کانشی رام

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
کانشی رام

بانی اور نیشنل صدر بہان سماج پارٹی
مدت منصب
14 اپریل 1984 – 18 ستمبر 2003
Fleche-defaut-droite-gris-32.png  
مایوتاٹی Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
مدت منصب
1996 – 1998
Fleche-defaut-droite-gris-32.png کمال چوہدری
کمال چوہدری Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
مدت منصب
1991 – 1996
Fleche-defaut-droite-gris-32.png رام رام سنگھ
رام سنگھ شکی Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 15 مارچ 1934  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
ضلع روپنگر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 9 اکتوبر 2006 (72 سال)[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
نئی دہلی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
وجۂ وفات دورۂ قلب  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وجۂ وفات (P509) ویکی ڈیٹا پر
طرز وفات طبعی موت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں طرزِ موت (P1196) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of India.svg بھارت
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
جماعت بہوجن سماج پارٹی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

ہندوستان کی دلت پارٹی بہوجن سماج پارٹی کے بانی اور دلت سیاست کے علمبردار۔ پنجاب کے ضلع روپڑ کے ایک گاؤں میں ایک غریب گھرانے میں پیدا ہوئے تھے۔ انہیں جدید ہندوستان میں بھیم راؤ امبیڈکر کے بعد دلت سماج کا سب سے بڑا رہنما تصور کیا جاتا ہے ۔

انہوں نے1970 کی دہائی میں دلت سیاست کا آغاز کیا، برسوں کی محنت کے بعد بہوجن سماج پارٹی کی تشکیل کی اور اسے اقتدار کے ایوانوں تک پہنچایا-اپنے اصولوں پر عمل کرتے ہوئے انہوں نے خود کبھی کوئی عہدہ قبول نہیں کیا۔ کانشی رام اگرچہ ہمیشہ یہی کہا کرتے تھے کہ بہوجن سماج پارٹی کا واحد مقصد اقتدار حاصل کرنا ہے لیکن وہ ذات پات پرمبنی ہندوستانی معاشرے میں ہمیشہ دلتوں کے حقوق اور سماجی برابری کے لیے جدوجہد کرتے رہے۔

ان کی قیادت میں بی ایس پی نے1999 پارلیمانی انتخابات میں 14 سیٹیں حاصل کیں۔1995 مین اترپردیش میں ان کی سیاسی شاگرد مایاوتی وزیر اعلی بنیں۔ بی ایس پی کا اثرآج اترپردیش کے علاوہ پنجاب اور مدھیہ پر دیش تک پھیلایا۔ کانشی رام ایک ماہر سیاست دان تھے اور دلتوں میں ان کا خاصا اثر رہا۔ وہ ایک بار اترپردیش اور ایک بار پنجاب سے رکن پارلیمنٹ بھی چنے گئے۔ انہوں نے شادی نہیں کی۔ فالج، ذیا بیطس اور اعصابی دیاؤ کے باعث ان کا انتقال ہوا

  1. http://news.bbc.co.uk/2/hi/south_asia/6032563.stm