کابلگرام

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

کابلگرام

خیبر پختون خوا کے ضلع شانگلہ کااہم مقام ہے کابلگرام میں ایک ہی قوم کی اکثریت ہے وہ ہے اخوند خیل کابلگرام كی تاریخ پانچ سو سال سے بھی زیادہ پرانی ہے کہا جاتا ہے کہ جب احمد شاہ ابدالی نے ہندوستان پر حملہ کیا تو اس وقت ان کے ساتھ ایک بزرگ شخصیت جناب اخوند سالاك بابا جن کا تعلق درانی قبائل سے تھا وہ بھی جہاد کرنے اور ہندوؤں کو بهگانے کے لیے احمد شاہ ابدالی کے ساتھ آئے تھے کئی علاقوں سے ہندوں اور سکھوں کو بهگانے کے بعد حضرت اخوند سالاك بابا نے ایک مقام پر پڑاؤ ڈالا کسی نے عرض کیا کہ بابا آپ واپس کابل نہیں جاؤگے تو آخون سالاك بابا نے کہا کہ پشتو میں( دا پہ ما باندے دا کابل نا زیات گران دے) یعنی مجھے زیادہ عزیز ہے یہ جگہ کابل سے تو اس کے بعد لوگوں نے اس علاقے کو کابل گران کہانا شروع کر دیا بعد میں اکے اسانی کے لیے کابلگرام ہو گیا '