ڈوپلر ایفکٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

کسی موج کے منبع (Source) اور مُشاہد (Observer) کے درمیان اضافی حرکت کی وجہ سے موج کے تعدد  یا طول موج میں ظاہری تبدیلی ڈوپلر ایفکٹ (انگریزی: Doppler effect) کہلاتا ہے۔ اسے آسٹریا کے ماہر طبیعیات دان کرسچین اندریاس ڈوپلر سے منسوب کیا جاتا ہے۔ جس نے سن 1842 عیسوی میں سب سے پہلے اس مظہر کو بیان کیا۔

ڈوپلر اثر کائناتی فاصلوں کی پیمائش کا طریقہ ہے۔  چار سو نوری سال سے زیادہ کے فاصلے کو ماپنے کے لیے ڈوپلر اثر  کا طریقہ کار استعمال کیا جاتا ہے۔ سورج کی روشنی جب منشور (تکون شیشہ) سے گزرتی تو سات رنگوں میں بٹ جاتی ان سات رنگوں کی پٹی کو لائٹ سپکیٹرم (Light Spectrum) طیف کہتے ہیں۔ جس ستارے کا فاصلہ معلوم کرنا ہو اس کی روشنی کا طیف لیا جاتا ہے

جس کے ریڈ شفٹ (ماہر فلکیات رنگوں میں آنے والی ظاہری تبدیلی کو ایک پیمانے پر جانچتے ہیں جسے ریڈ شفٹ کہا جاتا ہے) اور بلیو شفٹ پہ مشتمل ہوتا جو اس کی آصل چمک کی شدت بیان کر دیتا۔۔اس اصل شدت اور بظایر دوربین میں نظر انے والی چمک کےمابین موازنہ کر کے ستارے کا زمین سے فاصلہ معلوم کر لیا جاتا ہے۔ ڈوپلر اثر کائنات کی چابی ہے اور جس شخص نے اسے دریافت کیا وہ مڈل پاس تھا اور خچروں کا مالک تھا جس کا نام ملٹن ہیموسن تھا

حوالہ جات[ترمیم]