارچ 2019

بیرونی روابط[ترمیم]