ڈی جی سیمنٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ڈی جی سیمنٹ
عوامی
تجارت بطورکے ایس ایDGKC
قیام1986؛ 34 برس قبل (1986)[1]
صدر دفترلاہور، پاکستان
کلیدی افراد
میاں محمد منشاء
آمدنیPKR 40.38 billion[2]
مالک کمپنینشاط گروپ
ویب سائٹwww.dgcement.com

ڈی جی سیمنٹ ایک پاکستانی بلڈنگ میٹریل کمپنی ہے جو نشاط گروپ کی ملکیت ہے۔ [3] یہ پاکستان کی سب سے بڑی سیمنٹ بنانے والی کمپنی ہے جس کی یومیہ پیداواری گنجائش 14،000 ٹن ہے۔ [4] اس کمپنی کے تین فعال پلانٹ ہیں جو خیرپور، چکوال ، ڈیرہ غازی خان اور حب، بلوچستان میں موجود ہیں۔ [4] 1992 میں ، نشاط گروپ نے نجکاری سکیم کے تحت کمپنی حاصل کی۔ [5]

ڈی جی خان سیمنٹ سے مراد ڈیرہ غازی خان سیمنٹ ہے۔اس کی وجہ یہ ہے کہ جنوبی پنجاب کے شہر ڈیرہ غازیخان میں پہلا پلانٹ لگایا گیا تھا۔

تاریخ[ترمیم]

یہ کمپنی 1986 میں پاکستان میں سیمنٹ کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے شروع کی گئی تھی۔ پلانٹ کی فراہمی جاپان کی اوبے انڈسٹریز نے کی تھی۔ [6] ابتدائی طور پر یہ اسٹیٹ سیمنٹ کارپوریشن آف پاکستان کے تحت سرکاری کمپنی تھی جو ہزاروں لوگوں کو روزگار فراہم کرتی تھی۔ اس کمپنی نے اپنا پہلا فعال پلانٹ جنوبی پنجاب کے شہر ڈیرہ غازی خان میں قائم کیا اور اسی نام سے سیمنٹ پیداوار شروع کی۔ یہ جنوبی پنجاب، پاکستان کو صنعتی علاقہ بنانے کی طرف پہلا قدم تھا۔ پھر انہوں نے اپنا دوسرا پلانٹ خیرپور، چکوال میں قائم کیا۔ اس سے ان کی پیداواری صلاحیت میں اضافہ ہوا اور یہ ادارہ بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والی پاکستان کی سیمنٹ کمپنیوں میں شامل ہو گئی۔ [4]

توسیع[ترمیم]

پاکستان سیمنٹ کی صنعت کی ایک پرکشش مارکیٹ ہے۔ 2015 میں ایک سال میں سیمنٹ کی مقامی طلب میں 12 فیصد اضافے دیکھا گیا تھا۔ اسی لحاظ سے ڈی جی خان سیمنٹ نے اپنی صلاحیت میں اضافہ کرنے کا فیصلہ کیا۔ فعال تعمیراتی صنعت کی وجہ سے پاکستانی سیمنٹ کے مطالبے وقت کے ساتھ بڑھ رہے ہیں۔ 2015 میں ایک اطلاع کے مطابق کہ پاکستان چین اقتصادی راہداری کی وجہ سے مقامی طلب میں زبردست اضافہ ہوا ہے۔ طلب میں اضافے کے ساتھ ہی ڈی جی خان نے اپنا تیسرا اور پاکستان کا سب سے بڑا پلانٹ حب، بلوچستان میں قائم کیا جو پاکستانی میٹروپولیسکراچی کے کنارے پر واقع ہے۔ سیمنٹ مینوفیکچرنگ پلانٹ کو عام طور پر مکمل ہونے میں دو سے تین سال لگتے ہیں۔ لہذا توقع کی جارہی ہے کہ اس پلانٹ کی تعمیر 2018 میں مکمل ہو جائے گی جو ڈی جی خان سیمنٹ کو پاکستان کی سب سے بڑی سیمنٹ مینوفیکچر بنائے گی۔ [7]

حصول[ترمیم]

حکومت کی ملکیت میں چلنے والی اس کمپنی کو 1992 میں پاکستانی کاروباری گروپ نشاط گروپ نے اپنے کاروبار کو وسعت دینے اور متنوع بنانے کے لیے حاصل کیا تھا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "ڈی جی خان سیمنٹ". www.dgcement.com. 
  2. "ڈی جی خان سیمنٹ کو 2 ارب روپے کا منافع۔ دی ایکسپریس ٹریبیون". 20 اپریل 2017. 
  3. "DG Khan Cement's Hub plant to come online by December this year - The Express Tribune". 18 July 2017. 
  4. ^ ا ب پ "DG Khan Cement". www.dgcement.com. 
  5. Hussain، Dilawar (October 4, 2002). "D.G.Khan Cement: CORPORATE PROFILE". DAWN.COM. 
  6. "DG Khan Cement Company Limited – brief history". June 16, 2005. 
  7. Andrew، Marylou (17 February 2016). "Cementing growth – Prospects for Pakistan's cement industry".