چوہدری غلام عباس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

چوہدری غلام عباس رئیس الاحرار اورآزاد کشمیر کے سرپرست اعلیٰ رہے ہیں۔

ولادت[ترمیم]

4 فروری 1904ء کو جموں میں پیدا ہوئے۔ ان کے والد کا نام چوہدری نواب خان تھا اور ان کا خاندانی تعلق رانگڑ راجپوت خاندان سے تھا۔

تعلیم[ترمیم]

ابتدائی تعلیم مشن ہائی سکول جموں میں حاصل کی جب کہ1921ء میں گورنمنٹ ہائی اسکول جموں سے میٹرک پاس کیا۔ اس کے ساتھ ہی پرنس آف ویلز کالج جموں میں داخلہ لیا اور 1925ءمیں پنجاب یونیورسٹی سے بی۔اے کیا۔1931ء میں لا کالج لاہور سے قانون کی ڈگری حاصل کی ۔

سیاسی سفر[ترمیم]

قومی معاملات میں زمانہء طالب علمی سے ہی حصہ لینے لگے۔ ابتداء میں ینگ مینز مسلم ایسوسی ایشن میں شرکت کی اور بعد ازاں اسی تنظیم کے صدر منتخب ہوئے۔ اس جماعت نے کشمیری مسلمانوں کو بیدار کرنے میں بڑا حصہ لیا۔ چوہدری غلام عباس نے کشمیری مسلمانوں کے حقوق کی بحالی کےلئے جیل بھی کاٹی۔ پہلی مرتبہ 31-1930ء میں گرفتار ہوئے، جب وہ ایل ایل بی کا امتحان دے رہے تھے۔ اس وقت انہوں نے کشمیر میں قرآن حکیم کی توہین کے سلسلے میں کشمیری مسلمانوں کے ساتھ مل کر صدائے احتجاج بلند کی۔اکتوبر 1932ء میں شیخ عبداللہ کے ساتھ مل کر مسلم کانفرنس کی بنیاد رکھی اور اس کے جنرل سیکرٹری مقرر ہوئے۔ 1042ء میں آپ نے مسلم کانفرنس کے تاریخی سالانہ اجلاس کےموقع پر خطبہء صدارت میں تحریک پاکستان کی بھرپور حمایت کا اعلان کیا۔

وفات[ترمیم]

18 دسمبر 1967ء کو وفات پا گئے ان کی وصیت تھی کہ انہیں پاکستان دفن کیا جائے فیض آباد راولپنڈی میں مدفون ہیں۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

ٰٰٰٰٰٰٰٰٰٰ

Midori Extension.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کرکے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔
  1. http://www.hamariweb.com/articles/article.aspx?id=41227