چھوٹی سی زندگی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
چھوٹی سی زندگی
Choti Si Zindagi Title Screen.png
نوعیت
تحریر ثروت نذیر
ہدایات شکیل خان اور عدیل قمر خان
نمایاں اداکار
افتتاحی تھیم چھوٹی سی زندگی بدست نبیل شوکت علی اور سارہ رضا خان
نشر پاکستان
زبان اردو
تعدادِ دور 1
اقساط 28
تیاری
فلم ساز مومنہ درید
مقام کراچی
ملتان
ساہیوال
کیمرا ترتیب ملٹی کیمرا سیٹ اپ
پروڈکشن ادارہ ہم ٹی وی
تقسیم کار ہم ٹوی
نشریات
چینل ہم ٹی وی
تصویری قسم
صوتی قسم اِسٹیریو
نشر اوّل پاکستان
27 ستمبر 2016ء (2016ء-09-27) – 18 اپریل 2017 (2017-04-18)
اثرات
ماقبل ذرا یاد کر
مابعد الف اللہ اور انسان"
بیرونی روابط
Official website

چھوٹی سی زندگی ایک پاکستانی ڈراما ہے جسے پہلی مرتبہ ۲۷ ستمبر ؁۲۰۱۶ء کو ہم ٹی وی پر ختم شدہ ڈرامے ذرا یاد کر کے متبادل نشر کیا گیا۔

یہ ڈرامہ خوب مقبولیت کا حامل رہا۔

منظرنامہ[ترمیم]

قصّے کا آغاز ؁۱۹۷۰ء کی دہائی کے معاشرے میں ہوتا ہے جب کم سنی کی شادیاں بہت عام تھیں۔ چھوٹی سی زندگی دو کم سن کرداروں کی کہانی ہے جنہیں اہلِ خانی کی رضا مندی سے جبراً رشتہِٕ ازدواج میں منسلک کردیا گیا۔ قصّے کا آغاز یوں ہوا کہ ایک ۱۹ سالہ نوجوان لڑکا عروہ اپنے آبائی شہر ساہیوال سے تعلیم حاصل کرنے کی غرض سے ہجرت کرکے کراچی آتا ہے اور علمِ تعمیرات کے مطالعے کے لیے کراچی شہر کے ایک جامعہ میں داخلہ لیتا ہے جہاں اُس کی ملاقات سہیل بھٹّی نامی ایک نوجوان سے ہوتی ہے جس بعد ازاں اُس کا دوست اور ہم نشیں بھی قرار پاتا ہے۔ کچھ عرصہ بعد سہیل نے عروہ کی ملاقات اپنے دیگر ساتھیوں سے کروائی جو بعد ازاں عروہ کے بھی دوست بن گئے۔ دوسری جانب ملتان میں میں مقیم ایک ۱۵ سالہ لڑکی امینہ جوکہ عروہ کی چچا زاد بھی ہے اور حالیہ طور پر نویں جماعت میں داخل ہوئی ہے، خاصی بچکانہ ذہنیت کی حامل ہے۔ اُسے اُموُرِ خانی داری میں کوئی دلچسپی نہیں جبکہ گُڈّے گُڑیا کی شادی، جھولے جھولنا، رسالے پڑھنا الغرض ہر بچکانہ کھیل میں اس کا جی لگا رہتا ہے۔ البتہ مُطالعے میں اس کا کوئی مُقابل نہیں۔ اُدھر عروہ اپنے دوستوں اور تعلیم میں مشغول ہونے کے ساتھ ساتھ اپنی ایک دوست ازرہ سے دل لگا بیٹھا تو اِدھر اُس کے والد نے اُس کی منگنی اپنی بھتیجہ امینہ سے کردی اور عروہ اور ازرہ کا بھید کھلتے ہی مارے فکر کے عروہ اور امینہ کی شادی بھی کروادی۔ عروہ کے امتحانات کے بعد کی پہلی تعطیلات میں اُن دونوں کے رشتے کا قلبی طور پر باقاعدہ آغاز ہوا۔ ابتداء میں اُن کے درمیان کچھ تلخیاں درپیش رہیں لیکن امینہ عروہ کی والدہ کے سکھائے سے امینہ میں پیدا ہوئے سلیقے نے آہستہ آہستہ عروہ کا دل مول لیا۔ اختتامِ تعطیلات کے بعد جب عروہ جامعہ کو واپس لوٹا تو اپنی دوست ازرہ کے خط کا جواب نہ دینے کی وجہ سے عروہ سے اُس کا جھگڑا ہوگیا اور عروہ کی شادی کی خبر سن کر اُُسے شدید رنج ہوا اور وہ جامعہ سے برخاست ہوگئی۔ ازرہ کے جانے کی خبر سُن کر عروہ نے اپنے دل میں امینہ کے خلاف بغض پال لیا اور ۲ برس تک گھر بھی نہ آیا۔ اتنا عرصہ فرزند کی مفارقت میں گزارنے کے بعد عروہ کے والد فرقان احمد صاحب نے اپنے بیٹے کو خط ارسال کیا، جس میں اپنی خلوت کی خبر اور گھر کے مالی حالات کا تمام احوال بھی لکھ بھیجا۔ جسے پڑھ کر عروہ نے فیالفور ایک کارخانے میں ملازمت اختیار کرلی، جہاں اُسے رہائش کی سہولت بھی میسر تھی۔ اس نوید کے ملتے ہی عروہ کے والدِ محترم نے امینہ کو عروہ کے گھر میں چھوڑ دیا۔ اُس گھر میں ساتھ رہتے رہتے بالآخر دونوں کے مابین خوشگوار جذبات اور محبّت کے تعلّقات استوار ہو ہی گئے اور یہیں ربِّ کائنات نے اُنہیں اولاد کی نعمت سے بھی نوازا۔ اسی کے ساتھ عروج کی تعلیم بھی اختتام پذیر ہوئی اور امینہ نے بھی اس دوران ۴ درجے مزید تعلیم حاصل کرلی۔ ۴ سال بعد اُن کی ایک اور بیٹی ہو گئی اور عروہ اور امینہ اپنی، اپنے بچّوں کی اور اپنے اہلِ خانہ کی ذمہ داریوں میں مشغول ہوگئے۔ اُن کی شادی کو ۹ سال مکمّل ہونے تک اُن کے مالی حالات بھی کافی حد تک مُستحکم ہوگئے۔ عروہ کو سعودیہ عرب میں نوکری مل گئی جس میں رفتہ رفتہ ترقّی کے ساتھ آئندہ ۱۴-۱۵ برسوں میں عروہ ایک بڑے عہدے تک پہنچ گیا۔ کم و بیش ؁۲۰۱۰ء میں عروہ اور امینہ کے بیٹے علی کی عمر ۲۰ سال اور بیٹی علینہ کی عمر ۱۶ سال کے قریب ہوئی تو علینہ کے رشتے آنے شروع ہوگئے لیکن عروہ کو اپنی بیٹی کی اتنی کم سنی میں شادی کروانا قبول نہ تھا۔ لیکن اُنہی ایّام علی کو جامعہ میں ایک لڑکی پسند آگئی اور علی اُس سے شادی کرنے کو بضد تھا۔ ایک طویل تکرار اور بحث و مباحثے کے بعد اور علی کے اپنی پسند ترک کرنے کے باوجود بالآخر علی کی شادی اُس اپنی پسند کی ہوئی لڑکی؛ صنم سے ہو ہی گئی۔ آخری منظر میں عروہ اور امینہ کو اپنے پوتے کے ساتھ کھیلتے ہوئے دکھایا گیا اور سب ہنسی خوشی رہنے لگے۔

کردار و اداکار[ترمیم]

اقراء عزیز بطور امینہ

شہزاد شیخ بطور عروہ احمد

نمرہ خان بطور ازرہ ریاض

فرح شاہ بطور زبیدہ عرفان

راشد فاروقی بطور عرفان احمد

طاہرہ امام بطور سکینہ فرقان

طارق جمیل بطور فرقان احمد

کرن قریشی بطور مُزمّل فرقان

سارہ سیف بطور فری

افراز رسول بطور سہیل بھٹّی

حباء علی بطور سائقہ اصغر

شہریار زیدی بطور ریاض علی (ازرہ کے والد)

خالد سلیم بٹ بطور نظامی صاحب

مبصرہ خانم بطور سائقہ کی نانی

تمغات میں نامزدگی[ترمیم]

تقریب تمغا اُمیدوار(ان) اور وصول کنند(گان) Result Ref(s)
5th Hum Awards بہترین اداکارہ اقراء عزیز نامزد [1]
بہترین سلسلہ وار ڈراما چھوٹی سی زندگی نامزد
Best On-Screen Couple اقراء عزیز ہمراہ شہزاد شیخ نامزد

حوالہ جات[ترمیم]

https://en.m.wikipedia.org/wiki/Choti_Si_Zindagi#cite_ref-1

  1. "Hum Awards 2017 reveals nominations"۔ The Nation (انگریزی زبان میں)۔ 2017-04-09۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-07-04۔