چیمہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

چیمہ جٹ قبیلہ ہے ــ پوری دنیا میں کوئی بھی جٹ چیمہ خاندان چاہے کسی بھی ملک میں آباد ہو ان کا تعلق پاکستان کے ضلع سیالکوٹ کے ایک قصبے ساہووالہ سے ضرور ملے گا کیونکہ یہ علاقہ چیمہ خاندان کی شروعات کا علاقہ مانا جاتاہے ان کا کہنا ہے کہ کوئی 25 پشتیں قبل ان کا جد امجد چیمہ جب محمد غوری نے رائے تنورا کو شکست دی۔ چیمہ پہلے کانگڑہ اور پھر امرتسر گیا جہاں اس کے بیٹے چھوٹو لال نے علاؤ الدین کے عہد میں بیاس کے کنارے ایک گاؤں آباد کیا۔ ـاور اس کے 8 بیٹوں میں سے سب سے چھوٹا بیٹا ان کے موجودہ قبیلچوں کا جدامجد تھا ،دوگل، موہتل، نگارا اور چیمہ ـ انڈیا میں چیمہ خاندان میں( چیمہ، ساہی، گِل) اور پاکستان میں ( چیمہ، چٹھہ، وڑائیچ) ایک ہی رائل خاندان تصور کئیے جاتے ہیں

یہ بھی کہا جاتا ہے کہ چیمہ / چٹھہ جاٹ مہاراجا پرتھوی راج چوہان کے دلی کے بادشاہ ہیں۔

چیمے ایک طاقتور اور متحد قبیلہ ہے ـ وہ قبیلے کے اندر شادیاں کرنے کے علاوہ پڑوسیوں کے ساتھ بھی کر لیتے ہیں قبیلے کے بڑے حصے نے فیروز شاہ اور اورنگزیب کے عہد میں اسلام قبول کیا لیکن زیادہ تر نے اپنی پرانی رسوم برقرار رکھیں۔

سیالکوٹ میں ان کی تعداد سب سے زیادہ ہے ـ مگر گوجرانولہ میں بھی 42 دیہات کے مالک ہیں اور مشرق اور مغرب کی جانب پھیل گئے ہیں۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ قبیلے کا نام ان کے سب سے چھوٹے قبیلچے کے نام پر ہے جو دھول کی اولاد ہے۔ اور ان کا نسب نامہ یوں ہے۔1947 تک ، جب بہت سے سکھ چیمہ سیالکوٹ اور گوجرانوالہ سے پنجاب کی تقسیم کے بعد راجستھان پٹیالہ ، کرنال اور سرسا میں گاؤں چک 4e سری گنگن نگر میں آباد ہوئے تھے۔ اس کے بعد کچھ خاندان ادھم سنگھ نگر (اترا کھنڈ) ، پلیبھیٹ ، پورن پور اور رام پور (اتھار پردیش) بھی منتقل ہو گئے۔ اس خطے کو منی پنجاب اور ترائی کا علاقہ کہا جاتا ہے۔

پاکستان میں ، سیالکوٹ اور گوجرانوالہ اضلاع دونوں میں چیمہ کی بڑی آبادی ہے جس میں بہت سارے چیمہ دیہات ہیں ، جیسے سری گنگن نگر (راج) بیگووال میں چک 4e ، ویروالا چیمہ جامکے چیمہ ، تجوکی چیمہ ، آدمکے چیمہ ، بھوپال والا ، نشتر آباد ، (نشترآباد گاؤں میں صرف ایک ہی خاندان چیمہ کے نامزد نذر محمد چیمہ ہیں) ساہوالا ، کمال پور ، مانپور اور لودیکے چیمہ اور گوجرانوالہ ، بدوکی چیمہ ،چک بئگ، کوٹ عنایت خان ، دلاور چیمہ ، سروکی چیمہ ، بھروکی چیمہ ، وروکی چیمہ ، مانسروالی چیمہ ، بینک رتی تھیٹ ، بینک۔ کٹھور ، کالے والا ، کھیوے والی ، وڈالا چیمہ ، پھلوکی چیمہ ، مردہے کی اور چبہ چیمہ۔ ضلع راولپنڈی میں ، گوجر خان کے قریب ایک گاؤں ہے جس کا نام سوئی چیمیان ہے اور اس میں چیماس کی کافی آبادی ہے۔

جنوبی پنجاب میں ، بہاولپور اور یزمان میں چیمہ خاندانوں کی کافی تعداد ہے ، جس میں یہ علاقہ ایک درجن سے زیادہ کابینہ کے ممبروں کو منتخب کرتا ہے۔

ہندوستان میں ، پنجاب ریاست کے روپ نگر اور موہالی اضلاع میں چیمہ کی بہت بڑی آبادی ہے ، جہاں بہت سارے چیمہ دیہات ہیں