مندرجات کا رخ کریں

چیری این فریزر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
چیری این فریزر
شخصی معلومات
پیدائش 21 جولا‎ئی 1999ء (25 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
گیانا   ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت گیانا   ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ کرکٹ کھلاڑی   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کھیل کرکٹ   ویکی ڈیٹا پر (P641) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

چیری-این سارہ فریزر (پیدائش: 21 جولائی 1999ء) گیانا سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون کرکٹ کھلاڑی ہیں جو گیانا اور ویسٹ انڈیز کے لیے کھیلتی ہیں۔[1] [2] چیری فریزر کا تعلقگیانا سے ہے [3] اور گیانا انڈر 19 خواتین کرکٹ ٹیم کے لیے کھیلتی رہیں۔ [4] چیری فریزر نے کرکٹ کے ساتھ ساتھ والی بال میں بھی گیانا کی نمائندگی کی ہے۔ وہ 2019ء کی انٹر گیاناس چیمپئن شپ میں گیانا کی طرف سے کھیل چکی ہیں۔ [5]

ابتدائی زندگی[ترمیم]

چیری فریزر نے کرکٹ کھیلنا اس وقت شروع کیا جب وہ فقط 10 سال کی تھیں۔ وہ سینٹ ایگنس پرائمری کے لیے کھیلتی تھیں۔ وہ کمنگز لاج کے علاقے میں پلی بڑھیں اور اسی علاقے میں ان کا بچپن گذرا۔ وہ سافٹ بال کے میدان میں آل راؤنڈر کے طور پر، ٹیم مائیکز ویل وومن میں کھیلتی رہیں۔ اس کے بعد انھوں نے انٹر کاؤنٹی سطح پر ہارڈ بال کے لیے کھیلنے کا دعوت نامہ قبول کیا۔ [6]

کیریئر[ترمیم]

نومبر 2019ء میں، چیری فریزر کو ہندوستان کے خلاف سیریز کے لیے ویسٹ انڈیز خواتین ٹوئنٹی 20 بین الاقوامی دستے میں شامل کیا گیا۔ انھوں نے کپتان اسٹیفنی ٹیلر کی جگہ لی جو انجری کی وجہ سے دورے سے باہر ہو گئی تھیں۔ [7] جنوری 2020ء میں وہ 2020ء کے آئی سی سی خواتین کے T20 عالمی کپ کے لیے ویسٹ انڈیز کے دستے میں منتخب ہوئیں۔ [8] [9]

ٹیمیں[ترمیم]

چیری این فریزر نے اپنے کیریئر میں کئی ٹیموں کی نمائندگی کی جن میں قابل ذکر مندرجہ ذیل ہیں:

  • گیانا خواتین
  • ویسٹ انڈیز خواتین

کیریئر[ترمیم]

اگست 2020ء میں، انھیں انگلینڈ کے خلاف ٹی20 بین الاقوامی سیریز کے لیے ویسٹ انڈیز کی ٹیم میں شامل کیا گیا۔ [10] انھوں نے 30 ستمبر 2020ء کو انگلینڈ کے خلاف ویسٹ انڈیز کے لیے خواتین ٹی20 بین الاقوامی کیریئر کا آغاز کیا۔ [11] مئی 2021ء میں، چیری فریزر کو کرکٹ ویسٹ انڈیز کی طرف سے سینٹرل کنٹریکٹ سے نوازا گیا۔ [12] اگست 2020ء میں، انھیں انگلینڈ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز کے لیے ویسٹ انڈیز کی ٹیم میں شامل کیا گیا۔ [13] انھوں نے 30 ستمبر 2020ء کو انگلینڈ کے خلاف ویسٹ انڈیز کے لیے اپنے ٹی ٹوئنٹی کیریئر کا آغاز کیا۔ [14] مئی 2021ء میں، چیری فریزر کو کرکٹ ویسٹ انڈیز کی طرف سے سینٹرل کنٹریکٹ سے نوازا گیا۔ [15] جون 2021ء میں،چیری فریزر کو پاکستان کے خلاف سیریز کے لیے ویسٹ انڈیز اے ٹیم میں نامزد کیا گیا۔ [16] [17] ستمبر 2021ء میں، چیری فریزر کو جنوبی افریقہ کے خلاف چوتھے میچ سے پہلے ویسٹ انڈیز خواتین کے ایک روزہ بین الاقوامی میں شامل کیا گیا۔ [18] اس نے اپنا ایک روزہ بین الاقوامی کیریئر کا آغاز 16 ستمبر 2021ء کو ویسٹ انڈیز کے لیے جنوبی افریقہ کے خلاف کیا۔ [19] اکتوبر 2021ء میں، انھیں زمبابوے میں 2021ء خواتین کرکٹ ورلڈ کپ کوالیفائر ٹورنامنٹ کے لیے ویسٹ انڈیز کی ٹیم میں تین مختص کھلاڑیوں میں سے ایک کے طور پر شامل کیا گیا۔ [20] فروری 2022ء میں، انھیں نیوزی لینڈ میں 2022ء خواتین کرکٹ ورلڈ کپ کے لیے ویسٹ انڈیز کی ٹیم میں شامل کیا گیا۔ [21]

بیرونی روابط[ترمیم]

  • ویCherry-Ann Fraser at ESPNcricinfo
  • Cherry-Ann Fraser at CricketArchive (subscription required)

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Cherry-Ann Fraser"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 فروری 2020 
  2. "Cherry-Ann Fraser"۔ CricketArchive۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 مئی 2021 
  3. "Cherry-Ann Fraser"۔ The Cricketer۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 فروری 2020 
  4. "Cherry-Ann Fraser, a new dawn in female cricket"۔ Guyana Times۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 فروری 2020 
  5. "Fraser calls for female athletes to be respected and recognised"۔ Stabroek News (بزبان انگریزی)۔ 2020-05-03۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 جنوری 2021 
  6. "Fraser looking to change Guyana's fortunes"۔ Stabroek News (بزبان انگریزی)۔ 2018-05-30۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 جنوری 2021 
  7. "Stafanie Taylor ruled out of T20 International Series against India Women"۔ Cricket West Indies۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 نومبر 2019 
  8. "West Indies Squad named for ICC Women's T20 World Cup"۔ Cricket West Indies۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 جنوری 2020 
  9. "Deandra Dottin's return a lifeline for struggling West Indies"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 فروری 2020 
  10. "Anisa Mohammed opts out of West Indies Women's squad for England tour"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 اگست 2020 
  11. "5th T20I (N), Derby, Sep 30 2020, West Indies Women tour of England"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 ستمبر 2020 
  12. "Qiana Joseph, uncapped Kaysia Schultz handed West Indies central contracts"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 06 مئی 2021 
  13. "Anisa Mohammed opts out of West Indies Women's squad for England tour"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 اگست 2020 
  14. "5th T20I (N), Derby, Sep 30 2020, West Indies Women tour of England"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 ستمبر 2020 
  15. "Qiana Joseph, uncapped Kaysia Schultz handed West Indies central contracts"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 06 مئی 2021 
  16. "Twin sisters Kycia Knight and Kyshona Knight return to West Indies side for Pakistan T20Is"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 جون 2021 
  17. "Stafanie Taylor, Reniece Boyce to lead strong WI, WI-A units against PAK, PAK-A"۔ Women's CricZone۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 جون 2021 
  18. "Boyce and Grimmond included in 13-member West Indies Women's squad named for 4th CG Insurance ODI"۔ Cricket West Indies۔ اخذ شدہ بتاریخ 16 ستمبر 2021 
  19. "4th ODI, North Sound, Sep 16 2021, South Africa Women tour of West Indies"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 16 ستمبر 2021 
  20. "Campbelle, Taylor return to West Indies Women squad for Pakistan ODIs, World Cup Qualifier"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 اکتوبر 2021 
  21. "West Indies name Women's World Cup squad, Stafanie Taylor to lead"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 فروری 2022