چیرالا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
چیرالا
చీరాల
قصبہ (بلدیہ)
چیرالا ریلوے اسٹیشن
ملک بھارت
ریاست آندھرا پردیش
ضلع پرکاسم
رقبہ
 • کل 13.30 کلو میٹر2 (5.14 مربع میل)
بلندی 4 میل (13 فٹ)
آبادی (2011)
 • کل 87,200
زبانیں
 • دفتری تیلگو زبان
منطقۂ وقت بھارتی معیاری وقت (UTC+5:30)
ڈاک اشاریہ رمز 523 xxx
رمز ٹیلیفون +91–8594
ویب سائٹ Chirala Municipality

چیرالا (انگریزی: Chirala) بھارت کا ایک رہائشی علاقہ ہے جو بارت کی ریاست آندھرا پردیش میں کے پرکاسم ضلع میں ایک بلدیہ واقع ہے [1][2] اور چیرالا منڈل کا ہیڈ کوارٹر بھی ہے۔[3]

وجہ تسمیہ[ترمیم]

چیرالا کو شیراپوری بھی کہا جاتا ہے کیونکہ یہاں کے سمندر کا پانی دودھیہ نظر آتا ہے۔ چیرا کے اصل معنی ساڑی ہے اسی اس شہر کو چیرالا کہا جاتا ہے۔[4]

جغرافیہ[ترمیم]

چیرالہخلیج بنگال کے ساحل پر سطح سمندر سے 3 میٹر (9.8 فٹ) کی اونچائی پر واقع ہے۔ اس کی جغرافیائی جہت 15°49′29″N 80°21′08″E / 15.8246°N 80.3521°E / 15.8246; 80.3521 ہے۔[5]

آب و ہوا[ترمیم]

یہاں کا درجہ حرارت نسبتا گرم ہے۔ پورے کا اوسط درجہ حرارت 28.5 °C (83.3 °F) ہے۔خلیج بنگال پر واقع ہونے کی وجہ سے موسم سرما سرد اور موسم گرما نیاہت گرم ہوتا ہے۔ اس کی جغراجیائی وققع کی وجہ سے یہاں جنوب مغربی مانسون اور شمال مشرقی مانسون دونوں آتے ہیں۔[6]

حکومت[ترمیم]

چیرالہ ایک درجہ اول کا بلدیہ ہے۔ اس کی کی تاسیس 1 اپریل 1948ء کو ہوئی تھی اس کا کل رقبہ 13.57 مربع کلو میٹر ہے اور کل 33 الیکشن وارڈ ہیں۔

معاشیات[ترمیم]

یہاں کپڑوں کی بنائی کا کام بہت بڑے پیمانے پر ہوتا ہے اور اسی کئے یہاں کی ساڑیاں بھی مشہور ہیں۔[7]

شماریات[ترمیم]

بھارت میں مردم شماری، 2011ء کے مطابق شہر کی کل آبادی 172,826 ہے جس میں 85,735 اور 87,091 خواتین ہیں۔[8]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "District Census Handbook – Prakasam" (PDF)۔ Census of India۔ صفحات 16–17, 44۔ اخذ شدہ بتاریخ 18 جنوری 2015۔
  2. "Guntur District Mandals" (PDF)۔ Census of India۔ صفحات 141, 175۔ اخذ شدہ بتاریخ 19 جنوری 2015۔
  3. انگریزی ویکیپیڈیا کے مشارکین۔ "Chirala"۔
  4. "About Chirala Municipality"۔ chirala.cdma.ap.gov.in (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 1 جولائی 2017۔
  5. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ geo نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  6. "CLIMATE: CHIRALA"۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 فروری 2016۔
  7. S Murali۔ "Chirala weavers upbeat over heavy procurement orders"۔ The Hindu۔ Chirala۔ اخذ شدہ بتاریخ 2 مارچ 2016۔
  8. http://www.censusindia.gov.in/pca/SearchDetails.aspx?Id=669574