چھتون

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
چھتون
گاؤں
الہرا مسجد
الہرا مسجد
بہار
بہار
چھتون
بہار
بہار
چھتون
بھارت، بہار میں مقام
متناسقات: 26°15′20″N 85°59′36″E / 26.25556°N 85.99333°E / 26.25556; 85.99333متناسقات: 26°15′20″N 85°59′36″E / 26.25556°N 85.99333°E / 26.25556; 85.99333
ملکFlag of India.svg بھارت
بھارت کی ریاستیں اور یونین علاقےبہار
ضلعدربھنگہ
قائم اززمیر الدین سردار، تیار کردہ محمد حيات الله
حکومت
 • قسمپنچایتی راج(ہندوستان)
 • مجلسپنچایت
رقبہ
 • کل3.14 کلو میٹر2 (1.21 مربع میل)
بلندی55 میل (180 فٹ)
آبادی (2011)
 • کل11,054[1] [2]
زبانیں
 • دفتریہندی
 • شناختی علاقائیاردو، میتھلی،انگریزی
منطقۂ وقتبھارتی معیاری وقت (UTC+5:30)
ٹیلی فون کوڈ06272
آیزو 3166 رمزآیزو 3166-2:IN
گاڑی کی نمبر پلیٹBR-07
قریبی شہردربھنگہ, مدھوبنی
لوک سبھا انتخابی حلقہمدھوبنی
ودھان سبھا انتخابی حلقہکیوٹی
انسانی جنسی تناسب926 /
تعلیم55.77%
ویب سائٹchhatwan.weebly.com

چھتون [3] ہندوستان کے بہار ، دربھنگہ ضلع کیوٹی رنوے تحصیل میں ایک گاؤں ہے.

چهتون کی اپنی ایک پنچایت ہے جو گرام پنچایت راج چھتون کے نام سے رجسٹرڈ ہے۔ اور چھتون پنچایت 14 وارڈوں میں منقسم ہے۔

[4]

تاریخ[ترمیم]

چھتون اکبر کے زمانے میں زمیر الدین سردار جو ایک زمندار تھے جنہوں نے اس دور میں گاؤں قائم کیا تھا، اس گاؤں کا نام چھتون کے السٹونیا کے ماہرین (چھتون ) کی وجہ سے تھی، ابرسٹونی کے درخت باغ میں تھے، اکبری میں مترجمین میں سے ایک ڈاربار. نئی راج دربھنگہ کی تشکیل کے بعد ،میتیلا (علاقہ) میں ٹیکسیشن سسٹم کو تیار کرنے کے لیے بہت سے اخراجات پیش کیے گئے ہیں۔ راج دربھنگہ بہار اور بنگال میں 18 حلقوں میں 4،495 گاؤں تھے اور اس وقت اس وقت اسٹیٹ کو منظم کرنے کے لیے 7،500 افسران ملازم تھے. [5]

جغرافیہ[ترمیم]

چھتون ، بہار، دربھنگہ ضلع کیوٹی رنوے میں واقع ایک بڑا گاؤں ہے۔ قریبی گاؤں میں لؤام (3 کلومیٹر)، ریام فیکٹری (5 کلو میٹر)، مریا (5.4 کلومیٹر) اور کیوٹی (7.8 کلو میٹر)، جبکہ قریبی شہر دربھنگہ (16 کلومیٹر)، مدھوبنی (13 کلومیٹر) اور پنڈول (9.8 کلومیٹر) . مدھوبنی روڈ گاؤں سے گزرتا ہے، جو مشرقی ہائی وے 27 (5.9 کلومیٹر) کے قریب واقع ہے، جو مشرقی مغرب کی گزرنے والا ہے۔ قریبی ریلوے اسٹیشن 6.3 کلومیٹر دور تارسرائے اسٹیشن ہے.

چھتون ضلع کا نقشہ میں واقع ہے

آبادیات[ترمیم]

2011 کے مطابق، آبادی کی مردم شماری کے مطابق، چھتون 2339 خاندانوں کے گھر تھا، جس کی مجموعی آبادی 11054 تھی،

  • مرد = 51.92٪
  • خواتین = 48.08٪.

چھتون کا اپنا پنچایت ہے۔ چھتون گاؤں نے بہار کے مقابلے میں سوادری کی شرح کم کی ہے۔ 2011 میں، چھتون گاؤں کی خواندگی کی شرح 55.77 فیصد تھی جبکہ تمام بہار کے لیے 61.80٪ تھی. چھتون میں مرد سوسائٹی 63.77 فیصد ہے جبکہ خواتین کی سوادتی کی شرح 47.05 فیصد تھی. [6]

معیشت[ترمیم]

زراعت اس گاؤں کا اہم پیشہ ہے اور اس نے اہم صنعتی ترقی کا تجربہ نہیں کیا ہے. [8] چھتون کے مشرق وسطی میں بہاؤ جیوچھ دریا، زرعی، سیلاب، دال، مکئی، میو پھلیاں، سرسبزی اور سبزیوں کی بڑھتی ہوئی آبادی کے طور پر کام کرتا ہے. [9] مینگ پھل کثرت میں اضافہ ہوا ہے اور ریام چینی کارخانے میں پروسیسنگ کے لیے شپنگ سے پہلے گندم تیار کیا جاتا ہے. [10] یہ گاؤں بہت سارے بازاروں اور چھتون بازار کے لیے بھی اچھی طرح سے مشہور ہے. [11] اور چھوٹے کاروبار، جس میں کپڑے کی دکانوں، زیورات، جنرل اسٹورز، ہارڈ ویئر اسٹورز، موٹر سائیکل شو روم وغیرہ شامل ہیں. [12] چھتون کا مرکزی بازار گاندھی چوک، آزاد چوک، چاندنی چوک، اے پی جے عبدالمالک چوک، کؤنور چوک اور مولانا مظہر الحق چوک [13] [14] [15] [16] مدھوبنی روڈ پر ہے. [17]

ثقافت[ترمیم]

چھتون ایک کثیر ثقافتی معاشرے ہے۔ مسلم تہواروں میں عید الفطر [18] (عید)، عید الاضحی [19] (بکراعید) اور محرم منایا جاتا ہے [20] . ہندو تہوار میں جشن منایا گیا، دیوالی کے پانچ دن باد چھٹ، مکسر سنکرانتی ، دڑگا پوجا اور دیوالی شامل ہیں [21]

گاندھی کا دورہ[ترمیم]

مذہبی جگران میں ایک مضمون کے مطابق [22] 1934 میں مہاتما گاندھی نے ایک سخت بحران کے بعد آئے. اس کے ساتھ پنڈت جوہرال لال نہرو ، جمنالال بذاج ، ڈاکٹر راجندر پرشاد ، جےبی کرپالیانی وغیرہ کے ساتھ تھے۔ وہ زلزلے طرف سے دھوکا دیا گئے لوگوں کے ساتھ تھے خوفناک ریاست کے بعد بھی، متھلانچل نے برطانوی حکومت اور کانگریس کی طرف سے دی گئی امداد کو قبول کرنے سے انکار کر دیا۔ یہ دیکھنے کے بعد گاندھی جی گھبرا گئے۔ انہوں نے لوگوں سے درخواست کی کہ مصیبت کے وقت میں مدد طلب کرنے کا جرم نہیں ہے۔ زلزلہ متاثرین نے ان کے کال پر ریلے شروع کردیے. زلزلہ متاثرین کی بدولت جاننے کے لیے وہ کیوٹی بلاک کے چھتون گاؤں گئے۔ گاندھی جی چھتون گاؤں چلے گئے زلزلہ متاثرین کی بدحالی جاننے کے لیے. انہوں نے دیوی لعل پوکر میں چھتون گاؤں والوں کے ساتھ ایک ملاقات ہوئی، جو آج گاندھی چؤک چھتون کے نام سے مشہور ہیں.

تعلیم[ترمیم]

چھتون اسلامی اور جدید تعلیم میں بہت سارے وسائل موجود ہیں جدید تعلیم کے لیے بہت سے حکومتیں اور نجی اسکول موجود ہیں.

  • پراتھمک اسکول چھتون ہریجن
  • راجکیا اتکرمت اچچ اسکول چھتون بیسک
  • پراتھمک اسکول چھتون اردو
  • راجکیا اتکرمت مدھ اسکول دھنہشی
  • پراتھمک اسکول پتھارپٹی
  • پروجیکٹ پراتھمک اسکول فکیرتکیا چھتون
  • ریڈ رؤز پبلک اسکول چھتون

اسلامی تعلیم کے لیے دو مدرسہ ہیں دونوں مدرسے حکومت کو تسلیم کیا جاتا ہے

  • مدرسہ تلبنات چھتون
  • مدرسہ نورول اسلام چھتون[23] [24]

ہسپتال[ترمیم]

  • اضافی پرائمری صحت مرکز چھتون[25]
  • ویٹرنری ہسپتال چھتون[26]

نقل و حمل[ترمیم]

سڑکے[ترمیم]

چھتون گاؤں اور شہروں کے دوسرے حصے کے ساتھ اچھی طرح سے منسلک ہے، تارسرائے - ریام ویا روڈ چھتون[27] [28] کے ذریعہ گاؤں سے گزرتی ہے جس سے قومی ہائی وے 27 اور تارسرائے اسٹیشن شمالی نزدیک سے منسلک ہوتا ہے اور جنوب کے آخر میں مدھوبنی ضلع سے منسلک ہے۔ چھتون- ہاجی پور روڈ نیشنل ہائی وے 527 بی مغرب سے منسلک ہے.[29]اور چھتون- پنڈؤل مشرقی اختتام سے منسلک ہے.[30] [31] چوٹان نے گاؤں اور شہروں کے قریب ٹیمپو خدمات فراہم کی ہیں اور یہاں بس کی خدمات بھی ہے. [32] دربھنگہ - مدہوانی ، ویا ریام شوگر فیکٹری [33] ، چھتون - دربھنگہ ، ویا خرمہ وغیرہ ہوکر چلتی ہے. [34]

ریلوے[ترمیم]

قریبی ریلوے اسٹیشن تارسرائے ریلوے اسٹیشن ہے (TRS) [35] [36] . دہلی کو جانے والے لوگ تارسائی ریلوے اسٹیشن سے ایک براہ راست ٹرین لے سکتے ہیں، دو ایکسپریس ٹرین یہاں رک جاتی ہے :

  • سریوغ جمنا ایکسپریس امرتسر کے لیے

اور بہت سے مسافروں کو یہاں تک کہ ٹرین سے شفر کرتے ہیں[37] [38]

ایئر ویز[ترمیم]

دربھنگہ ہوائی اڈے چھتون سے قریبی ہوائی اڈے ہے جس سے فاصلہ (17 کلو میٹر) ہے.

آب و ہوا[ترمیم]

چھتون میں ایک مضر ذیلی آب و ہوا آب و ہوا ( کوپین آب و ہوا کی درجہ بندی سیوا ) ہے. [39]

آب ہوا معلومات برائے چھتون
مہینا جنوری فروری مارچ اپریل مئی جون جولائی اگست ستمبر اکتوبر نومبر دسمبر سال
بلند ترین °س (°ف) 30.4
(86.7)
33.9
(93)
39.9
(103.8)
42.0
(107.6)
41.9
(107.4)
43.4
(110.1)
39.1
(102.4)
38.4
(101.1)
39.6
(103.3)
39.2
(102.6)
33.9
(93)
29.9
(85.8)
43.4
(110.1)
اوسط بلند °س (°ف) 22.1
(71.8)
25.8
(78.4)
31.0
(87.8)
34.1
(93.4)
35.0
(95)
34.9
(94.8)
32.5
(90.5)
32.8
(91)
32.5
(90.5)
31.6
(88.9)
28.0
(82.4)
24.8
(76.6)
30.43
(86.76)
اوسط کم °س (°ف) 9.2
(48.6)
11.0
(51.8)
15.1
(59.2)
19.1
(66.4)
21.2
(70.2)
22.9
(73.2)
23.8
(74.8)
24.2
(75.6)
23.8
(74.8)
21.2
(70.2)
15.8
(60.4)
10.6
(51.1)
18.16
(64.69)
ریکارڈ کم °س (°ف) −0.2
(31.6)
−0.2
(31.6)
3.9
(39)
9.2
(48.6)
10.4
(50.7)
15.9
(60.6)
18.7
(65.7)
19.4
(66.9)
18.9
(66)
12.7
(54.9)
7.2
(45)
2.4
(36.3)
−0.2
(31.6)
اوسط عمل ترسیب مم (انچ) 13.0
(0.512)
14.0
(0.551)
9.0
(0.354)
29.0
(1.142)
76.0
(2.992)
139.0
(5.472)
353.0
(13.898)
254.0
(10)
193.0
(7.598)
73.0
(2.874)
6.0
(0.236)
7.0
(0.276)
1,166
(45.905)
اوسط بارش ایام 1.6 1.7 1.6 2.6 4.6 7.6 16.4 12.2 10.5 3.4 0.5 1.0 63.7
اوسط اضافی رطوبت (%) 68 63 49 56 60 70 78 79 79 73 66 67 67.3
[حوالہ درکار]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://www.census2011.co.in/data/village/226965-chhatwan-bihar.html
  2. http://www.censusindia.gov.in/Census_Data_2001/Village_Directory/View_data/Village_Profile.aspx
  3. https://ourhero.in/villages/chhatwan-226965
  4. https://lgdirectory.gov.in/globalviewvillage.do
  5. http://www.allaboutbihar.com:80/districts/darbhanga/villages/chhatwan_1100100.php
  6. https://www.census2011.co.in/data/village/226965-chhatwan-bihar.html
  7. "WELCOME TO CENSUS OF INDIA : Census India Library". www.censusindia.gov.in. اخذ شدہ بتاریخ 03 اپریل 2019. 
  8. http://www.brandbharat.com/english/bihar/districts/darbhanga/Darbhanga_KEOTI_Chhatwan_Chhatwan.html
  9. https://m.jagran.com/lite/bihar/darbhanga-restored-village-economy-on-track-15117245.html
  10. https://m.timesofindia.com/city/patna/DM-hands-over-sick-sugar-mill-transfer-papers-to-private-party/articleshow/6128477.cms
  11. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-8866925.html
  12. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-the-agency-mp-inaugurated-14857689.html
  13. https://www.jagran.com/bihar/darbhanga-13218688.html
  14. https://www.bhaskar.com/bihar/darbhanga/news/lack-of-millions-due-to-fire-in-many-homes-victims-demand-compensation-034053-3545533.html
  15. https://www.jagran.com/bihar/darbhanga-zidangi-incomplete-without-computer-17010623.html
  16. https://www.jagran.com/bihar/darbhanga-12789029.html
  17. https://m.jagran.com/lite/bihar/darbhanga-12938490.html
  18. https://m.jagran.com/lite/bihar/darbhanga-12616768.html
  19. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-8455732.html
  20. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-11750268.html
  21. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-the-crowds-in-the-markets-chhatta-18631473.html
  22. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-11041373.html
  23. https://chhatwan.weebly.com/about.html
  24. https://schools.org.in/bihar/darbhanga/keoti/ums-chatwan-(besic)
  25. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-15475626.html
  26. https://farmer.gov.in/vetcentres.aspx?scode=03
  27. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-relief-from-the-sun-kankanee-made-disaster-15383990.html
  28. https://m.jagran.com/lite/bihar/darbhanga-problem-due-to-cold-17284009.html
  29. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-8435191.html
  30. https://m.jagran.com/lite/bihar/madhubani-11727253.html
  31. https://m.jagran.com/bihar/madhubani-11727253.html
  32. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-9187179.html
  33. https://m.jagran.com/bihar/madhubani-bus-parichalan-k-prastav-par-harsh-14130443.html
  34. https://chhatwan.weebly.com/about.html
  35. https://www.jagran.com/bihar/muzaffarpur-ticket-booking-agents-in-station-priority-educated-unemployed-18125558.html
  36. https://www.prabhatkhabar.com/news/67484-story.html
  37. https://khabar.ndtv.com/news/bihar/station-master-among-2-killed-after-falling-from-train-1816139
  38. https://m.jagran.com/bihar/darbhanga-9187179.html
  39. ftp://ftp.atdd.noaa.gov/pub/GCOS/WMO-Normals/RA-II/IN/42391.TXT