چوتھی اینگلو میسور جنگ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
چوتھی اینگلو میسور جنگ
Fourth Anglo–Mysore War
بسلسلہ اینگلو میسور جنگیں
Anglo-Mysore War 4.png
جنگ کا نقشہ
تاریخ1798–1799
مقامبرصغیر
نتیجہ میسور کی شکست
محارب
میسور

ایسٹ انڈیا کمپنی
مراٹھا سلطنت
حیدرآباد

تراونکور
کمانڈر اور رہنما
ٹیپو سلطان 
میر غلام حسین
محمد میر میراں
عمدة امراء
میر صادق
غلام محمد خان
جنرل جارج ہیرس
میجر جنرل ڈیوڈ بیئرڈ
کرنل آرتھر ویلیسلی

چوتھی اینگلو میسور جنگ (Fourth Anglo-Mysore War) سلطنت خداداد میسور اور ایسٹ انڈیا کمپنی کے مابین ہندوستان میں لڑی جانے والی اینگلو میسور جنگوں کے سلسے کی چوتھی جنگ تھی۔ چوتھی اینگلو میسور جنگ میں ٹیپو سلطان کی شہادت ہوئی اور سلطنت خداداد میسور ختم ہو کر ایسٹ انڈیا کمپنی کے تحت ایک نوابی ریاست بن گئی۔

آغاز[ترمیم]

مارچ 1799ء میں طے شدہ پروگرام کے تحت ٹیپو کے تمام پیغام اور مسودہ کو ٹھکرا دیا گیا اور جنرل ہارس کی افواج نے دار الحکومت کی طرف کوچ کیا اور تباہی پھیلائی۔ میسور کی چوتھی جنگ جو سرنگاپٹم میں لڑی گئی جس میں سلطان نے کئی روز قلعہ بند ہوکر مقابلہ کیا مگر سلطان کی فوج کے دو غداروں میر صادق اور پورنیا نے اندورن خانہ انگریزوں سے ساز باز کرلی تھی۔ میر صادق نے انگریزوں کو سرنگاپٹم کے قلعے کا نقشہ فراہم کیا اور پورنیا اپنے دستوں کو تنخواہ دینے کے بہانے پیچھے لے گيا۔ شیر میسور کہلانے والے ٹیپو سلطان نے داد شجاعت دیتے ہوئے کئی انگریزوں کو مار گرایا اور سرنگاپٹم کے قلعے کے دروازے پر جامِ شہادت نوش فرمایا۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

تصاویر[ترمیم]

ملاحظات[ترمیم]

  1. Julia Corner۔ The History of China & India, Pictorial & Descriptive (پی‌ڈی‌ایف)۔ London: Dean & Co., Threadneedle St.,۔ صفحہ 334۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 مارچ 2015۔

حوالہ جات[ترمیم]